ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

کوروناوائرس: لاک ڈاؤن کے پیش نظر مساجد میں نہ ہوگا شبینہ اور نہ ہی ہوگی تراویح

کوروناوائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کیلئے نافذ کئے گئے لاک ڈاؤن کے سبب اجتمائی مذہبی تقریبات کے انعقاد پر پابندی ہے اور احتیاطی تدابیر کے پیش نظر علماء کرام بھی لوگوں سے گھروں میں رہ کر ہی عبادتوں کا اہتمام کرنے کی اپیل کر رہے ہیں۔

  • Share this:
کوروناوائرس: لاک ڈاؤن کے پیش نظر مساجد میں نہ ہوگا شبینہ اور نہ ہی ہوگی تراویح
کوروناوائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کیلئے نافذ کئے گئے لاک ڈاؤن کے سبب اجتمائی مذہبی تقریبات کے انعقاد پر پابندی ہے اور احتیاطی تدابیر کے پیش نظر علماء کرام بھی لوگوں سے گھروں میں رہ کر ہی عبادتوں کا اہتمام کرنے کی اپیل کر رہے ہیں۔

رمضان کے مقدس مہینے میں روزہ دار جہاں  روزے رکھنے کے لئے سحری اور افطار کا اہتمام کرتے ہیں وہیں اس ماہ میں خصوصی عبادتوں کا بھی اہتمام کیا جاتا ہے خاص طور پر ان دنوں میں مساجد میں شبینے اور تراویح کا اہتمام کیا جاتا ہے لیکن اس ماہ کوروناوائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کیلئے نافذ کئے گئے لاک ڈاؤن کے سبب اجتمائی مذہبی تقریبات کے انعقاد پر پابندی ہے اور احتیاطی تدابیر کے پیش نظر علماء کرام بھی لوگوں سے گھروں میں رہ کر ہی عبادتوں کا اہتمام کرنے کی اپیل کر رہے ہیں۔

میرٹھ میں بھی شہر قاضی نے اس تعلق سے اعلان کرتے ہوئے لوگوں کے لئے اپیل بھی جاری کی ہے۔ اس کے ساتھ ہی شہر قاضی میرٹھ نے ضلع انتظامیہ سے گزارش کی ہے کہ سحری اور افطار کے لیے اشیاء ضروریہ کی فراہمی کو یقینی بنانے کے لئے ضلع انتظامیہ کو خصوصی پیش رفت کرنے کی ضرورت ہے۔

شہر قاضی کے مطابق ماہِ رمضان میں روزے کا اہتمام کرنا مسلمان کے لیے فرض ہے لیکن ان حالات میں سماج کا غریب اور پسماندہ طبقہ مفلوج ہو گیا ہے ایسے میں لوگوں کی ضرورتوں کا خاص خیال رکھنا چاہیے۔ شہر قاضی نے مسلم سماجی اور ملی ذمہ داران کے علاوہ سماج کے صاحب حیثیت افراد سے بھی ضرورتمند افراد کی امداد کرنے کی گزارش کی ہے ۔

شہر قاضی نے اپیل کرتے ہوئے کہا ہے کہ لوگوں کو چاہیے کہ وہ فطرہ اور زکوٰۃ وقت سے پہلے ادا کرنے کی کوشش کریں تاکہ حاجتمند کی کفالت کی جا سکے۔ شہر قاضی کے مطابق کورونا وائرس سے انفیکشن کے خطرے کے پیش نظر حکومت کو لاک ڈاؤن کا سخت فیصلہ کرنا پڑا ہے۔ ان حالات میں مذہبی اجتماعی تقریبات پر بھی پابندی  عائد ہے ایسے میں ضروری ہی اجتماعیت سے گریز کیا جائے اور گھروں میں رہ کر  تراویح بھی الم ترا سے ادا کی جائے۔

First published: Apr 17, 2020 07:08 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading