ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

کوروناوائرس: دیش میں آج جنتا کرفیو، بسیں، ٹرین سب بند، راجستھان میں لاک ڈاؤن

نئی دہلی: وزیر اعظم نریندر مودی(PM Narendra Modi) کی جانب سے 'جنتا کرفیو'(Janata Curfew ) کی اپیل کے بعد اتوار کے روز ملک میں غیر معمولی لاک ڈاؤن ہوگا۔ لوگوں سے درخواست کی گئی ہے کہ وہ کورونا وائرس(CoronaVirus) کے انفیکشن کو پھیلنے سے روکنے کیلئے گھروں میں ہی رہیں۔

  • Share this:
کوروناوائرس: دیش میں آج جنتا کرفیو، بسیں، ٹرین سب بند، راجستھان میں لاک ڈاؤن
نئی دہلی: وزیر اعظم نریندر مودی(PM Narendra Modi) کی جانب سے 'جنتا کرفیو'(Janata Curfew ) کی اپیل کے بعد اتوار کے روز ملک میں غیر معمولی لاک ڈاؤن ہوگا۔ لوگوں سے درخواست کی گئی ہے کہ وہ کورونا وائرس(CoronaVirus) کے انفیکشن کو پھیلنے سے روکنے کیلئے گھروں میں ہی رہیں۔

نئی دہلی: وزیر اعظم نریندر مودی(PM Narendra Modi) کی جانب سے 'جنتا کرفیو'(Janata Curfew ) کی اپیل کے بعد اتوار کے روز ملک میں غیر معمولی لاک ڈاؤن ہوگا۔ لوگوں سے درخواست کی گئی ہے کہ وہ کورونا وائرس(CoronaVirus) کے انفیکشن کو پھیلنے سے روکنے کیلئے گھروں میں ہی رہیں جبکہ اس دن پبلک ٹرانسپورٹ سروس معطل کردی جائے گی یا اس میں کمی کر دی جئے گی اور ضروری اشیاسے جڑی دکانوں کے علاوہ ددیگر بازار اور دکانیں بند رہیں گی۔ راجستھان حکومت نے بھی کوروناوائرس پر ایک بڑا فیصلہ لیا ہے۔ ضروری خدمات کو چھوڑ کر پورا راجستھان آئندہ 31 مارچ تک لک ڈاؤن (Lock down) رہے گا۔ اس کے تحت سرکاری دفاتر ، دکانیں اور ادارے سب بند ہوجائیں گے۔ صرف اسپتال اور ضروری خدمات ہی چالو رہیں گی۔

انہوں نے کہا کہ اس لاک ڈاؤن کے تحت ریاست کے سبھی ریاستی اور نجی دفاتر، مال، دکانیں، کارخانے اور پبلک گاڑیاں بند رہیں گی ۔ انہوں نے کہا کہ اس عالمی وبا سے نمٹنے کے لئے لوگوں کا گھروں میں رہنا بہت ضروری ہے ۔ بحران کے اس دور میں حکومت ریاست کی عوام کے ساتھ کھڑی ہے ۔ عوام اس وبا کو شکست دینے کے لئے حکومت کے فیصلوں کی پوری طرح عمل کریں جس سے صورت حال قابو سے باہر نہ ہو۔

وزیر اعظم مودی نے ٹویٹ کرکے کہا کہ کورونا کے ڈر سے میرے بہت سے بھائی بہن جہاں روزی روٹی کماتے ہیں ، ان شہروں کو چھوڑ کر اپنے گاوں کی جانب لوٹ رہے ہیں ۔ بھیڑ بھاڑ میں سفر کرنے سے اس کے پھیلنے کا خطرہ بڑھتا ہے ۔ آپ جہاں جارہے ہیں ، وہاں بھی یہ لوگوں کیلئے خطرہ بنے گا ۔ آپ کے گاوں اور اہل خانہ کی مشکلات بھی بڑھائے گا ۔

راجستھان کے وزیراعلی اشوک گہلوت نے راجستھان میں 22 سے 31 مارچ تک ضروری خدمات کو چھوڑ کر پوری طرح لاک ڈاؤن کرنے کے احکامات دیئے گئے ہیں۔ وزیر اعلی گہلوت سنیچر کو وزیراعلی کی رہائش گاہ پر کورونا وائرس کے متاثروں کی صورت حال کا جائزہ لے رہے تھے۔



وزیر اعظم نے ایک دوسرے ٹویٹ میں کہا کہ میری سب سے اپیل ہے کہ آپ جس شہر میں ہیں ، برائے کرم کچھ دن وہیں رہئے ۔ اس سے ہم سب اس بیماری کو پھیلنے سے روک سکتے ہیں ۔ ریلوے اسٹیشنوں ، بس اڈوں پر بھیڑ لگا کر ہم اپنی صحت کے ساتھ کھلواڑ کررہے ہیں ۔ برائے کرم اپنی اور اپنے کنبہ کی فکر کیجئے ۔ ضروری نہ ہو تو اپنے گھر سے باہر نہ نکلئے ۔
وزیر اعلی گہلوت کے حکم پر کورونا وائرس سے پیدا ہوئی صور تحال کے مطابق روزانہ کی بنیاد پر الگ الگ محکموں سے متعلق حکومت کے ذریعہ لئے گئے اہم فیصلے کے نفاذ کے لئے ایڈیشنل چیف سکریٹری اور نقل وحمل کے سکریٹری راجیو سروپ کی صدارت میں ایک کور گروپ تشکیل دی گئی ہے۔ یہ کور گروپ لاک ڈاؤن اور دیگر پابندیوں کی وجہ سے عوام خصوصی طور سے غریب اور محروم زمروں کی ضرورتوں کے لئے کئے جانے والے فیصلوں کا جائزہ لے گی۔
وزیر اعلی گہلوت نے کہا کہ لاک ڈاؤن کے دوران اسٹریٹ وینڈر، دہاڑی مزدوروں اور ایسے ضرورت مندوں جو ا ین ایف ایس اے فہرست سے باہر ہیں کو یکم اپریل سے دو مہینے تک ضروری غذائی اشیا کے پیکٹ مہیا کرائے جائیں گے۔
First published: Mar 22, 2020 04:42 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading