உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Omicron Variant : جنوبی افریقہ سے ہندوستان لوٹے دو افراد کورونا پازیٹیو ، نئے ویریئنٹ سے مچی افراتفری ، وزیر اعظم کی احتیاط برتنے کی ہدایت

    جنوبی افریقہ میں پائے گئے کورونا وائرس کے نئے ویریئنٹ اومیکران کا خطرہ ہندوستان میں تیزی سے بڑھ رہا ہے ۔ مرکزی سرکار اس کیلئے پہلے ہی الرٹ جاری کرچکی ہے ۔

    جنوبی افریقہ میں پائے گئے کورونا وائرس کے نئے ویریئنٹ اومیکران کا خطرہ ہندوستان میں تیزی سے بڑھ رہا ہے ۔ مرکزی سرکار اس کیلئے پہلے ہی الرٹ جاری کرچکی ہے ۔

    جنوبی افریقہ میں پائے گئے کورونا وائرس کے نئے ویریئنٹ اومیکران کا خطرہ ہندوستان میں تیزی سے بڑھ رہا ہے ۔ مرکزی سرکار اس کیلئے پہلے ہی الرٹ جاری کرچکی ہے ۔

    • Share this:
      نئی دہلی : جنوبی افریقہ میں پائے گئے کورونا وائرس کے نئے ویریئنٹ اومیکران کا خطرہ ہندوستان میں تیزی سے بڑھ رہا ہے ۔ مرکزی سرکار اس کیلئے پہلے ہی الرٹ جاری کرچکی ہے ۔ اسی درمیان جنوبی افریقہ سے بنگلورو لوٹے دو لوگ کورونا پازیٹیو پائے گئے ہیں ۔ ائیر پورٹ پر دونوں افراد کے کورونا پازیٹیو پائے جانے کے بعد بنگلورو میں ہی انہیں آئیسولیٹ کیا گیا ہے ۔ حالانکہ اب تک اس بات کی تصدیق نہیں ہوپائی ہے کہ ان دونوں لوگوں میں کورونا کا نیا ویریئنٹ پایا گیا ہے یا نہیں ، فی الحال نمونوں کو جینوم سیکسویسنگ کیلئے بھیج دیا گیا ہے ۔

      ریاست کے وزیر آر اشوک نے بتایا کہ جنوبی افریقہ سے ایک ہزار سے زیادہ لوگ لوٹے ہیں ۔ سبھی کا ٹیسٹ کیا گیا ہے ، جو لوگ پہلے ہی بنگلورو یا کہیں اور آچکے ہیں ، ان کا دس دن بعد ایک اور ٹیسٹ کیا جائے گا ۔ ادھر تمل ناڈو  نے ریاست کے انٹرنیشنل ایئرپورٹ اسکریننگ کی نگرانی کیلئے محکمہ صحت کے چار افسران تعینات کئے ہیں ۔ یہ افسران ، چنئی ، کوئمبٹور ، مدورے اور تروچراپللی ایئر پورٹ پر رہیں گے ۔

      ادھر وزیر اعظم نریندر مودی نے ہفتے کو کورونا کی اس ویریئنٹ کی وجہ سے عالمی سطح پر پھیلے خوف کے درمیان اس مہلک وائرس کی موجودہ صورتحال اور اس سے نمٹنے کے بارے میں ایک اعلیٰ سطحی میٹنگ کی صدارت کی۔ وزیر اعظم مودی نے حکام کو ہدایت دی کہ وہ ہندوستان میں بین الاقوامی پروازوں کو بحال کرنے کے منصوبے کا جائزہ لیں اور اس سمت میں احتیاط سے آگے بڑھیں۔ سرکاری بیان کے مطابق اس میٹنگ میں حکام نے وزیر اعظم مودی کو کووڈ-19 کی جنوبی افریقی ویریئنٹ اومیکرون کے بارے میں آگاہ کیا۔

      کئی ممالک پروازوں پر پابندی عائد

      بیان میں کہا گیا،’وزیراعظم نے حکام کو ہدایت کی کہ وہ ابھرتے ہوئے شواہد (کووڈ-19 کی نئی شکل) کے پیش نظر بین الاقوامی سفر پر پابندیوں میں نرمی کے منصوبے پر نظرثانی کریں‘۔ میٹنگ میں وزیر اعظم نے کہا ہے کہ ’خطرے میں پڑنے والے ممالک‘ سے آنے والے ہر مسافر کا اعلان کردہ قوانین اور ہدایات کے مطابق سخت طبی معائنہ کیا جائے۔

      خیال رہے کہ جنوبی افریقہ میں پائے جانے والے کورونا کی ایک نئی قسم اومیکرون دنیا کے دیگر ممالک میں بہت تیزی سے پھیل رہی ہے۔ ہانگ کانگ اور بوتسوانا کے بعد جمعہ کو اسرائیل اور بیلجیئم میں اس ویریئنٹ سے متاثرہ افراد پائے گئے ہیں۔ اس کے بعد برطانیہ، آسٹریا، کینیڈا، فرانس، جرمنی، اٹلی اور ہالینڈ نے افریقی ممالک سے آنے والی پروازوں پر پابندی لگا دی ۔ اب امریکہ، سعودی عرب، سری لنکا، برازیل سمیت کئی دیگر ممالک نے بھی افریقی ممالک سے پروازوں پر پابندی لگا دی ہے۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: