ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

آکسیجن کی کمی کی وجہ سے کرناٹک کے چاماراج نگر میں 24 مریضوں کی موت، حکومت نے کی تردید

چاماراج نگر کے ڈپٹی کمشنر ڈاکٹر ایم آر روی نے بتایا کہ ضلع میں 300 سے 350 سلنڈروں کی ضرورت ہے جو پوری نہیں ہو رہی ہے۔

  • Share this:
آکسیجن کی کمی کی وجہ سے کرناٹک کے چاماراج نگر میں 24 مریضوں کی موت، حکومت نے کی تردید
آکسیجن کی کمی کی وجہ سے کرناٹک کے چاماراج نگر میں 24 مریضوں کی موت، حکومت نے کی تردید

بنگلورو : آکسیجن کی فراہمی نہ ہونے کی وجہ سے کرناٹک کے چاماراج نگر ضلع میں اتوار کے روز ایک COVID اسپتال میں کم از کم 24 افراد کی موت ہوگئی۔ اموات چاماراج نگر کے سرکاری ضلعی اسپتال میں ہوئی۔ تاہم حکومت نے اس بات سے انکار کیا ہے۔ اسپتال میں 24 اموات ہوئیں، تمام ایک ہی وقت میں نہیں۔ اتوار کی صبح سے آدھی رات کے درمیان 14 افراد کی موت ہوگئی۔ اس کے بعد 12 سے 3 بجے کے درمیان تین مریض دم توڑ گئے۔ صبح 3 بجے سے پیر کی صبح تک مزید سات مریض دم توڑ گئے۔


رات 10.30 بجے آکسیجن کی کمی تھی جسے میسور سے 60 آکسیجن سلنڈر حاصل کرکے آکسیجن کی قلت کو دور کیا گیا۔ مزید 60 سلنڈر پیر کی صبح پہنچے۔ چاماراج نگر کے ڈپٹی کمشنر ڈاکٹر ایم آر روی نے بتایا کہ ضلع میں 300 سے 350 سلنڈروں کی ضرورت ہے جو پوری نہیں ہو رہی ہے۔


وزیراعلی بی ایس یدیورپا نے اس واقعے کے بارے میں تفصیلات اکٹھا کرنے کے لئے ڈپٹی کمشنر سے بات کی جبکہ وزیر صحت کے سدھاکر اور ابتدائی و ثانوی وزیر تعلیم کے وزیر سریش کمار صورتحال کا جائزہ لینے کے لئے پیر کی صبح چاماراج نگر روانہ ہوگئے۔


ڈپٹی کمشنر نے کہا ہے کہ اموات دیگر وجوہات کی وجہ سے ہوئی ہیں۔ یہ آکسیجن کی فراہمی کی کمی کی وجہ سے نہیں۔ ضلعی انچارج وزیر سریش کمار نے بتایا کہ ’’میں مزید تفصیلات حاصل کرنے کے لئے اسپتال کا دورہ کر رہا ہوں‘‘۔

حزب اختلاف نے اس واقعے کو مجرمانہ غفلت قرار دیا ہے۔ کے پی سی سی کے صدر ڈی کے شیوکمار نے ٹویٹ کیا کہ ’’کرناٹک میں مجرمانہ غفلت کی وجہ سے یہ 24 اموات ہوئیں۔ وزیر اعلی اور وزیر صحت کیوں کہہ رہے ہیں کہ آکسیجن کافی ہے؟ کیا کوئی جوابدہی نہیں ہے؟ مزید کتنے افراد کو ہلاک کیاجائے گا کیوں کہ حکومت آکسیجن فراہم نہیں کرسکتی ہے‘‘۔

ادھر یدیورپا نے منگل کو شام 4 بجے کابینہ کا ہنگامی اجلاس طلب کیا ہے۔
Published by: Mohammad Rahman Pasha
First published: May 03, 2021 04:45 PM IST