مدھیہ پردیش : مکہ رباط میں 100 سے زائد سیٹیں کم ، شاہی اوقاف کی کارکردگی سے مسلم تنظیمیں ناراض

مکہ مکرمہ اور مدینہ منورہ میں نوابین بھوپال کے ذریعہ قائم کی گئی رباط میں عازمین حج کے الاٹمنٹ کو لے کر تنازعہ شروع ہوگیا ہے۔

Jun 28, 2018 09:19 PM IST | Updated on: Jun 28, 2018 09:19 PM IST
مدھیہ پردیش : مکہ رباط میں 100 سے زائد سیٹیں کم ، شاہی اوقاف کی کارکردگی سے مسلم تنظیمیں ناراض

خانہ کعبہ ۔ فائل فوٹو

بھوپال : مکہ مکرمہ اور مدینہ منورہ میں نوابین بھوپال کے ذریعہ قائم کی گئی رباط میں عازمین حج کے الاٹمنٹ کو لے کر تنازعہ شروع ہوگیا ہے۔شاہی اوقاف کے ذمہ داران سیٹوں کی کمی کوجہاں اپنی مجبوری سے تعبیر کر رہے ہیں تو وہیں سماجی تنظیموں نے اسے بھوپال ریاست کے عازمین حج کی حق تلفی سے تعبیر کیا ہے۔

قابل ذکر ہے کہ ریاست بھوپال ہندستان کی ان چند ریاستوں میں سے ایک ہے ، جہاں کے نوابین نے اپنی ریاست کے عازمین حج کیلئے مکہ مکرمہ اور مدینہ منورہ میں رباط کی تعمیر کی تھی۔ ریاستی عہد تک رباط میں عازمین حج کے قیام اور طعام کا انتظام نوابین بھوپال کے ذریعہ کیا جاتا تھا ، لیکن ریاست کے خاتمہ کے بعد اب مدینہ منورہ اور مکہ مکرمہ کی رباط کا نظم و نسق شاہی اوقاف کے ذریعہ کیا جاتا ہے۔

گزشتہ سال مدینہ رباط میں ریاست بھوپال کے سبھی عازمین حج کو موقع دیا گیا تھا جبکہ مکہ رباط کے لئے تین سو تیس عازمین حج کو موقع دیا گیا تھا ۔اس مرتبہ مدینہ رباط میں تو سبھی عازمین حج کو موقع دیا گیا ہے ، لیکن مکہ رباط میں سو سے زیادہ سیٹوں کی کمی درج کی گئی ہے۔ بھوپال کی مسلم تنظیموں نے اسے شاہی اوقاف کی نا اہلی اور ریاست بھوپال کے عازمین حج کی حق تلفی سے تعبیر کیا ہے۔

علاوہ ازیں مسلم سماجی تنظیموں کی شاہی اوقاف سے ناراضگی اس بات کو لے کر بھی ہے کہ شاہی اوقاف نے پہلی مرتبہ روایت کو توڑتے ہوئے خادم الحجاج کے قیام کا انتظام کیا ہے۔ادھر مکہ رباط میں سو سیٹوں کی کمی کیلئے شاہی اوقاف سعودی قانون کا حوالہ دے رہا ہے ، لیکن رباط میں خادم الحجاج کاکیونکرانتظام کیا گیا ، اس کا جواب شاہی اوقاف کے ذمہ داران دینے سے گریز کررہے ہیں ۔

Loading...

Loading...
Listen to the latest songs, only on JioSaavn.com