உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ویتنام میں 18 سال سے کم عمر کے بچوں کو دی جائے گی Covaxine! منصوبہ ہے تیار

    ویتنام میں 18 سال سے کم عمر کے بچوں کو دی جائے گی Covaxine!

    ویتنام میں 18 سال سے کم عمر کے بچوں کو دی جائے گی Covaxine!

    اسی درمیان بھارت بائیو ٹیک (Bharat Biotech) کے صدر اور منیجنگ ڈائریکٹر ڈاکٹر کرشنا ایلا نے جوائنٹ منیجنگ ڈائریکٹر، سوچیترا ایلا کے ساتھ نئی دہلی میں ویتنام حکومت کے ڈپٹی ہیلتھ منسٹر پروفیسر ڈاکٹر ٹران وان تھووان سے ملاقات کی۔ ذرائع کے مطابق، یہ ملاقات کو وویکسین کو ویتنام میں 18 سال سے کم عمر کے بچوں کو کوور کرنے کی سمت سے متعلق تھی۔

    • Share this:
      نئی دہلی: کورونا (Corona) کے بڑھتے کیسیز کے درمیان بچوں کی ویکسین (Vaccine) کو لے کر بحث تیز ہوگئی ہے۔ ہندوستان (India) ہی نہیں دنیا بھر کے ملکوں میں بچوں کی کورونا ویکسین (Corona Vaccine) کو لے کر بات کی جارہی ہے۔ اسی درمیان بھارت بائیو ٹیک (Bharat Biotech) کے صدر اور منیجنگ ڈائریکٹر ڈاکٹر کرشنا ایلا نے جوائنٹ منیجنگ ڈائریکٹر، سوچیترا ایلا کے ساتھ نئی دہلی میں ویتنام حکومت کے ڈپٹی ہیلتھ منسٹر پروفیسر ڈاکٹر ٹران وان تھووان سے ملاقات کی۔ ذرائع کے مطابق، یہ ملاقات کو وویکسین کو ویتنام میں 18 سال سے کم عمر کے بچوں کو کوور کرنے کی سمت سے متعلق تھی۔

      دونوں ملکوں کے درمیان ہوئی اس ملاقات کے دوران ویتنام میں بھارت بائیوٹیک کے Covid-19 نیزل ویکسین کے ٹسٹ کرنے کے امکانات پر بھی بات چیت کی گئی۔ ذرائع نے بتایا کہ ویتنام کے نائب وزیر صحت نے بھی بھارت بائیوٹیک گروپ کی کمپنی کی جانب سے جانوروں کی ویکسین کی تحقیق میں پیشرفت کو سمجھنے میں گہری دلچسپی بتائی تھی۔

      بتادیں کہ سیرم انسٹی ٹیوٹ آف انڈیا کی اگلے چھ مہینے میں بچوں کے لئے کوویڈ-19 کا ٹیکہ لانے کا منصوبہ ہے۔ کمپنی کے چیف ایگزیکٹیو آفیسر (CEO)آدار پونا والا نے منگل کو یہ جانکاری دی۔ انہوں نے کہا کہ یہ ظاہ رکرنے کے لئے دستیاب اعدادوشمار ہیں کہ ٹیکہ کام کرے گا اور بچوں کو وبائی امراض سے بچائے گا۔ فی الحال کووی شیلڈ کو اور کوویڈ کے دیگر ٹیکوں کو 18 سال سے زیادہ عمر کے لوگوں کے لئے منظوری دی گئی ہے۔

      ’بچوں میں زیادہ گمبھیر مرض نہیں دیکھا ہے‘
      پوناوالا نے کہا، ہم نے بچوں میں زیادہ گمبھیر مرض نہیں دیکھا ہے۔ خوش قسمتی سے بچوں کے لئے دہشت نہیں ہے۔ حالانکہ، ہم بچوں کے لئے چھ مہینے میں ایک ٹیکہ لے کر آئیں گے، امید ہے کہ یہ تین سال اور اُس سے زیادہ عمر کے بچوں کے لئے ہوگا۔


      قومی، بین الاقوامی اور جموں وکشمیر کی تازہ ترین خبروں کےعلاوہ تعلیم و روزگار اور بزنس کی خبروں کے لیے نیوز18 اردو کو ٹویٹر اور فیس بک پر فالو کریں ۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: