ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

COVID-19: دہلی میں کورونا وائرس کی دوسری لہر ہوئی تیز، ابھی اور بگڑیں گے حالات: ڈاکٹر رندیپ گلیریا

ہندستان میں پچھلے کئی دنوں سے کورونا وائرس کے انفیکشن کے معاملوں میں کمی دیکھنے کو ملی ہے۔ لیکن دہلی میں حالات تیزی سے بدل رہے ہیں۔ دہلی میں پچھلے ایک ہفتے سے ہر دن 5 ہزار سے زیادہ معاملوں نے ڈاکٹروں کی تشویش بڑھا دی ہے۔ ایسے میں اس بات کو لے کر بھی چرچا جاری ہے کہ کیا ملک میں کورونا وائرس کے انفیکشن کی تیسری لہر آ چکی ہے۔

  • Share this:
COVID-19: دہلی میں کورونا وائرس کی دوسری لہر ہوئی تیز، ابھی اور بگڑیں گے حالات: ڈاکٹر رندیپ گلیریا
دہلی میں کورونا وائرس کی دوسری لہر ہوئی تیز، ابھی اور بگڑیں گے حالات: رندیپ گلیریا

نئی دہلی۔ ہندستان میں پچھلے کئی دنوں سے کورونا وائرس کے انفیکشن کے معاملوں میں کمی دیکھنے کو ملی ہے۔ لیکن دہلی میں حالات تیزی سے بدل رہے ہیں۔ دہلی میں پچھلے ایک ہفتے سے ہر دن 5 ہزار سے زیادہ معاملوں نے ڈاکٹروں کی تشویش بڑھا دی ہے۔ ایسے میں اس بات کو لے کر بھی چرچا جاری ہے کہ کیا ملک میں کورونا وائرس کے انفیکشن کی تیسری لہر آ چکی ہے۔ اس بارے میں ایمس (AIIMS) کے ڈائریکٹر ڈاکٹر رندیپ گلیریا (Randeep Guleria) نے واضح طور پر انکار کر دیا ہے۔ گلیریا کا کہنا ہے کہ آپ ابھی کے اعداد وشمار کو دیکھ کر کورونا کی تیسری لہر کی بات نہیں کر سکتے۔ ہم یہ کہہ سکتے ہیں کہ کورونا کی دوسری لہر جو کمزور ہوئی تھی وہ اب ایک بار پھر تیز ہو گئی ہے۔


ڈاکٹر گلیریا نے کہا کہ اب لوگ کورونا کو لے کر بے پروا ہوتے جا رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پارٹی اور پروگراموں میں سماجی دوری کا دھیان نہیں رکھا جا رہا ہے اور بازاروں میں بھی لوگ بغیر ماسک کے گھوم رہے ہیں۔ تہوار کا موسم آنے کے بعد سے بازار میں بھیڑ بڑھ چکی ہے اور لوگوں کو لگنے لگا ہے کہ کورونا اب ختم ہونے کی کگار پر پہنچ گیا ہے۔


فائل فوٹو


ڈاکٹر گلیریا نے کہا کہ ہمیں یہ سمجھنے کی ضرورت ہے کہ کورونا ابھی آدھے راستے میں پہنچا ہے۔ دہلی میں جس طرح سے لوگوں نے لاپرواہی برتی ہے اس کا نتیجہ ہے کہ کورونا کا عروج دہلی میں اب ایک بار پھر دکھائی دینے لگا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایسے وقت میں بہت ضروری ہو تبھی گھر سے باہر نکلیں اور سماجی دوری پر عمل کریں۔

ڈاکٹر گلیریا نے اس بات پر بھی زور دیا کہ ٹھنڈ بڑھنے کے ساتھ ہی کورونا وائرس اور خطرناک ہو گا۔ انہوں نے بتایا کہ ٹھنڈ میں وائرس ہوا میں زیادہ دیر تک رہ سکے گا جس کے سبب انفیکشن کا امکان اور بھی زیادہ بڑھ سکتا ہے۔ ایمس کے ڈائریکٹر نے مانا کہ آلودگی بڑھنے کے ساتھ وائرس اور بھی زیادہ خطرناک ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ کورونا وائرس کا انفیکشن اور آلودگی دونوں سے ہی پھیپھڑوں کو نقصان پہنچتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ٹھنڈ کے موسم میں ہمیں اور بھی زیادہ احتیاط برتنے کی ضرورت ہے نہیں تو انفیکشن کے معاملے بہت زیادہ بڑھ سکتے ہیں۔
Published by: Nadeem Ahmad
First published: Nov 02, 2020 11:43 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading