ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

 آئی سی یو میں 9 دن گزار کر 105 سالہ بزرگ اور 95 سالہ بیوی نے کوروناوائرس سے جیتی جنگ، اسپتال سے لوٹے گھر

سب کا کہنا تھا کہ ان کا اب بچنا مشکل ہے لیکن دھینو چوان (105) اور ان کی اہلیہ موٹابائی (95) نے سب کی قیاس آرائیوں کو غلط ثابت کردیا۔

  • Share this:
 آئی سی یو میں 9 دن گزار کر 105 سالہ بزرگ اور 95 سالہ بیوی نے کوروناوائرس سے جیتی جنگ، اسپتال سے لوٹے گھر
سب کا کہنا تھا کہ ان کا اب بچنا مشکل ہے لیکن دھینو چوان (105) اور ان کی اہلیہ موٹابائی (95) نے سب کی قیاس آرائیوں کو غلط ثابت کردیا۔

یہ محاورہ تو کافی مشہور ہے۔ ہمت مرداں مدد خدا۔ اگر انسان ہمت کریں تو اللہ اس کے لئے آسانیاں پیدا کر دیتا ہے اوراس کی مدد کرتا ہے۔ اس کی ایک عمدہ مثال مہاراشٹر کے لاتور ضلع کے کٹگاؤں ٹانڈاگاؤں کے 105 سال کے بزرگ اور ان کی 95 سالہ بیوی کو جب ان کے بچوں نے کورونا اسپتال میں بھرتی کرایا تو پڑوسیوں کو یہ امید نہیں تھی اسپتال سے اچھے ہو کر گھر واپس آئیں گے۔ واضح ہو کہ 105 سالہ بزرگ اور ان کی 95 سالہ بیوی کورونا وائرس کی زد میں آگئے تھے۔


سب کا کہنا تھا کہ ان کا اب بچنا مشکل ہے لیکن دھینو چوان (105) اور ان کی اہلیہ موٹابائی (95) نے سب کی قیاس آرائیوں کو غلط ثابت کردیا۔ اس بزرگ جوڑے نے لاتور کے ولاس راؤ دیشمکھ انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز کے آئی سی یو میں 9 دن گزارے اور جنگ جیت کر باہر نکلے۔ اس بوڑھے جوڑے کا علاج کرنے والے ڈاکٹروں کا کہنا ہے کہ بروقت جانچ اور بروقت علاج کی وجہ سے وہ وائرس کو شکست دینے میں کامیاب ہوئے ہیں۔


ان کے بیٹے سریش چوہان نے کہاکہ ہم مشترکہ خاندان میں رہتے ہیں۔ 24 مارچ کو میرے والد اور والدہ اور تین بچے پازیٹو پائے گئے۔ والدین کو تیز بخار تھا اور پیٹ میں درد اس لئے ہم نے ان کو اسپتال میں بھرتی کرانے کا فیصلہ کیا۔ ان دونوں کو گاؤں سے 3 کلومیٹر دور گورنمنٹ میڈیکل کالج میں بستر ملا۔ سریش کا کہنا ہے کہ دونوں بہت خوفزدہ تھے لیکن میں جانتا تھا کہ انہیں گھر پر رکھنے کا فیصلہ غلط ثابت ہوگا۔ دھینو چوان کو 5 اپریل کو اور ان کی اہلیہ کو دو دن بعد اسپتال سے چھئی دی گئی۔

Published by: Sana Naeem
First published: Apr 27, 2021 07:57 PM IST