چھتیس گڑھ: پانچ سالہ معصوم کی عصمت دری کے بعد، والدہ کے ساتھ مل کر کیا تھا قتل، عدالت نے سنائی پھانسی کی سزا

چھتیس گڑھ کے ضلع درگا کی ایک عدالت نے پانچ سال کی معصوم بچی کی عصمت دری کرنے کے بعد اس کا قتل کرنے کے مجرم کو آج پھانسی کی سزا سنائی ہے۔

Aug 26, 2018 08:45 AM IST | Updated on: Aug 26, 2018 08:48 AM IST
چھتیس گڑھ: پانچ سالہ معصوم کی عصمت دری کے بعد، والدہ کے ساتھ مل کر کیا تھا قتل، عدالت نے سنائی پھانسی کی سزا

علامتی تصویر

چھتیس گڑھ کے ضلع درگا کی ایک عدالت نے پانچ سال کی معصوم بچی کی عصمت دری کرنے کے بعد اس کا قتل کرنے کے مجرم کو آج پھانسی کی سزا سنائی ہے۔ خصوصی جج شبھدرا چودھری نے اس معاملے کی سماعت میں قصوار وارپائے گئے کھرسا پار کے باشندے رام سونا کو پھانسی کی سزا سنائی ہے۔

وہیں عدالت نے واقعہ میں شامل رام سونا کی ماں اور ایک حامی کو پانچ سال قید کی سزا سنائی ہے۔ استغاثہ کے مطابق مجرم رام سونا نے 25 فروری 2015 کو 5 سالہ معصوم کی عصمت دری کی تھی نیز معاملہ کو دبانے کے لئے اس نے اپنی ماں اور ایک ساتھی کے ساتھ مل کر بچی کا قتل کر دیا تھا ۔

Loading...

واضح رہے کہ چتھیس گڑھ کا یہ پہلا معاملہ ہے جب کسی بچی کی عصمت دری کے ملزم کو عدالت نے پھانسی کی سزا سنائی ہے ۔متأثرہ کے اہل خانہ کا کہنا ہے کہ اس فیصلے سے ہماری بیٹی کو انصاف ملا ہے۔

Loading...