مدھیہ پردیش میں کڑاکے کی سردی ، 48 گھنٹوں کے دوران درجہ حرارت میں آٹھ ڈگری کی کمی

بھوپال کے محکمہ موسمیات کے سائنسدان کے مطابق شمال کی جانب سے مسلسل آنے والی برفیلی ہواؤں کی وجہ سے پوری ریاست میں سردی کا قہر جاری ہے۔

Dec 28, 2018 03:53 PM IST | Updated on: Dec 28, 2018 03:53 PM IST
مدھیہ پردیش میں کڑاکے کی سردی ، 48 گھنٹوں کے دوران درجہ حرارت میں آٹھ ڈگری کی کمی

مدھیہ پردیش میں کڑاکے کی سردی ، 48 گھنٹوں کے دوران درجہ حرارت میں آٹھ ڈگری کی کمی

موسم میں آنے والی غیر متوقع تبدیلی کے سبب مدھیہ پردیش ان دنوں کڑاکے کی سردی کے زد میں ہے۔ سردی کا سب سے زیادہ اثرراجدھانی بھوپال میں ہواہے، جہاں گزشتہ دو دن میں رات کا درجہ حرارت تقریبا آٹھ ڈگری تک نیچے آکر پانچ ڈگری کے ارد گرد تک پہنچ گیا، جو گزشتہ دس برسوں میں سب سے کم درجہ حرارت رہا۔

بھوپال کے محکمہ موسمیات کے سائنسدان کے مطابق شمال کی جانب سے مسلسل آنے والی برفیلی ہواؤں کی وجہ سے پوری ریاست میں سردی کا قہر جاری ہے۔ سردی کا سب سے زیادہ اثر راجدھانی بھوپال، اجین، ہوشنگ آباد اور اندور میں رہا، جہاں گزشتہ دو دنوں میں درجہ حرارت میں غیر متوقع طور پر کمی آئی ہے۔ بھوپال میں گزشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران چار ڈگری اور 48 گھنٹوں کے دوران تقریبا آٹھ ڈگری تک درجہ حرارت میں کمی واقع ہوئی ہے، جس کی وجہ سے پوری ریاست سردی کی گرفت میں ہے۔

ماہر موسمیات کے مطابق آئندہ کچھ دنوں تک سردی راحت ملنے کے آثار نظر آرہے ہیں ۔ دن کے ساتھ رات کا درجہ حرارت فی الحال اسی طرح سے رہنے کی امید ہے۔ اگرچہ سمجھا جا رہا ہے کہ نئے سال میں ایک بار پھر پارہ اوپر جائے گا، جس سے سردی سے راحت ملنے کی امید کی جاسکتی ہے۔

بھوپال اور اس کے ارد گرد کے علاقوں میں سرد لہر کے سبب درجہ حرارت میں زبردست کمی کا دور جاری ہے۔ یہاں گزشتہ چوبیس گھنٹے میں چار اور 48 گھنٹے میں تقریبا آٹھ ڈگری تک درجہ حرارت میں کمی آئی ہے۔ بھوپال میں جمعرات کی رات سرد ترین رات رہی۔یہاں رات کا درجہ حرارت 4.9 ڈگری سیلسیس ریکارڈ کیا گیا، جو گزشتہ دس برسوں میں سب سے کم درجہ حرارت رہا۔ سردی کی وجہ سے یہاں معمولات زندگی متاثرر ہے اور لوگ ٹھنڈ سے ٹھٹھر تے نظر آئے۔

Loading...

Loading...