پاکستان کے سابق ہائی کمشنر عبد الباسط نے بتایا تھا کشمیر متاثر، اب پورن اسٹار نے دیا یہ جواب

ہندوستان میں پاکستان کے سابق ہائی کمشنر عبد الباسط کشمیر متاثر بتا کر ایک پورن اسٹار کی تصویر ٹویٹر پر شیئر کرنے کے بعد بری طرح پھنس گئے ہیں ۔

Sep 04, 2019 05:22 PM IST | Updated on: Sep 04, 2019 05:22 PM IST
پاکستان کے سابق ہائی کمشنر عبد الباسط نے بتایا تھا کشمیر متاثر، اب پورن اسٹار نے دیا یہ جواب

پاکستان کے سابق ہائی کمشنر نے بتایا تھا کشمیر متاثر، اب پورن اسٹار نے دیا یہ جواب

ہندوستان میں پاکستان کے سابق ہائی کمشنر عبد الباسط کشمیر متاثر بتا کر ایک پورن اسٹار کی تصویر ٹویٹر پر شیئر کرنے کے بعد بری طرح پھنس گئے ہیں ۔ ٹویٹ میں عبد الباسط نے بتایا کہ یہ شخص اننت ناگ میں پیلٹ گن کی وجہ سے آنکھیں کھونے والا ہے ۔ حالانکہ ٹرول ہونے کے بعد پاکستان کے سابق ہائی کمشنر نے ٹویٹ ڈیلیٹ کردیا ۔ اب اس پورن اسٹار نے عبد الباسط کے ٹویٹ کا جواب دیا ہے ۔

پورن اسٹار جانی سنس نے ری ٹویٹ کرتے ہوئے عبد الباسط کا شکریہ ادا کیا ۔ پورن اسٹار نے لکھا کہ عبد الباسط کا شکریہ ، آپ کی وجہ سے میرے فالوورس بڑھ گئے ہیں ۔ حالانکہ میری نظریں پوری طرح صحیح ہیں ۔

Loading...

abdul basit

پاکستان کے سابق ہائی کمشنر عبد الباسط نے پیر کو کشمیر میں پیلٹ گن حملے کا دعوی کرتے ہوئے ٹویٹر پر ایک تصویر شیئر کی ، لیکن وہ ایک پورن اسٹار نکلا ۔ ٹویٹ میں بتایا گیا کہ یہ شخص اننت ناگ میں پیلٹ گن کی وجہ سے آنکھیں کھونے والا ہے ۔ ان کو اس غلطی کیلئے سوشل میڈیا پر جم کر ٹرول کیا جارہا ہے ۔

ٹویٹر یوزر نائلہ عنایت نے عبد الباسط کے اس ٹویٹ کو ری ٹویٹ کرتے ہوئے پوری جانکاری دی ۔ انہوں نے اسکرین شاٹ شیئر کرتے ہوئے لکھا کہ پاکستان کے سابق ہائی کمشنر عبد الباسط نے غلطی سے کشمیری نوجوان بتاتا کر پورن اسٹار جانی سنس کی تصویر شیئر کردی ۔

نائلہ نے مزید بتایا کہ عبد الباسط کے ٹویٹ میں پیلٹ گن سے آنکھیں کھونے والے مریض کو یوسف بتایا گیا ہے ، جو کہ پورن فلم انڈسٹری کے سپر اسٹار جانی سنس ہیں ۔ سنس کے ساتھ جو لڑکی ہے وہ بھی پورن اسٹار ہے ۔

بتادیں کہ ایسا پہلی مرتبہ نہیں ہے جب کشمیر کو لے کر فرضی تصویر شیئر کی گئی ہو ۔ جموں و کشمیر سے آرٹیکل 370 ہٹنے کے بعد سے پاکستان کی طرف سے کئی فرضی خبریں چلائی جارہی ہیں ۔ ٹویٹر نے بھی پاکستان کے صدر کو فرضی خبروں کو نہ پھیلانے کیلئے وارننگ دی ہے ۔

Loading...