سالگرہ خصوصی : ہم پانچ سے کہانی تک ایسا رہا ودیا بالن کا فلمی سفر

Jan 01, 2017 02:13 PM IST
1 of 10
  • فلم پرینیتا ، 'کہانی ، ڈرٹی پکچر ، 'کہانی  2' جیسی فلموں سے بالی ووڈ میں اپنی ادکاری کا سکہ جمانے والی اداکارہ ودیا بالن اپنی فلم کی کامیابی کے لئے کسی مقبول مرد فنکار کی محتاج نہیں ہیں۔ انہوں نے اس بات کو ثابت کیا ہے کہ اگر کام کا جذبہ اور سخت محنت کرنے کی صلاحیت آپ میں ہے ، تو آپ خود ہی کسی فلم کوکامیاب بنانے کیلئے کافی ہیں(تصویر : گیٹی امیج )۔

    فلم پرینیتا ، 'کہانی ، ڈرٹی پکچر ، 'کہانی 2' جیسی فلموں سے بالی ووڈ میں اپنی ادکاری کا سکہ جمانے والی اداکارہ ودیا بالن اپنی فلم کی کامیابی کے لئے کسی مقبول مرد فنکار کی محتاج نہیں ہیں۔ انہوں نے اس بات کو ثابت کیا ہے کہ اگر کام کا جذبہ اور سخت محنت کرنے کی صلاحیت آپ میں ہے ، تو آپ خود ہی کسی فلم کوکامیاب بنانے کیلئے کافی ہیں(تصویر : گیٹی امیج )۔

  • ممبئی کے چیمبور میں تمل کنبہ میں یکم جنوری 1979 کو پیدا ہوئی ودیا کے والد پی آر بالن ایک کمپنی کے ایگزیکٹو وائس پریزیڈنٹ ہیں اور ان کی ماں سرسوتی بالن ایک گھریلو خاتون ہیں۔

    ممبئی کے چیمبور میں تمل کنبہ میں یکم جنوری 1979 کو پیدا ہوئی ودیا کے والد پی آر بالن ایک کمپنی کے ایگزیکٹو وائس پریزیڈنٹ ہیں اور ان کی ماں سرسوتی بالن ایک گھریلو خاتون ہیں۔

  • سولہ سال کی عمر میں ودیا نے ایکتا کپور کے ٹیلی ویژن شو 'ہم پانچ میں کام کیا تھا۔ تاہم وہ فلموں میں کیریئر بنانا چاہتی تھیں۔

    سولہ سال کی عمر میں ودیا نے ایکتا کپور کے ٹیلی ویژن شو 'ہم پانچ میں کام کیا تھا۔ تاہم وہ فلموں میں کیریئر بنانا چاہتی تھیں۔

  • ان کے والدین نے ان کے اس فیصلے کی حمایت کی، لیکن ساتھ ہی تعلیم مکمل کرنے کی شرط بھی رکھی۔ ودیا نے سینٹ جےويرس کالج سے سوشولوجی میں گریجویشن اور اس کے بعد ممبئی یونیورسٹی سے ماسٹر کی ڈگری حاصل کی۔

    ان کے والدین نے ان کے اس فیصلے کی حمایت کی، لیکن ساتھ ہی تعلیم مکمل کرنے کی شرط بھی رکھی۔ ودیا نے سینٹ جےويرس کالج سے سوشولوجی میں گریجویشن اور اس کے بعد ممبئی یونیورسٹی سے ماسٹر کی ڈگری حاصل کی۔

  • ودیا کے لئے فلموں میں کیریئر بنانے کی راہ آسان نہیں تھی۔ ملیالم اور تامل فلم دنیا میں کئی مرتبہ قسمت آزمانے کے بعد بھی وہ ناکام رہیں۔

    ودیا کے لئے فلموں میں کیریئر بنانے کی راہ آسان نہیں تھی۔ ملیالم اور تامل فلم دنیا میں کئی مرتبہ قسمت آزمانے کے بعد بھی وہ ناکام رہیں۔

  • ودیا کو بنگلہ فلم 'بھالو تھیكو سے شناخت ملی۔ اس فلم میں آنندی کے کردار کے لئے انہیں بہترین اداکارہ کا آنند لوك ایوارڈ بھی ملا۔

    ودیا کو بنگلہ فلم 'بھالو تھیكو سے شناخت ملی۔ اس فلم میں آنندی کے کردار کے لئے انہیں بہترین اداکارہ کا آنند لوك ایوارڈ بھی ملا۔

  • بالی ووڈ میں انہوں نے 'پرینیتا  فلم سے قدم رکھا۔ اس فلم میں اپنی اداکاری کے دم پر انہوں نے بہترین نئی اداکارہ کا ایوارڈ جیتا۔

    بالی ووڈ میں انہوں نے 'پرینیتا فلم سے قدم رکھا۔ اس فلم میں اپنی اداکاری کے دم پر انہوں نے بہترین نئی اداکارہ کا ایوارڈ جیتا۔

  •  لیکن ودیا کو اپنی ایک الگ شناخت بنانی ابھی باقی تھی ۔ اس کے بعد ودیا نے 'لگے رہو منا بھائی ، گرو  اور 'سلام عشق جیسی کئی فلمیں کی، لیکن انہیں تنقید کا سامنا کرنا پڑا۔ مگر سال 2007 میں آئی پریہ درشن کی فلم 'بھول بھليا  ودیا کے کیریئر کے لئے نیا موڑ ثابت ہوئی۔ اس میں اوني کے رول کی ناقدین نے جم کر تعریف کی۔

    لیکن ودیا کو اپنی ایک الگ شناخت بنانی ابھی باقی تھی ۔ اس کے بعد ودیا نے 'لگے رہو منا بھائی ، گرو اور 'سلام عشق جیسی کئی فلمیں کی، لیکن انہیں تنقید کا سامنا کرنا پڑا۔ مگر سال 2007 میں آئی پریہ درشن کی فلم 'بھول بھليا ودیا کے کیریئر کے لئے نیا موڑ ثابت ہوئی۔ اس میں اوني کے رول کی ناقدین نے جم کر تعریف کی۔

  • سال 2009 میں آئی 'پا اور وشال بھاردواج کی فلم عشقیہ نے انہیں بہترین اداکارہ کا فلم فیئر ایوارڈ دلایا۔ یہاں سے ودیا کے لئے کامیابی کے راستے کھل گئے۔ اس کے بعد انہیں 2011 میں آئی فلم 'دی ڈرٹی پکچر  کے لئے قومی ایوارڈ ملا۔

    سال 2009 میں آئی 'پا اور وشال بھاردواج کی فلم عشقیہ نے انہیں بہترین اداکارہ کا فلم فیئر ایوارڈ دلایا۔ یہاں سے ودیا کے لئے کامیابی کے راستے کھل گئے۔ اس کے بعد انہیں 2011 میں آئی فلم 'دی ڈرٹی پکچر کے لئے قومی ایوارڈ ملا۔

  • سال 2012 میں آئی فلم 'کہانی میں ودیا کے ودیا باگچي نامی حاملہ خاتون کے رول کی ہرطرف پذیرائی کی گئی اور اس نے اداکارہ کو ایک ہیرو بھی ثابت کردیا۔

    سال 2012 میں آئی فلم 'کہانی میں ودیا کے ودیا باگچي نامی حاملہ خاتون کے رول کی ہرطرف پذیرائی کی گئی اور اس نے اداکارہ کو ایک ہیرو بھی ثابت کردیا۔

  • ممبئی کے چیمبور میں تمل کنبہ میں یکم جنوری 1979 کو پیدا ہوئی ودیا کے والد پی آر بالن ایک کمپنی کے ایگزیکٹو وائس پریزیڈنٹ ہیں اور ان کی ماں سرسوتی بالن ایک گھریلو خاتون ہیں۔
  • سولہ سال کی عمر میں ودیا نے ایکتا کپور کے ٹیلی ویژن شو 'ہم پانچ میں کام کیا تھا۔ تاہم وہ فلموں میں کیریئر بنانا چاہتی تھیں۔
  • ان کے والدین نے ان کے اس فیصلے کی حمایت کی، لیکن ساتھ ہی تعلیم مکمل کرنے کی شرط بھی رکھی۔ ودیا نے سینٹ جےويرس کالج سے سوشولوجی میں گریجویشن اور اس کے بعد ممبئی یونیورسٹی سے ماسٹر کی ڈگری حاصل کی۔
  • ودیا کے لئے فلموں میں کیریئر بنانے کی راہ آسان نہیں تھی۔ ملیالم اور تامل فلم دنیا میں کئی مرتبہ قسمت آزمانے کے بعد بھی وہ ناکام رہیں۔
  • ودیا کو بنگلہ فلم 'بھالو تھیكو سے شناخت ملی۔ اس فلم میں آنندی کے کردار کے لئے انہیں بہترین اداکارہ کا آنند لوك ایوارڈ بھی ملا۔
  • بالی ووڈ میں انہوں نے 'پرینیتا  فلم سے قدم رکھا۔ اس فلم میں اپنی اداکاری کے دم پر انہوں نے بہترین نئی اداکارہ کا ایوارڈ جیتا۔
  •  لیکن ودیا کو اپنی ایک الگ شناخت بنانی ابھی باقی تھی ۔ اس کے بعد ودیا نے 'لگے رہو منا بھائی ، گرو  اور 'سلام عشق جیسی کئی فلمیں کی، لیکن انہیں تنقید کا سامنا کرنا پڑا۔ مگر سال 2007 میں آئی پریہ درشن کی فلم 'بھول بھليا  ودیا کے کیریئر کے لئے نیا موڑ ثابت ہوئی۔ اس میں اوني کے رول کی ناقدین نے جم کر تعریف کی۔
  • سال 2009 میں آئی 'پا اور وشال بھاردواج کی فلم عشقیہ نے انہیں بہترین اداکارہ کا فلم فیئر ایوارڈ دلایا۔ یہاں سے ودیا کے لئے کامیابی کے راستے کھل گئے۔ اس کے بعد انہیں 2011 میں آئی فلم 'دی ڈرٹی پکچر  کے لئے قومی ایوارڈ ملا۔
  • سال 2012 میں آئی فلم 'کہانی میں ودیا کے ودیا باگچي نامی حاملہ خاتون کے رول کی ہرطرف پذیرائی کی گئی اور اس نے اداکارہ کو ایک ہیرو بھی ثابت کردیا۔

تازہ ترین تصاویر