آنکھوں کے سامنے بیوی کی لاش اور گود میں 5 دن کی بیٹی، اڈیشہ کے بعد یہاں بھی انسانیت کی ہوئی موت

مدھیہ پردیش میں ایک بس میں جا رہی ایک خاتون کی موت کے بعد بس والوں نے عورت کے شوہر، بوڑھی ساس اور پانچ دن کی بچی کو بس سے اتار دیا۔

Aug 27, 2016 12:07 PM IST | Updated on: Aug 27, 2016 12:11 PM IST
آنکھوں کے سامنے بیوی کی لاش اور گود میں 5 دن کی بیٹی، اڈیشہ کے بعد یہاں بھی انسانیت کی ہوئی موت

بھوپال۔ اڈیشہ کے بعد اب مدھیہ پردیش کے دموہ ضلع میں انسانیت کو شرمسار کر دینے والا واقعہ سامنے آیا ہے۔ یہاں بس میں جا رہی ایک خاتون کی موت کے بعد بس والوں نے عورت کے شوہر، بوڑھی ساس اور پانچ دن کی بچی کو بس سے اتار دیا۔

معلومات کے مطابق، چھتر پور ضلع کے گھوگھری گاؤں کے رہنے والے رام سنگھ کی بیوی مللی بائی نے پانچ روز قبل ایک بیٹی کو جنم دیا تھا۔ درد زہ کے بعد سے ہی مللی بائی کی طبیعت بگڑتی گئی تو رام سنگھ اس کے علاج کے لئے اسے بس سے دموہ لے جا رہا تھا۔

Loading...

رام سنگھ کے مطابق، سفر کے دوران بیوی کی سانسیں تھم گئیں۔ بیوی کی موت کے بعد بس کے ڈرائیور، کنڈکٹر اور کلینر نے اسے، بوڑھی ماں اور پانچ دن کی بچی کو خاتون کی لاشں کے ساتھ چین پورا اور پرسائی گاؤں کے بیچ جنگل میں اتار دیا۔ اس کے بعد یہ خاندان 5 دن کی بچی اور لاش کو لئے 8 گھنٹے تک مدد کی فریاد لگاتا رہا، لیکن ان کی مدد کے لئے کوئی آگے نہیں آیا۔

وکلاء نے کی مدد

وکیل ہزاری اور راجیش پٹیل اپنی موٹر سائیکل سے دموہ واپس آ رہے تھے تو انہوں نے رام سنگھ کو اپنی بیوی کی لاش، نوزائیدہ بیٹی اور بوڑھی ماں کے ساتھ روتے ہوئے دیکھا۔

رام سنگھ سے آپ بیتی سننے کے بعد وکیل نے ڈائل 100 سروس پر فون کیا، لیکن کافی دیر تک مدد کے لئے کوئی پولیس کا نوجوان نہیں پہنچا۔ اس کے بعد دونوں وکلاء نے رام سنگھ کے خاندان کے لئے اپنی سطح پر گاڑی کا انتظام کیا۔ بتایا جا رہا ہے کہ اس دوران پولیس کے کچھ جوان پہنچے بھی تو انہوں نے اپنے علاقے کا معاملہ نہ ہونے کی بات کہہ کر پلہ جھاڑ لیا۔

Loading...