یوپی میں کبھی ایس پی کی شان میں قصیدے پڑھنے والے اب بی جے پی کے گن گانے پر مجبور

Mar 28, 2017 01:24 PM IST
1 of 6
  • اترپردیش میں سرکار بدلتے ہی لوگوں کی ترجیحات اور مفادات بھی بدل گئے ہیں۔ اس کا ایک منظر لکھنؤ میں بی جے پی دفترمیں دیکھنے کو ملا۔ اترپردیش ایسوسی ایشن کے عہدیداران نے یہاں پہنچ کر سابقہ سماجوادی پارٹی کی سرکارکی خامیوں کا حوالہ دیتے ہوئے خود کو بی جے پی کا خیرخواہ بتایا۔ مودی حکومت کے قصیدے  بھی پڑھے اور مدرسہ بورڈ کے رجسٹرار کی شکایت بھی کی ۔

    اترپردیش میں سرکار بدلتے ہی لوگوں کی ترجیحات اور مفادات بھی بدل گئے ہیں۔ اس کا ایک منظر لکھنؤ میں بی جے پی دفترمیں دیکھنے کو ملا۔ اترپردیش ایسوسی ایشن کے عہدیداران نے یہاں پہنچ کر سابقہ سماجوادی پارٹی کی سرکارکی خامیوں کا حوالہ دیتے ہوئے خود کو بی جے پی کا خیرخواہ بتایا۔ مودی حکومت کے قصیدے بھی پڑھے اور مدرسہ بورڈ کے رجسٹرار کی شکایت بھی کی ۔

  • لکھنؤ میں بی جے پی دفتر کے سامنے اکٹھا ہوئےان لوگوں میں بیشتر وہی لوگ ہیں جو اس سے قبل بھی مختلف موقعوں اور مختلف موضوعات پراسی طرح  بی جے پی مخالف مظاہرہ و احتجاج کرتے رہے ہیں۔ یو پی میں سرکار بدل گئی ہے تو ان کی وفاداریاں اور مفادات بھی بدل گئے ہیں۔

    لکھنؤ میں بی جے پی دفتر کے سامنے اکٹھا ہوئےان لوگوں میں بیشتر وہی لوگ ہیں جو اس سے قبل بھی مختلف موقعوں اور مختلف موضوعات پراسی طرح بی جے پی مخالف مظاہرہ و احتجاج کرتے رہے ہیں۔ یو پی میں سرکار بدل گئی ہے تو ان کی وفاداریاں اور مفادات بھی بدل گئے ہیں۔

  • اب یہ سابقہ حکومت پرتنقید بھی کررہے ہیں اورپی ایم مودی سے لیکر سی ایم یوگی تک کی شان میں قصیدے بھی پڑھ رہے ہیں ۔

    اب یہ سابقہ حکومت پرتنقید بھی کررہے ہیں اورپی ایم مودی سے لیکر سی ایم یوگی تک کی شان میں قصیدے بھی پڑھ رہے ہیں ۔

  • مدرسہ ایسوسی ایشن کے عہدیداران نے اپنی طاقت دکھانے کے لئے دیگرمردو خواتین کا بھی سہارا لیا اور ان کے ہاتھوں میں جھنڈے اور بینر تھما دیئے ۔ بی جے پی دفتر پہنچ کرپارٹی کے ترجمان ڈاکٹر منوج مشرا کو گلہائےعقیدت بھی پیش کئے اور مدرسہ تعلیمی بورڈ کے رجسٹرار کی شکایت بھی کی ۔

    مدرسہ ایسوسی ایشن کے عہدیداران نے اپنی طاقت دکھانے کے لئے دیگرمردو خواتین کا بھی سہارا لیا اور ان کے ہاتھوں میں جھنڈے اور بینر تھما دیئے ۔ بی جے پی دفتر پہنچ کرپارٹی کے ترجمان ڈاکٹر منوج مشرا کو گلہائےعقیدت بھی پیش کئے اور مدرسہ تعلیمی بورڈ کے رجسٹرار کی شکایت بھی کی ۔

  • مدرسہ ایسوسی ایشن سے جڑے افراد کا اب ماننا ہے کہ بی جے پی کا خوف دکھا کردیگر سیاسی پارٹیاں مسلمانوں کا استحصال  کرتی  رہی ہیں۔

    مدرسہ ایسوسی ایشن سے جڑے افراد کا اب ماننا ہے کہ بی جے پی کا خوف دکھا کردیگر سیاسی پارٹیاں مسلمانوں کا استحصال کرتی رہی ہیں۔

  • تاہم  اب جبکہ مرکز و ریاست میں بی جے پی کی سرکار قائم ہوئی ہے تو انہیں امید ہے کہ ’ سب کا ساتھ ۔ سب کا وکاس‘ کا نعرہ حقیقت کی شکل ضرور لے گا۔

    تاہم اب جبکہ مرکز و ریاست میں بی جے پی کی سرکار قائم ہوئی ہے تو انہیں امید ہے کہ ’ سب کا ساتھ ۔ سب کا وکاس‘ کا نعرہ حقیقت کی شکل ضرور لے گا۔

  • لکھنؤ میں بی جے پی دفتر کے سامنے اکٹھا ہوئےان لوگوں میں بیشتر وہی لوگ ہیں جو اس سے قبل بھی مختلف موقعوں اور مختلف موضوعات پراسی طرح  بی جے پی مخالف مظاہرہ و احتجاج کرتے رہے ہیں۔ یو پی میں سرکار بدل گئی ہے تو ان کی وفاداریاں اور مفادات بھی بدل گئے ہیں۔
  • اب یہ سابقہ حکومت پرتنقید بھی کررہے ہیں اورپی ایم مودی سے لیکر سی ایم یوگی تک کی شان میں قصیدے بھی پڑھ رہے ہیں ۔
  • مدرسہ ایسوسی ایشن کے عہدیداران نے اپنی طاقت دکھانے کے لئے دیگرمردو خواتین کا بھی سہارا لیا اور ان کے ہاتھوں میں جھنڈے اور بینر تھما دیئے ۔ بی جے پی دفتر پہنچ کرپارٹی کے ترجمان ڈاکٹر منوج مشرا کو گلہائےعقیدت بھی پیش کئے اور مدرسہ تعلیمی بورڈ کے رجسٹرار کی شکایت بھی کی ۔
  • مدرسہ ایسوسی ایشن سے جڑے افراد کا اب ماننا ہے کہ بی جے پی کا خوف دکھا کردیگر سیاسی پارٹیاں مسلمانوں کا استحصال  کرتی  رہی ہیں۔
  • تاہم  اب جبکہ مرکز و ریاست میں بی جے پی کی سرکار قائم ہوئی ہے تو انہیں امید ہے کہ ’ سب کا ساتھ ۔ سب کا وکاس‘ کا نعرہ حقیقت کی شکل ضرور لے گا۔

تازہ ترین تصاویر