مدھیہ پردیش: بی جے پی نے خواتین کے لئے الگ جاری کیا انتخابی منشور، اعلیٰ ذات سمیت سبھی کو لبھانے کی کوشش

خواتین کے خلاف جرائم میں چوطرفہ شدید کا سامنا کرنے والی بی جے پی نے خواتین کے لئے الگ سے انتخابی منشورلاکرخود کوبچانے کی کوشش کی ہے۔

Nov 17, 2018 12:42 PM IST | Updated on: Nov 17, 2018 12:42 PM IST
مدھیہ پردیش: بی جے پی نے خواتین کے لئے الگ جاری کیا انتخابی منشور، اعلیٰ ذات سمیت سبھی کو لبھانے کی کوشش

مدھیہ پردیش: بی جے پی کا انتخابی منشور جاری کرتے ہوئے ارون جیٹلی، دھرمیندر پردھان اور شیوراج سنگھ چوہان۔ تصویر: اے این آئی

مدھیہ پردیش اسمبلی انتخابات کے لئے بی جے پی نے آج اپنا انتخابی منشور جاری کردیا۔ خواتین کے لئے الگ سے انتخابی منشورجاری کیا گیا ہے۔ اسے 'ناری شکتی سنکلپ پتر' نام دیا گیا ہے۔ دوسرے انتخابی منشورکو بی جے پی نے 'وزن' کا نام دیا ہے۔

مرکزی وزیرخزانہ ارون جیٹلی، پٹرولیم وزیراورریاستی انچارج دھرمیندرپردھان، وزیراعلیٰ شیوراج سنگھ چوہان نے پارٹی کے بڑے لیڈروں کی موجودگی میں انتخابی منشور جاری کیا۔ یہ پہلا موقع ہے جب بی جے پی کسی ایک الیکشن کے لئے دو انتخابی منشور لے کرآئی ہے۔ خواتین سے متعلق جرائم کولے کرچوطرفہ الزامات کا سامنا کرنے والی بی جے پی نے الگ الگ انتخابی منشورلاکریہ جتانے کی کوشش کی ہے کہ خواتین کا تحفظ اورپیش رفت ہماری اولین ترجیحات میں شامل ہے۔

Loading...

انتخابی منشورجاری کرتے ہوئے وزیراعلیٰ شیوراج سنگھ چوہان نے کہا کہ ہم نے ترقی کے روڈ میپ اورخوشحال مدھیہ پردیش کا روڈ میپ پیش کیا ہے۔ اس میں کسان، نوجوان، بزرگ اورصحت پرزیادہ توجہ دی گئی ہے۔

بارہویں میں 75 فیصد لانے پرکالج جانے والی طالبات کو اسکوٹی دیئے جانے کا اعلان کیا گیا ہے۔  نوجوان بے روزگاروں کے لئے 'ہرہاتھ، ایک کاج اسکیم' کا بھی اعلان کیا گیاہے۔ ساتھ ہی کاریگریونیورسٹی بنانے، وجیا لرننگ سینٹرکا قیام، وجیا لرننگ سینٹرکی لائبریری کوانٹرنیٹ کنکشن فراہم کرنے جیسے متعدد اعلانات کئے گئے ہیں۔

اس کے علاوہ بی جے پی سرکاری نوکری کے علاوہ سماجی علاقوں میں نوجوانوں کو روزگار دے گی۔ حکومت لڑکیوں کے لئے 'مکتا یوجنا' کے تحت اسکولوں میں ٹوائلیٹ میں خود سے چلنے والی سینیٹری نیپکن وینڈنگ مشین لگائے گی۔

اعلیٰ ذات کواپنے حق میں لانے کی  بھی کوشش کی گئی ہے۔ وہیں غریب اورعام خاندان کے بچوں کی پی ایچ ڈی تک کی پڑھائی کے اخراجات پورا کرنے کا وعدہ کیا گیا ہے۔  پڑھائی چھوڑنے والی بچیوں کے لئے جھلکاری بائی مسلسل تعلیم کا منصوبہ بھی بی جے پی نے بنایا ہے۔

خواتین کے خلاف جرائم میں مدھیہ پردیش نمبرون ہونے کے سبب شیوراج حکومت مسلسل اپوزیشن کے نشانے پرہے۔ ایسے میں پارٹی نے خواتین کے لئے الگ سے منشور لاکرخود کو بچانے کی کوشش کی ہے۔

وزن لیٹرمیں خواتین، نوجوان اورکسانوں کے ساتھ ساتھ ہرطبقے پرتوجہ دی گئی ہے۔ انتخابی منشورکے لئے بی جے پی نے عوام سے مشورہ طلب کیا تھا۔ اسے 30 ہزارسے زیادہ مشورے ملے تھے، ان میں سے 700 کو شارٹ لسٹ کیا گیا۔ مالدارمدھیہ پردیش مہم کے تحت بی جے پی کو تقریباً 23 لاکھ مشورے ملے ہیں، ان مشوروں میں سے کچھ اہم مشورے بی جے پی نے اپنے وزن ڈاکیومنٹ میں شامل کیاہے۔

یہ بھی پڑھیں:    مدھیہ پردیش میں بی جے پی کو جھٹکا ، نامزدگی کے آخری دن دو قد اور لیڈروں نے دیا استعفی

یہ بھی پڑھیں:    مدھیہ پردیش انتخابات : کنفیوز کانگریس لیڈر ریاست کی ترقی نہیں بلکہ تباہی پھیلائیں گے: شیوراج سنگھ

یہ بھی پڑھیں:     شیوراج سنگھ چوہان کی بڑھی مشکل، برادر نسبتی سنجے سنگھ کانگریس میں شامل

Loading...
Listen to the latest songs, only on JioSaavn.com