بنگلورو میں اجتماعی شادی کا اہتمام، فی جوڑے 60 ہزارروپئے خرچ کئے گئے

بنگلورو کے آدم گولڈن ہیریٹج میں ایک ہی اسٹیج پر8 غریب جوڑوں کا نکاح عمل میں آیا۔

Sep 27, 2018 03:38 PM IST | Updated on: Sep 27, 2018 05:14 PM IST
بنگلورو میں اجتماعی شادی کا اہتمام، فی جوڑے 60 ہزارروپئے خرچ کئے گئے

تصویر: نیوز 18

بنگلورو کے آدم گولڈن ہیریٹج میں عام طور پرامیر اور متوسط طبقہ کی شادیاں ہوتی ہیں۔ لیکن گزشتہ روز یہاں کا منظرکچھ مختلف تھا۔ ایک ہی اسٹیج پر8 غریب جوڑوں کا نکاح عمل میں آیا۔ ہرایک کے چہرے پرخوشی پھولے نہیں سما رہی تھی۔ پوری شان وشوکت کے ساتھ شادی کی تقریب منعقد ہوئی۔ دولہا دلہن کی نئی زندگی کیلئے ضروری سازوسامان، پلنگ، الماری  فراہم کی گئیں۔ یہ نیک کام امدادالنسائ ٹرسٹ اور ورلڈ میمن آرگنائزیشن کے تحت انجام پایا۔ ہیومن ٹچ آرگنائزیشن کی رہنمائی میں تقریب منعقد ہوئی۔

منتظمین نے کہا کہ ایک جانب سماج میں جہیز کی لعنت عام ہورہی ہے تودوسری طرف شادیوں میں فضول خرچی بڑھتی ہی جا رہی ہے۔ مذہب اسلام نے شادی کو آسان  اور زنا کو مشکل بنایا ہے۔ لیکن آج کا معاشرہ مخالف سمت میں گامزن ہے۔ یہی وجہ ہےکہ سماج میں جرائم کا گراف بڑھتا جارہا ہے۔

بنگلورو کی سماجی تنظیمیں ورلڈ میمن آرگنائزیشن اور امدادالنسائ مختلف سماجی اور تعلیمی خدمات انجام دے رہی ہیں۔ لیکن ان تنظیموں نے پہلی مرتبہ اجتماعی شادیوں کی تقریب منعقد کی ہے۔ فی جوڑے 60ہزارروپئے خرچ کئے گئے۔ زیادہ تردولہا دلہن کا تعلق دیہاتوں سے تھا۔ سماج کےامیر، صاحب ثروت افراد اگرغریبوں، بے سہارا اور یتیموں کا خیال رکھیں تو معاشرے میں نمایاں تبدیلی دیکھنے کومل سکتی ہے۔

رؤف احمد ہلور کی رپورٹ

Loading...

Loading...