ہوم » نیوز » عالمی منظر

کورونا: ایران میں گذشتہ 24 گھنٹے کے دوران 2205 کیسز، کل تعداد بڑھ کر 27000 ہوئی، انڈونیشیا میں شرحِ اموات 58 ہوئی

وزارت صحت نے کہا کہ فروری کے آغاز میں اس وائرس کا پہلا معاملہ سامنے آنے کے بعد سے یہ پہلا موقع ہے جب ایک دن میں اتنے افراد اس وائرس سے متاثر پائے گئے ہیں۔

  • UNI
  • Last Updated: Mar 25, 2020 10:18 PM IST
  • Share this:
کورونا: ایران میں گذشتہ 24 گھنٹے کے دوران 2205 کیسز، کل تعداد بڑھ کر 27000 ہوئی، انڈونیشیا میں شرحِ اموات 58 ہوئی
وزارت صحت نے کہا کہ فروری کے آغاز میں اس وائرس کا پہلا معاملہ سامنے آنے کے بعد سے یہ پہلا موقع ہے جب ایک دن میں اتنے افراد اس وائرس سے متاثر پائے گئے ہیں۔

تہران۔ ایران میں گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا وائرس (کووِڈ-19) کے2205 نئے کیسز سامنے آئے ہیں اور اب تک یہاں اس وبا کے سبب 143 افراد کی موت ہو چکی ہے۔ ایران کی وزارت صحت نے بدھ کے روز یہ اطلاعات دیں۔ وزارت صحت کے مطابق ملک میں اس وبا سے اب تک 27000 افراد متاثر ہوئے ہیں۔ وزارت صحت نے کہا کہ فروری کے آغاز میں اس وائرس کا پہلا معاملہ سامنے آنے کے بعد سے یہ پہلا موقع ہے جب ایک دن میں اتنے افراد اس وائرس سے متاثر پائے گئے ہیں۔


ایران کے صدر حسن روحانی نے ایک بار پھر کہا ہے کہ ملک میں وائرس اب ڈھلان پر ہے حالانکہ صحت حکام نے ان کی اس بات کی حمایت نہیں کی ہے۔


وہیں، انڈونیشیا میں کورونا وائرس (کووِڈ-19) کی وبا سے ہلاک ہونے والوں کی تعداد بدھ کی دوپہر تک بڑھ کر 58 ہو گئی۔ کورونا وائرس سے متعلق امور کے لیے حکومت کے ترجمان اچمد یوریانتوں نے ایک پریس کانفرنس میں بتایا کہ ملک میں 790 کیسز کی تصدیق ہوئی ہے جبکہ 31 افراد کا علاج ہو گیا ہے۔ انڈونیشیا دنیا کا چوتھا سب سے بڑا آبادی والا ملک ہے جس کے دار الحکومت جکارتہ میں تقریباً ایک کروڑ افراد رہتے ہیں۔ ملک میں سب سے زیادہ 31 اموات جکارتہ میں ہوئی ہیں اور ویسٹ جاوا صوبہ 10 اموات کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہے۔


حکام نے وبا سے نمٹنے کے لیے لاک ڈاؤن کی پالیسی نافذ کرنے کا فیصلہ نہیں کیا ہے لیکن جن علاقوں میں کیسز پائے جا رہے ہیں، وہاں تیزی سے ٹیسٹ کیے جا رہے ہیں۔ حکومت نے وسط جکارتہ میں اپارٹمنٹ ٹاورس وِسما ایٹلیٹ کیمایورن کو کورونا متاثرین کی علاج کے لیے ایمرجنسی اسپتال میں تبدیل کر دیا ہے۔ اسی جگہ 2018 ایشیائی کھیلوں کے مقابلے میں حصہ لینے والے ایتھلیٹس کو ٹھہرایا گیا تھا۔

انڈونیشیا کے صدر جوکو وِڈوڈو نے کہا کہ اسپتال میں پیر کے روز علاج شروع ہو گیا۔ اس میں 24000 مریضوں کے علاج کی صلاحیت ہوگی۔ قبل ازیں صدر نے کہا تھا کہ جکارتہ کے شمالی حصے میں جاوا سمندرمیں سیبارو جزیرہ اور ریااو جزیرہ گروپ میں گلانگ جزیرہ کا استعمال 28 مارچ سے وائرس سے متاثرہ افراد کی نگرانی کے لیے کیا جا رہا ہے۔
First published: Mar 25, 2020 09:42 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading