ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

ملک میں 30گروپ کررہے ہیں کوروناوائرس ویکسین پر کام، فروری 2021 تک ملے گی گڈ نیوز

دنیا کا ہر ملک کوروناوائرس ویکسین(Corona vaccine) کو بنانے میں لگا ہوا ہے جس سے اس وبا کو فورا روکا جاسکے۔

  • Share this:
ملک میں 30گروپ کررہے ہیں کوروناوائرس ویکسین پر کام، فروری 2021  تک ملے گی گڈ نیوز
لوگوں سے کہا کیا ہے کہ وہ حکومت کی طرف سے وقتاً فوقتاً جاری کی جانے والی ایڈوائزری پر سختی سے عمل کریں۔ لوگوں سے یہ بھی کہا گیا ہے کہ وہ سرکار کی جانب سے فراہم کی جانے والی جانکاری پر ہی بھروسہ کریں۔ لوگوں سے کہا گیا ہے کہ وہ نہ افواہیں پھیلائیں اور نہ اُن پر کان دھریں۔۔(تصویر: علامتی فوٹو،نیوز18)۔

چین سے دنیا بھر میں پھیلے کوروناوائرس (Coronavirus) نے اب تک 5,790,090 لوگوں کو متاثر کیا ہے۔ جبکہ 357,432 لوگوں کی موت ہوچکی ہے۔ دنیا کا ہر ملک کوروناوائرس ویکسین(Corona vaccine) کو بنانے میں لگا ہوا ہے جس سے اس وبا کو فورا روکا جاسکے۔ ہندستان میں 3سائنسدانوں کے گروپ کے ساتھ۔ساتھ 6 مقامی ویکسین کمپنیاں اس کام میں لگی ہوئی ہیں۔ ملک اور دنیا میں پھیلے کووڈ19 عالمی وبا سے نمٹنے کیلئے 10 دواؤں کی ایک مرتبہ پھر ٹیسٹنگ کی جارہی ہے۔


وزیر اعظم نریندر مودی کے پرنسپل سائنسداں صلاحکار پروفیسر کے وجے راگھون نے کہا ہے کہ ملک میں سائنسداں کورونا ویکسین کو تیارکرنے میں مصروف ہیں لیکن اس کی نشوونما میں وقت لگ سکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس دوران ہمیں بہت ساری اہم چیزوں پر توجہ دینے کی ضرورت ہے۔ جیسے ماسک کا استعمال ، ذاتی صاف۔صفائی کی عادت ، جسمانی دوری ، متاثرہ افراد کا سراغ لگانا اور لوگوں میں جانچ کا خیال رکھنا ضروری ہے۔


ڈاکٹر راگھوان نے معلومات دیتے ہوئے کہا کہ اس وقت ہندوستان میں 8 ویکسین پر کام جاری ہے۔ اس میں ہندستان بایوٹیک ، سیرم انسٹی ٹیوٹ کیڈلا اوربایولوجیکل اہم ہیں۔ اس کے ساتھ ہی انڈین کونسل آف میڈیکل ریسرچ (آئی سی ایم آر) کے تحت ، لیبارٹریز ، شعبہ بایوٹیکنالوجی ، کونسل آف سائنسی اینڈ انڈسٹریل ریسرچ (سی ایس آئی آر) بھی کورونا کو ختم کرنے کے لئے چھ ویکسینوں پر کام کر رہے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ دونوں کے نتائج بہت مثبت نکلے ہیں۔ اچھے نتائج جلد ہی دیکھنےکو مل سکتے ہیں۔


ڈاکٹر راگھوان نے کہا کہ ویکسین بنانے کے بعد ، لوگوں کو اس کی فراہمی کرنا بھی ایک بہت بڑا چیلنج ہے۔ ایک ساتھ تمام لوگوں کو ویکسین نہیں بھیجی جا سکتی ہے۔ اس صورتحال میں ترجیحی گروپوں پر غور کیا جارہا ہے۔ یہ ویکسین ہر ایک کو فوری طور پر دستیاب نہیں ہوگی۔ اس موقع پر نیتی آیوگ کے ممبر ڈاکٹر وی کے پال نے کہا کہ ہندوستان کا انسٹی ٹیوٹ آف سائنس اینڈ ٹکنالوجی اینڈ فارماسیوٹیکل دنیا میں اپنے کام سے مشہور ہے۔
First published: May 29, 2020 09:38 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading