مدھیہ پردیش میں بین ہوسکتی ہے فلم " دی ایکسیڈینٹل پرائم منسٹر" ، کانگریس نے کہا : ریلیز سے پہلے ہمیں دکھائیں 

مدھیہ پردیش کانگریس کے لیڈر سید جعفر نے کہا ہے کہ میں نے ڈائریکٹر کو خط لکھا ہے ، ہم فلر کے ٹریلر میں دکھائے گئے کنٹینٹ کی شدید مخالفت کرتے ہیں ، ہم چاہتے ہیں کہ ریلیز سے پہلے فلم ہمیں دکھائی جائے ، ورنہ ہم فلم ریلیز نہیں ہونے دیں گے۔

Dec 28, 2018 02:34 PM IST | Updated on: Dec 28, 2018 02:34 PM IST
مدھیہ پردیش میں بین ہوسکتی ہے فلم

مدھیہ پردیش میں بین ہوسکتی ہے فلم " دی ایکسیڈینٹل پرائم منسٹر" ، کانگریس نے کہا : ریلیز سے پہلے ہمیں دکھائیں 

فلم "دی ایکسیڈینٹل پرائم منسٹر "کو لے کر تنازع طول پکڑتا جارہا ہے ۔ کانگریس کی حکومت والی ریاست مدھیہ پردیش میں اس کو ریلیز نہیں کیا جائے گا ۔ ذرائع نے نیوز 18کو بتایا کہ وزیر اعلی کمل ناتھ نے فلم کو ریاست میں ریلیز نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔

مدھیہ پردیش کانگریس کے لیڈر سید جعفر نے کہا ہے کہ میں نے ڈائریکٹر کو خط لکھا ہے ، ہم فلر کے ٹریلر میں دکھائے گئے کنٹینٹ کی شدید مخالفت کرتے ہیں ، ہم چاہتے ہیں کہ ریلیز سے پہلے فلم ہمیں دکھائی جائے ، ورنہ ہم فلم ریلیز نہیں  ہونے دیں گے۔

بتادیں کہ یہ فلم سابق وزیر اعظم ڈاکٹر منموہن سنگھ کے میڈیا صلاح کار سنجے بارو کی کتاب پر مبنی ہے۔ جمعرات کو فلم کا ٹریلر ریلیز کیا گیا ، جس کے بعد سے فلم کی مخالفت شروع ہوگئی ہے۔

تین منٹ کے جاری ٹریلر میں منموہن سگھ کو کانگریس کی اندرونی سیاست کا مارا ہوا دکھایا گیا ہے۔ اس میں کئی جگہ سونیا گاندھی ، راہل گاندھی اور پرینکا کو منموہن سنگھ پر نشانہ سادھتے ہوئے بھی دکھایا گیا ہے۔

بتادیں کہ کانگریس کے کئی لیڈروں نے ٹریلر میں حقائق کو توڑ مروڑ کر پیش کرنے پر ناراضگی ظاہر کی ہے۔ کانگریس کے ترجمان سرجیوالا نے اس کو 2019 لوک سبھا انتخابات سے پہلے بی جے پی کا پروپیگنڈہ قرار دیا۔

Loading...