உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    كووڈ-19 کے خوف سے چھ مہینے ہوائی سفر کے بارے میں نہیں سوچیں گے 40 فیصد لوگ: سروے

    چھ مہینے ہوائی سفر کی نہیں سوچیں گے 40 فیصد لوگ: سروے

    چھ مہینے ہوائی سفر کی نہیں سوچیں گے 40 فیصد لوگ: سروے

    کورونا وائرس ’ كووڈ -19‘ سے لوگ اس قدر ڈرے ہوئے ہیں کہ 40 فیصد لوگوں نے کہا ہے کہ وہ کورونا وبا کے کنٹرول ہونے کے بعد بھی کم از کم چھ ماہ تک ہوائی سفر نہیں کریں گے۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:
      جنیوا / نئی دہلی۔ کورونا وائرس ’ كووڈ -19‘ سے لوگ اس قدر ڈرے ہوئے ہیں کہ 40 فیصد لوگوں نے کہا ہے کہ وہ کورونا وبا کے کنٹرول ہونے کے بعد بھی کم از کم چھ ماہ تک ہوائی سفر نہیں کریں گے ۔ انٹرنیشنل ایئر ٹرانسپورٹ ایسوسی ایشن (آئی اے ٹی اے ) کے پیر کو جاری سروے میں یہ بات سامنے آئی ہے ۔ اس میں حصہ لینے والے صرف 14 فیصد لوگوں نے کہا ہے کہ وہ ہوائی سفر کے لئے انتظار نہیں کریں گے ۔ وہیں تقریباََ 46 فیصد کا کہنا ہے کہ وہ ایک یا دو ماہ انتظار کرنے کے بعد ہی ہوائی سفر کرنا پسند کریں گے ۔بقیہ 40 فیصد لوگوں کا کہنا ہے کہ وہ چھ ماہ یا اس سے بھی زیادہ انتظار کرنے کے بعد ہی اس کے بارے میں سوچیں گے ۔

      پہلے ہوائی سفر کر چکے لوگوں کے درمیان کرائے گئے اس سروے میں چار فیصد لوگوں کا کہنا ہے کہ وہ آگے ہوائی سفر بالکل بھی نہیں کریں گے ۔ آٹھ فیصد نے کم از کم ایک سال تک اور 28 فیصد نے چھ ماہ تک انتظار کرنے کی بات کہی ہے ۔لوگوں نے مالی تنگی کی وجہ سے بھی اس وقت سفر نہ کرنے کے اشارے دیے ہیں ۔ سروے میں 69 فیصد لوگوں نے کہا کہ جب تک ان کی ذاتی مالی حالت مستحکم نہیں ہو جاتی وہ ہوائی سفر ٹال دیں گے ۔

      کورونا سے نمٹنے میں ترکی کا’ لاک ڈاون ماڈل‘ دنیا میں سب سے الگ، بند ہے بھی اور نہیں بھی

      آئی اے ٹی اے کے ڈائریکٹر جنرل اور چیف ایگزیکٹو آفیسر الیگزینڈر ڈی نے کہا کہ وبا کے کنٹرول ہونے کے باوجود مسافروں کے اعتماد کو دوہرا دھچکا لگے گا ۔ ایک طرف اقتصادی کساد بازاری کو لے کر ان کی مالی تشویش ہو گی تو دوسری طرف صحت کی سکیورٹی کے تعلق سے بھی ان کے ذہن میں شکوک و شبہات ہو ں گے۔ حکومت اور ہوا بازی صنعت کے لیے ساتھ مل کر مسافروں کا اعتماد قائم کرنے کے لئے کام کرنا ہو گا۔
      Published by:Nadeem Ahmad
      First published: