اجودھیا میں رام مندرہی کی تعمیرہوسکتی ہے اورکچھ بھی نہیں: فائربرانڈ لیڈراوما بھارتی بھی میدان میں

مدھیہ پردیش میں انتخابی تشہیرکے لئے ہوشنگ آباد پہنچیں اوما بھارتی نے کہا کہ رام للا سبھی کے ہیں اورسبھی کوبولنے کا حق ہے۔

Nov 25, 2018 03:59 PM IST | Updated on: Nov 25, 2018 03:59 PM IST
اجودھیا میں رام مندرہی کی تعمیرہوسکتی ہے اورکچھ بھی نہیں: فائربرانڈ لیڈراوما بھارتی بھی میدان میں

بی جے پی کی فائربرانڈ لیڈر اوما بھارتی: فائل فوٹو

اجودھیا میں رام مندر کے موضوع پرممکنہ تحریک کے درمیان مدھیہ پردیش کی سابق وزیراعلیٰ اوربی جے پی کی فائربریگیڈ لیڈراوما بھارتی کا بیان آیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اجودھیا میں صرف رام مندرکی تعمیرہوسکتی ہے اورکچھ نہیں ہوسکتا ہے۔ مدھیہ پردیش میں انتخابی تشہیرکے درمیان ہوشنگ آباد پہنچیں اوما بھارتی نے یہ بات کہی۔

حالانکہ انہوں نے یہ بھی کہا کہ رام مندراوررام کے نام پرہمارا کوئی پیٹنٹ نہیں ہے۔ رام للا سبھی کے ہیں اورسبھی کو بولنے کا حق ہے۔ واضح رہے کہ اجودھیا میں رام مندرکی تعمیرکولے کراتوار کو سنتوں کی جانب سے دھرم سبھا منعقد کی گئی ہے۔ وشو ہندو پریشد کے علاوہ شیو سینا کے کارکنان بھی اس موقع پراجودھیا میں جمع ہوئے ہیں۔ کسی افراتفری یا ناگہانی واقعات کو ٹالنے کے لئے پورا شہرچھاونی کی شکل لئے ہوئے ہے۔

Loading...

قابل ذکرہے کہ اجودھیا تنازعہ میں پہلے بھی فساد ہوئے ہیں اورہزاروں جانیں بھی گئی ہیں۔ خاص طورپر 6 دسمبر1992 کی تاریخ ایک سیاہ دن کے طورپریاد کی جاتی ہے، جب فرقہ ورانہ فسادات میں دو ہزارسے زیادہ لوگوں کی اموات ہوئی تھی۔

وہیں خفیہ ایجنسی کے ذریعہ یہ بھی اطلاع ملی ہے کہ اجودھیا میں وشو ہندو پریشد اورآرایس ایس کی طرف سے اتوارکومنعقدہ دھرم سبھا کے دوران سادھو کے لباس میں دہشت گرد حملہ کرسکتے ہیں۔ خفیہ بیورو (آئی بی) سے ملے ان پٹ کے بعد یوپی پولیس نے اجودھیا شہرکی سیکورٹی میں اچانک مزید اضافہ کردیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:   راجستھان میں رام مندر پروزیراعظم نریندرمودی نے لب کشائی کرتے ہوئے کہا "ججوں کو ڈراتی ہے کانگریس"۔

یہ بھی پڑھیں:  زمین ایکوائرکرکے اجودھیا میں رام مندرکی تعمیرکی جائے: بابا رام دیو نے بھی چھوڑا شگوفہ

یہ بھی پڑھیں:   بی جے پی نے نہیں ’شیو سینا‘ نے گرایا تھا بابری مسجد کا ڈھانچہ: اعظم خان

یہ بھی پڑھیں:   اجودھیا معاملہ: وہ چاہتے ہیں کہ ان کے بیان پربولیں تاکہ تنازعہ کھڑا کرنے کا موقع ملے: مسلم مذہبی رہنما

Loading...