کشمیر میں شہید کمانڈنٹ پرمود کی بیٹی نے کہا : پولیس افسر بن کر پاپا کے قاتلوں سے لوں گی بدلہ

منگل کو جامتاڑا میں شہید پرمود کمار کی آخری رسوم ادا کی گئی۔ آخری رسوم کے وقت ماحول اس وقت مزید غمگین ہوگیا ، جب ان کی 6 سالہ اکلوتی بیٹی ارنا نے والد کو اگنی دی۔

Aug 16, 2016 06:56 PM IST | Updated on: Aug 16, 2016 06:56 PM IST
کشمیر میں شہید کمانڈنٹ پرمود کی بیٹی نے کہا : پولیس افسر بن کر پاپا کے قاتلوں سے لوں گی بدلہ

جامتاڑا : پاپا مجھے پولیس افسر بنانا چاہتے تھے، اب میں پولیس افسر بن پاپا کے قاتلوں سے بدلہ لوں گی ۔ یہ کہنا ہے کہ سری نگر میں دہشت گردانہ حملے میں شہید کمانڈنٹ پرمود کمار کی بیٹی ارنا کا۔ منگل کو جامتاڑا میں شہید پرمود کمار کی آخری رسوم ادا کی گئی۔ آخری رسوم کے وقت ماحول اس وقت مزید غمگین ہوگیا ، جب ان کی 6 سالہ اکلوتی بیٹی ارنا نے والد کو اگنی دی۔

ای ٹی وی / پردیش 18 سے خصوصی بات چیت میں ارنا نے کہا کہ پاپا مجھے پولیس افسر بنانا چاہتے تھے، اب میں پولیس افسر بن کر پاپا کے قاتلوں سے بدلہ لوں گی۔ معصوم ارنا نے کہا کہ پاپا اینجل بن گئے ہیں۔ ساتھ ہی ساتھ ارنا نے ان لمحات کو بھی یاد کیا ، جب سرینگر میں وہ پاپا کے ساتھ تھی اور انہوں نے اسے کئی جگہ گھمایا تھا۔

واضح رہے کہ پیر کو سری نگر کے نوهٹا ضلع میں دہشت گردانہ حملے میں سی آر پی ایف کے کمانڈنٹ پرمود کمار شہید ہو گئے تھے۔ پرمود کمار جامتاڑا کے رہنے والے تھے۔ شہید کمانڈنٹ پرمود کمار کے پسماندگان میں والد بھگوان مستری، ماں، بیوی نیہا ترپاٹھی اور بیٹی ارنا ہیں۔ 1998 بیچ کے پرمود ایک ماہ قبل ہی کمانڈنٹ بنے تھے۔ اہلیہ اور بیٹی بھی ان کے ساتھ سری نگر میں رہتی تھیں۔ تاہم گزشتہ دنوں بیماری کی وجہ سے وہ جامتاڑا آئی تھیں اور اسی درمیان یہ حادثہ رونما ہو گیا۔

Loading...

Loading...