ہوم » نیوز » وطن نامہ

200 فیصد محفوظ ہے کوویکسین ، کافی اعداد و شمار موجود : بھارت بایوٹیک

بھارت بایوٹیک کے ایم ڈی کرشنا ایلا نے کہا کہ کوویکسین نے 10 فیصد سے بھی کم ایڈورس ری ایکشن دئے ہیں جبکہ دیگر ویکسین پروجیکٹ نے 60 سے 70 فیصد تک ایڈورس ری ایکشن دئے ۔

  • Share this:
200 فیصد محفوظ ہے کوویکسین ، کافی اعداد و شمار موجود : بھارت بایوٹیک
200 فیصد محفوظ ہے کوویکسین ، کافی اعداد و شمار موجود : بھارت بایوٹیک

بھارت بایوٹیک نے پیر کو کہا کہ وہ چار ویکسین پروڈکشن یونٹ قائم کررہی ہے ، جن کی مشترکہ پروڈکشن صلاحیت 70 کروڑ ڈوز سالانہ ہوگی ۔ بھارت بایوٹیک کے کورونا ٹیکے کوویکسین کو ڈرگس ریگولیٹری کے ذریعہ ایمرجنسی استعمال کی اجازت مل چکی ہے ۔


بھارت بایوٹیک کے ایم ڈی کرشنا ایلا نے کہا کہ کوویکسین نے 10 فیصد سے بھی کم ایڈورس ری ایکشن دئے ہیں جبکہ دیگر ویکسین پروجیکٹ نے 60 سے 70 فیصد تک ایڈورس ری ایکشن دئے ۔ ایسٹریجینیکا ایسے ری ایکشن کو دبانے کیلئے فورجی پیراسیٹامال دے رہی تھی ۔ ہم نے اپنے کسی بھی رضاکار کو پیراسیٹامال نہیں دیا ۔ میں یقین دلاسکتا ہوں کہ ہماری ویکسین 200 فیصد محفوظ ہے ۔


کرشنا ایلا نے اس الزام سے انکار کیا کہ شہر میں واقع ویکسین میکر کے پاس کوویکسین کے اعداد و شمار کی کمی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ پہلے ہی کافی اعداد و شمار سامنے آچکے ہیں اور یہ انٹرنیٹ پر دسیتاب ہیں ۔


انہوں نے کہا کہ کوویکسین کا موجودہ وقت میں 24 ہزار رضاکاروں پر تیسرے مرحلہ کا کلینیکل ٹرائل کیا جارہا ہے ۔ انہوں نے اعداد و شمار کی دستیابی سے متعلق الزامات پر کہا کہ مجھے لگتا ہے کہ ہم واحد کمپنی ہیں ، جس کے بارے میں میں واضح طور پر کہہ سکتا ہوں کہ اس کے پاس جامع ریسرچ تجربہ ہے ۔ کئی لوگ کہتے ہیں کہ میں اپنے اعداد و شمار کو لے کر ٹرانسپیرنٹ نہیں ہوں ، مجھے لگتا ہے کہ انٹرنیٹ پر پڑھنے کے ساتھ ہی ہمارے آرٹیکلز کو دیکھنے کیلئے صبر ہونا چاہئے ۔

انہوں نے کہا کہ ہندوستانی کمپنیوں کو کمتر مان کر نشانہ بنایا جارہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ان کی کمپنی کا کام فائزر سے کم نہیں ہے ، جس نے حال ہی میں کورونا وائرس کیلئے ایک ٹیکہ بنایا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ہم چار یونٹس قائم کررہے ہیں ۔ ہم حیدرآباد میں تقریبا 20 کروڑ ڈوز ( سالانہ) اور دیگر شہروں میں 50 کروڑ ڈوز کے پروڈکشن کا منصوبہ بنارہے ہیں ۔ 2021 تک ہمارے پاس 760 کروڑ ڈوز کی صلاحیت ہوگی ۔ جیسا کہ ہم کہتے ہیں کہ ہمارے پاس دو کروڑ ڈوز ہیں ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Jan 04, 2021 09:55 PM IST