ہوم » نیوز » وسطی ہندوستان

کووڈ سے ہلاکتوں کو لیکر سیاست جاری! کورونا سے 1 لاکھ اموات کا کانگریس پیش کرے گی ثبوت

حکومت کے مطالبہ کو کانگریس نے نہ صرف تسلیم کیا ہے بلکہ کورونا قہر میں ہونے والی اموات کو نام اور پتے کے ساتھ حکومت کے سامنے پیش کرنے کا اعلان کیا ہے۔

  • Share this:
کووڈ سے ہلاکتوں کو لیکر سیاست جاری! کورونا سے 1 لاکھ اموات کا کانگریس پیش کرے گی ثبوت
بی جے پی کے چیلنج کو کانگریس نے کیا قبول

مدھیہ پردیش میں حکومت کی کوششوں سے کورونا ریکوری ریٹ میں بھلے ہی تیزی سے اضافہ ہورہا ہو لیکن ریاست میں کورونا سے ہونے والی اموات کو لیکر حکومت اور کانگریس کے درمیا ن سیاست جاری ہے ۔ سابق سی ایم کمل ناتھ کے ذریعہ ریاست میں کورونا کی وبائی بیماری سے ایک لاکھ سے زیادہ اموات کو لیکر کل جہاں بیان دیا گیا تھا۔ وہیں شیوراج سنگھ حکومت نے کانگریس سے اپنے دعوی کی تصدیق کے لئے ثبوت پیش کرنے کا مطالبہ شروع کردیا ۔حکومت کے مطالبہ کو کانگریس نے نہ صرف تسلیم کیا ہے بلکہ کورونا قہر میں ہونے والی اموات کو نام اور پتے کے ساتھ حکومت کے سامنے پیش کرنے کا اعلان کیا ہے۔

مدھیہ پردیش کے وزیر داخلہ ڈاکٹر نروتم مشرا کہتے ہیں کہ کانگریس او راس کے لیڈروں نے جھوٹ بولنے کی حد کردی ہے ۔ کمل ناتھ جی کہہ رہے ہیں کہ کورونا قہر میں ایک لاکھ سے زیادہ لوگوں کی موت ہوئی ہے ۔ اگر ان کےپاس کوئی ثبوت ہو تو پیش کریں ۔ در اصل یہ لوگ عوام کو گمراہ کر کے سیاست میں بنے رہنا چاہتے ہیں ۔ شیوراج سنگھ جی نے کورونا قہر میں عوامی فلاح کے جو کام کئے ہیں وہ کانگریس کی حکومتیں نہیں کر سکیں تو انہیں یہ بات چھبتی ہے ۔ ہماری حکومت نے کورونا سے مرنے والوں کے اہل خانہ کو ایک ایک لاکھ روپیہ مالی امداد کے طور پر دینے کا اعلان کیاہے ۔ جن سرکاری ملازمین کی موت ہوئی ہے ان کے اہل خانہ میں سے کسی ایک شخص کو ہمدردانہ تقرری دی جا رہی ہے ۔




کورونا جانبازوں کو سوغات دینے کے ساتھ جن بچوں کے سر سے ان کے والدین کا کورونا قہر میں سایہ اٹھ گیا ہے انہیں پینشن اور مفت راشن دینے کے ساتھ ان کی مفت تعلیم کاانتظام کرنے کا شیوراج حکومت نے اعلان کیا ہے اور یہ سب باتیں جب کانگریس کے لوگ دیکھتے ہیں تو انہیں تکلیف ہوتی ہے کہ وہ لوگ ایسے فلاحی کام کیوں نہیں کر سکے۔ سماج میں گمراہی پیداکرنے اور خوفزدہ کرنے والوں کو عوام کبھی معاف نہیں کرینگے۔


وہںی مدھیہ پردیش کانگریس کے سینئر لیڈر وسابق وزیر پی سی شرما کہتے ہیں کہ کورونا سے ہونے والی اموات کو لیکر کانگریس ہی نہیں بی جے پی کے لوگ بھی سوال اٹھا رہےہیں ۔ کورونا جائزہ میٹنگ میں بی جے پی سینئر لیڈر اے وشنوئی سوال اٹھا چکے ہیں کہ حکومت اعداد وشمار چھپا رہی ہے اور جھوٹے آنکڑے پیش کر رہی ہے ۔ مدھیہ پردیش میں کورونا سے جن لوگوں کی موت ہوئی ہے ان کے نام اور پتے کے ساتھ ساری تفصیل کانگریس حکومت کو پیش کریگی ۔



حکومت کے ریکارڈ جھوٹ بول سکتے ہیں لیکن قبرستان میں دفن کئے گئے لوگوں کی قبریں اور شمشا ن میں جلائی گئی لاشوں کے ریکارڈ جھوٹ نہیں بولتے ہیں ۔یہ سرکار نہ صرف مرنے والوں کے آنکڑے چھپا رہی ہے بلکہ کورونا اور بلیک فنگس کے مریضوں کو علاج دینے میں بھی ناکام ہے ۔ پچھلے تین دن سے بلیک فنگس کے مریضوں کو لگنے والا ضروری انجیکشن بھوپال میں نہیں ہے اور مریضوں کے رشتہ دار ضروری انجیکشن کے لئے ایڈوانس جمع کرنے کے بعد بھی در در کی ٹھوکریں کھانے کو مجبور ہیں ۔حکومت کے اس پاپ کے لئے عوام کبھی معاف نہیں کرینگے۔
Published by: Mirzaghani Baig
First published: May 23, 2021 08:32 AM IST