ہوم » نیوز » وطن نامہ

ملک میں تیسری لہر کی آہٹ، دو ریاستوں میں 90ہزار بچے کورونا سے متاثر، بڑھی فکر

تیسری لہر کو لیکر پہلے ہی اندیشہ ظاہر کیا گیا ہے کہ یہ بچوں کیلئے زیادہ خطرناک ثابت ہو سکتی ہے۔ کورونا کے اعداد و شمار پر نظر دوڑائیں تو ریاست میں ہی 90 ہزار سے زیادہ بچے کورونا کی زد میں آچکے ہیں۔

  • Share this:
ملک میں تیسری لہر کی آہٹ، دو ریاستوں میں 90ہزار بچے کورونا سے متاثر، بڑھی فکر
تیسری لہر کو لیکر پہلے ہی اندیشہ ظاہر کیا گیا ہے کہ یہ بچوں کیلئے زیادہ خطرناک ثابت ہو سکتی ہے۔ کورونا کے اعداد و شمار پر نظر دوڑائیں تو ریاست میں ہی 90 ہزار سے زیادہ بچے کورونا کی زد میں آچکے ہیں۔

ملک میں کورونا وائرس کی دوسری لہر کا اثر ابھی پوری طرح سے تھما بھی نہیں ہے کہ تیسری لہر  (Corona Third Wave) کی آہٹ نے پورے ملک کو ہلاکر رکھ دیا ہے۔ تیسری لہر کو لیکر پہلے ہی اندیشہ ظاہر کیا گیا ہے کہ یہ بچوں کیلئے زیادہ خطرناک ثابت ہو سکتی ہے۔ کورونا کے اعداد و شمار پر نظر دوڑائیں تو ریاست میں ہی 90 ہزار سے زیادہ بچے کورونا کی زد میں آچکے ہیں۔ ایسے میں اندیشہ لگایا جا رہا ہے کہ اگر دو ریاستوں کا یہ حال ہے تو ہورے ملک کا کیا حال ہوگا۔ ایسے میں کہنا بھی غلط نہیں ہوگا کہ ملک میں تیسری لہر نے دستک دے دی ہے۔


میڈیا رپورٹس کے مطابق ، اگر ہم کرونا کے اعداد و شمار پر نگاہ ڈالیں ، تو ہر بار مہاراشٹرا کی طرح ، تیسری لہر خطرناک ہوتی جارہی ہے۔ مہاراشٹر کے احمد نگر میں صرف مئی کے مہینے میں 9 ہزار بچے کورونا سے متاثر ہوئے ہیں۔ بچوں میں کورونا کے بڑھتے ہوئے واقعات نے اب محکمہ صحت کے حواس کو بھی اڑا دیا ہے۔ بچوں میں کورونا کے بڑھتے ہوئے واقعات کے پیش نظر ، اب سے تیاریاں تیز کردی گئیں ہیں۔ اسی دوران ، تلنگانہ میں مارچ اور مئی کے درمیان 37،332 بچے کورونا کی زد میں آچکے ہیں۔


ملک میں اب کورونا سے ہونے والی اموات میں بھی کمی درج کی جا رہی ہے۔۔۔پچھلے چوبیس گھنٹوں میں کورونا سے دو ہزار سات سو تیرہ لوگوں کی موت ہوئی ہے۔پچھلے ایک مہینے میں یہ سب سے کم اموات ہیں۔۔۔اعداد و شمار کے مطابق ملک میں کورونا کے ایک لاکھ بتیس ہزار تین سو چونسٹھ نئے معاملوں کی تصدیق ہوئی ہے۔۔جبکہ اسی عرصے میں کورونا سے دو لاکھ سات ہزار اکہتر افراد صحتیاب ہوئے ہیں۔




ملک میں کورونا کے سولہ لاکھ پینتیس ہزار نو سو تریپن ایکٹو معاملے ہیں۔۔حکومت کی طرف کی جاری کردہ کورونا گائڈ لائنس پر سختی کے ساتھ عمل کرتے ہوئے ہم کورونا کو مات دینے میں ضرور کامیابی حاصل کریں گے۔ کورونا سے لڑائی میں ٹیکہ کاری کے عمل میں تیزی اختیار کی جا رہی ہے۔ ابتک بائس کروڑ اکتالیس لاکھ سے زائد لوگوں کو ویکسین لگ چکی ہے۔

 
Published by: Sana Naeem
First published: Jun 04, 2021 02:34 PM IST