ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

ہندوستان میں کورونا وائرس کا بڑھتا قہر، اب تک 160 سے زائد معاملوں کی ہوئی تصدیق

ملک میں کورونا وائرس کے مریضوں کی تعداد میں دن بہ دن اضافہ ہورہا ہے۔ اب تک ایک سو ساٹھ سے زیادہ معاملوں کی تصدیق ہوچکی ہے۔ تلنگانہ میں سات نئے معاملے سامنے آئے ہیں۔ یہ ساتوں انڈونیشیائی شہری ہیں۔ ان سات نئے معاملوں کے ساتھ تلنگانہ میں کورونا وائرس متاثرین کی تعداد بڑھ کر تیرہ ہوگئی ہے۔ ادھر ملک کی مختلف ریاستوں میں بھی کوروناوائرس کے نئے معاملوں کی تصدیق ہوئی ہے۔ مہاراشٹر میں کوروناوائرس متاثرین کی تعداد بڑ ھ 44 تک پہنچ گئی ہے۔ کیرل ، کرناٹک ، دہلی اور اترپردیش سے بھی نئے معاملے روشنی میں آرہے ہیں۔

  • Share this:

ملک میں کورونا وائرس کے مریضوں کی تعداد میں دن بہ دن اضافہ ہورہا ہے۔ اب تک ایک سو ساٹھ سے زیادہ معاملوں کی تصدیق ہوچکی ہے۔ تلنگانہ میں سات نئے معاملے سامنے آئے ہیں۔ یہ ساتوں انڈونیشیائی شہری ہیں۔ ان سات نئے معاملوں کے ساتھ تلنگانہ میں کورونا وائرس متاثرین کی تعداد بڑھ کر تیرہ ہوگئی ہے۔ ادھر ملک کی مختلف ریاستوں میں بھی کوروناوائرس کے نئے معاملوں کی تصدیق ہوئی ہے۔ مہاراشٹر میں کوروناوائرس متاثرین کی تعداد بڑ ھ 44 تک پہنچ گئی ہے۔ کیرل ، کرناٹک ، دہلی اور اترپردیش سے بھی نئے معاملے روشنی میں آرہے ہیں۔

ملک میں کورونا وائرس کا دائرہ وسیع ہوتا جارہا ہے۔ اب تک ایک سو 160سے زیادہ معاملوں کی تصدیق ہوچکی ہے۔ مغربی بنگال میں کورونا وائر س کا پہلا معاملہ سامنے آیا ہے۔ جبکہ لیہہ میں تعینات ایک فوجی جوان بھی کورونا وائرس سے متاثر پایا گیا ہے۔ فوج کے اسپتال میں وائرس سے متاثر فوجی کا علاج چل رہا ہے۔ ذرائع کے مطابق متاثرہ فوجی جوان کے والد گزشتہ دنوں ہی ایران سے لوٹے تھے۔ ادھر ملک کی مختلف ریاستوں میں بھی کوروناوائرس کے نئے معاملوں کی تصدیق ہوئی ہے۔ مہاراشٹر میں کوروناوائرس متاثرین کی تعداد بڑ ھ کر بیالیس تک پہنچ گئی ہے۔ کیرل میں چوبیس، کرناٹک میں گیارہ، دہلی میں آٹھ،اترپردیش میں چودہ۔ مرکز کے زیر انتظام لداخ میں چھ معاملوں کی تصدیق ہوئی ہے۔دوسری طرف کوروناوائرس کےسبب چھہتر ٹرینوں کومنسوخ کیاگیاہے۔

اس وقت پورا ملک کورونا وائرس سے خوف زدہ ہے۔ اسی بیچ وزیراعظم نریندر مودی آج رات آٹھ بجے قوم سے خطاب کریں گے۔ پی ایم مودی کورونا وائرس پر اب تک کی صورتحال اور اس سے نپٹنے کے لیے اٹھائے گئے اقدامات پر ملک سے خطاب کرین گے۔ اس سے قبل مودی نے ایک اعلی سطحی ایک میٹنگ کی اور کورونا وائرس سے ملک کو کس طرح محفوظ رکھا جائے اس پر بات چیت کی گئی۔

جموں خطے میں کورونا وائرس کی روک تھام کے لیے انتظامیہ نے بڑا فیصلہ لیا ہے۔۔تمام مذہبی عبادت گاہوں اور مقامات پر لوگوں کے آنے جانے پر پابندی عائد کردی گئی ہے۔۔مندوروں ، مساجد ، گردواروں ، چرچوں میں عبادت گذار ، عقیدت مند اور زائرین جمع نہیں ہوسکیں گے ۔۔نیشنل ڈیزاسٹر مینجمنٹ ایکٹ کے تحت اس طرح کی پابندی عائد کی گئی ہے۔۔ادھمپور میں پبلک ٹرانسپورٹ پر پابندی لگا دی گئی ہے۔۔ کسی بھی گاڑی میں مسافروں کو لے جانے پر پابندی رہے گی۔

کشمیر خطے میں کورونا وائرس کا پہلا کیس سامنے آیا ہے۔ متاثرہ شخص سولہ مارچ کو غیر ملی دورے سے واپس لوٹا ہے۔ آج صبح سرینگر کے کچھ علاقوں میں پابندیاں عائد کردی گئی ہیں ۔۔وباء کے پھیلاؤ کو روکنے کے مقصد سے بھیڑ جمع کرنے پر سخت پابندی رہے گی ۔شہر میں عوامی ٹرانسپورٹ پر بھی پابندی رہے گی۔ اسی بیچ انتظامیہ نے کشمیر یونیورسٹی اور جموں کشمیر بورڈ کے تمام امتحان ملتوک کردیے ہیں ۔۔یاد رہے کہ احتیاطی اقدام کے طور پر جموں کشمیر میں سیاحوں کی آمد پر پابندی لگا دی گئی ہے ۔۔کورونا وائرس کے حوالے سے افواہیں پھیلانے پر سَخت کاروائی کا اعلان کیا گیا ۔۔کشتواڑ میں پولیس نے افواہیں پھیلانے کے سلسلےمیں کچھ ناجوانوں پر کاروائی کی۔ سوشل میڈیا پر متاثرہ اور مشتبہ مریضوں کے حوالے سے کوئی بھی جانکاری دینے سے گریز کرنے کی ہدایت دی گئی ہے۔دوسری جانب لداخ اور لیہہ میں کئی لوگوں کو طبی نگہداشت میں رکھا گیا ہے۔۔جموں کشمیر میں باہر سے آنے والوں کی طبی نگرانی کا عمل جاری ہے ۔

کشمیر میں کورونا وائرس کے پیش نظر انتظامیہ کی جانب سے تمام تر احتیاطی تدابیر کی جارہی ہیں ۔آج سرینگر کے کچھ علاقوں میں پابندیاں عائد کردی گئی ہیں۔ وباء کے پھیلاؤ کو روکنے کے مقصد سے بھیڑ جمع کرنے پر سخت پابندی رہے گی۔ شہر میں عوامی ٹرانسپورٹ پر بھی پابندی رہے گی
جموں خطے میں کورونا وائرس کی روک تھام کے لیے انتظامیہ نے بڑا فیصلہ لیا ہے۔ تمام مذہبی عبادت گاہوں اور مقامات پر لوگوں کے آنے جانے پر پابندی عائد کردی گئی ہے۔ مندوروں ، مساجد ، گردواروں ، چرچوں میں عبادت گذار ، عقیدت مند اور زائرین جمع نہیں ہوسکیں گے۔ نیشنل ڈیزاسٹر مینجمنٹ ایکٹ کے تحت اس طرح کی پابندی عائد کی گئی ہے۔۔ادھم پور میں پبلک ٹرانسپورٹ پر پابندی لگا دی گئی ہے۔۔ کسی بھی گاڑی میں مسافروں کو لے جانے پر پابندی رہے گی۔
کورونا وائرس کے اثرات کا دائرہ بڑھتا جارہا ہے۔ تعلیمی سرگرمیاں معطل ہیں۔ سی بی ایس ای کے بورڈ امتحان بعد آئی سی ایس ای نے بھی دسویں اور بارہویں کے امتحانات ملتوی کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔آئی ایس سی کے امتحانات انیس مارچ سے اکتیس مارچ کے درمیان ہونے والے تھے۔امتحانات کی نئی تاریخوں کا اعلان کونسل صورتحال کا جائزہ لینے کے بعد کرے گی۔
First published: Mar 19, 2020 01:23 PM IST