مدھیہ پردیش میں گائے قتل کےالزام میں ایک شخص کا قتل، دوسراشدید زخمی،اسپتال میں داخل

بھوپال: مدھیہ پردیش کے ستنا میں گائے کے قتل کے شک میں مبینہ طور پر ایک درجی کا قتل کردیا گیا ہے جبکہ ایک شخص زخمی ہوگیا ہے۔ حادثہ کے بعد سے علاقے میں تنائو ہے۔

May 20, 2018 06:13 PM IST | Updated on: May 20, 2018 06:13 PM IST
مدھیہ پردیش میں گائے قتل کےالزام میں ایک شخص کا قتل، دوسراشدید زخمی،اسپتال میں داخل

بھوپال: مدھیہ پردیش کے ستنا میں گائے کے قتل  کے شک میں مبینہ طور پر ایک سلائی کا کام کرنے والے (درجی) کے قتل کا معاملہ سامنے آیا ہے۔ اس حادثہ میں قتل کئے گئے شخص کا ایک ساتھی بھی زخمی ہوگیا ہے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق بھیڑ نے مبینہ طور پر دونوں کو ڈنڈوں سے پیٹا۔ حادثہ کے بعد سے علاقے میں تنائو ہے۔ اس معاملے میں پولیس نے 4 ملزمین کو گرفتار کیا ہے، ان سے پوچھ گچھ کی جارہی ہے۔

یہ معاملہ مدھیہ پردیش کو اگمرا گائوں میں جمعہ کو پیش آیا۔  پیشے سے سلائی کاکام کرنے والے (درجی)  ریاض (45) اور شکیل (38) پر گائے کو مارنے کا شک تھا، جس کے بعد دونوں پر بھیڑ نے لاٹھی ڈنڈوں سے پیٹ دیا، اس سے ریاض اور شکیل بری طرح زخمی ہوگئے۔ اسپتال میں علاج کے دوران ریاض کی موت ہوگئی جبکہ شکیل فی الحال کوما میں ہے۔

Loading...

آئی جی پولیس ریوا رینج اومیش جوگ نے بتایا کہ علاقے میں تناو ہے، ایسے میں تقریباً 400 پولیس اہکاروں کو ڈیوٹی پر تعینات کیا گیا ہے۔ 4 ملزمین کے خلاف قتل کی کوشش کا معاملہ درج کیا گیا ہے۔ وزیرداخلہ راجناتھ سنگھ بھی دو دن کے مدھیہ پردیش دورہ پر ہیں۔ اتوار کو یعنی آج  وہ ستنا بھی جانے والے ہیں۔

این ڈی ٹی وی کی خبر کے مطابق پولیس افسر راجیش ہنگنکر نے کہا کہ ایک کٹا ہوا سانڈ اور دیگر جانوروں کے گوشت بھی موقع سے برآمد ہوئے ہیں۔ معاملے میں گرفتار کئے گئے ملزمین میں پون سنگھ گونڈ، وجے سنگھ گونڈ، پھول سنگھ گونڈ اور نارائن سنگھ گونڈ شامل ہیں۔

ملزمین میں سے ایک پون سنگھ گونڈ نے ریاض اور شکیل کے خلاف گائے ذبح کرنے کا معاملہ بھی درج کرایا تھا۔ پون نے پولیس میں درج کرائی گئی اپنی شکایت میں کہا ہے کہ ریاض اور شکیل اس وقت زخمی ہوئے جب وہ بھاگنے کی کوشش کررہے تھے۔

انگریزی اخبار ہندوستان ٹائمز کے مطابق ملزمین نے دولوگوں کو مارنے سے انکار کیا ہے۔ پولیس نے پون کی شکایت پر شکیل اور ریاض کے خلاف مدھیہ پردیش گئو قتل پابندی دفعہ 2004 اور مدھیہ پردیش زرعی جانوروں کے تحفظ ضابطہ 1959 کی مختلف دفعات کے تحت معاملہ درج کیا ہے۔ میہر علاقے کے سب ڈویژنل افسر اروند تیواری نے کہا کہ انہیں جائے واردات سے بیف کے ٹکڑے ملے ہیں۔

دوسری جانب شکیل اور ریاض کے اہل خانہ نے گائے کے قتل کے الزامات کو مسترد کردیا ہے۔ پولیس افسر راجیش ہنگکر نے کہا کہ شکیل ٹیکسی ڈرائیور ہے، اس کو جب اسپتال سے ڈسچارج کیا جائے گا، تو اس کی گرفتاری ہوگی۔ مدھیہ پردیش نے سال 2012 میں گائے قتل ضابطہ میں تبدیلی کرکے 3 سال کی سزا کو 7 سال تک بڑھایا تھا۔

 

 

 

Loading...