چائے کا ٹھیلہ لگانے پر مجبور ہے 50 سے زیادہ میڈل جیت چکی یہ کراٹے چمپئن

وندنا کلکٹریٹ میں اپنے شوہر کے ساتھ چائے اور سموسہ بیچ کر اہل خانہ کا گزر بسر کررہی ہیں ۔

Aug 05, 2018 11:55 AM IST | Updated on: Aug 05, 2018 11:55 AM IST
چائے کا ٹھیلہ لگانے پر مجبور ہے 50 سے زیادہ میڈل جیت چکی یہ کراٹے چمپئن

وندنا سوریہ ونشی اب چائے کا ٹھیلہ لگانے پر مجبور ہیں۔

کبھی کراٹے چمپئن رہ چکی وندنا سوریہ ورنشی اب نظر اندازی کی شکار ہیں ۔ عالم یہ ہے کہ وندنا چائے کا ٹھیلہ لگاکر اپنے اور اپنے اہل خانہ کیلئے دو وقت کی روٹی کا بندوبست کرنے پر مجبور ہیں ۔ وندنا نے قومی اور بین الاقوامی مقابلوں میں 50 سے بھی زیادہ میڈل اپنے نام کئے ہیں۔

اس کارنامہ کے بعد وندنا کو آدم جاتی کلیان محکمہ کے ہوسٹل میں طالبات کو سیلف ڈیفنس سکھانے کی نوکری ملی تھی ۔ وندنا نے ہوسٹل کی لڑکیوں کو سیلف ڈیفنس کی ٹریننگ دی ، لیکن نئے اسسٹنٹ کمشنر کے آتےہی وندنا کو ٹرینر کے عہدہ سے ہٹادیا گیا۔

کسی وجہ کے بغیر عہدہ سے ہٹانے کے ساتھ ہی ساتھ وندنا کو چھ ماہ کی تنخواہ بھی نہیں دی گئی ۔ وندنا نے لگاتار تین مہینوں تک دفاتر کے چکر کاٹے مگر افسران نے پورے معاملہ پر خاموشی اختیار کرلی ۔ وندنا نے 6 مہینے کے بعد تنخوانہ نہ دینے کو لے کر ایس ڈی ایم سے بھی فریاد کی ، مگر اب تک وندنا کی کوئی مدد نہیں ہوسکی ہے۔

وندنا اب کلکٹریٹ میں اپنے شوہر کے ساتھ چائے اور سموسہ بیچ کر اہل خانہ کا گزر بسر کررہی ہیں ۔ صبح اور شام کے وقت بڑی مشکل سے وقت نکال کر کراٹے کی ٹریننگ لے پاتی ہیں۔ وندنا چاہتی ہیں کہ خواہ انہیں اجرت نہ دی جائے ، لیکن طالبات کے تحفظ کیلئے سہی کم سے کم ہوسٹل میں ٹریننگ کی اجازت ہی دیدی جائے۔

Loading...

Loading...