ہوم » نیوز » عالمی منظر

ایران اور نیویارک کے بعد برازیل سے آئیں اجتماعی قبروں کی تصویریں، کورونا سے ہوئیں 2700 اموات

برازیل دنیا میں کورونا انفیکشن کے نئے ہاٹ اسپاٹ کے طور پر سامنے آیا ہے۔ یہاں ابھی تک انفیکشن کے قریب 43،079 کیس سامنے آ چکے ہیں جبکہ تقریبا 2700 لوگ اس انفیکشن کا شکار ہو کر اپنی جانیں گنوا چکے ہیں۔

  • Share this:
ایران اور نیویارک کے بعد برازیل سے آئیں اجتماعی قبروں کی تصویریں، کورونا سے ہوئیں 2700 اموات
ایران اور نیویارک کے بعد برازیل سے آئیں اجتماعی قبروں کی تصویریں، کورونا سے ہوئیں 2700 اموات

برازیلیا۔ کورونا (Coronavirus)  انفیکشن سے ہوئیں ہزاروں اموات کے بعد ایران اور امریکہ کے نیویارک میں ہلاک شدگان کو دفنانے کے لئے اجتماعی قبروں کا استعمال کیا گیا تھا۔ ایسی اجتماعی قبروں کی تصویریں سوشل میڈیا پر خوب وائرل ہوئی تھیں۔ اب برازیل  (Brazil)  کے شہر مانوس سے ایک ایسی ہی اجتماعی قبر کی تصویر سامنے آئی ہے۔ یہاں شہر کے سب سے بڑے قبرستان میں ایک ساتھ سینکڑوں لوگوں کو ایک ساتھ دفنایا جا رہا ہے۔


سی این این کے مطابق، ہر دن 100  سے زیادہ لوگوں کی موت کورونا سے ہو رہی ہے ایسے میں اجتماعی قبروں کا استعمال کرنا آخری متبادل بچا ہے۔ مانوس کے مئیر آرتھر ورجیلیو نیٹو نے بتایا کہ آغاز میں ہر دن ہو رہیں موتوں کی تعداد 30 کے آس پاس تھی لیکن اب یہ بڑھ کر 100 سے بھی زیادہ ہو گئی ہے۔ ایسے میں ہمارے پاس کوئی اور متبادل نہیں بچا ہے۔ شہر کا محکمہ جو قبرستان کی دیکھ بھال کرتا ہے، اب نہ اس کے پاس کافی لوگ ہیں اور نہ ہی جگہ بچی ہے کہ سب کی الگ سے آخری رسوم ادا کی جا سکے۔


یہاں شہر کے سب سے بڑے قبرستان میں ایک ساتھ سینکڑوں لوگوں کو ایک ساتھ دفنایا جا رہا ہے۔


بتا دیں کہ کورونا انفیکشن سے مارے گئے شخص کی لاش سے بھی اس کے پھیلنے کا خطرہ ہے ایسے میں ہلاک شدگان کی لاشوں کی ایک ساتھ تدفین زیادہ محفوظ مانی جا رہی ہے۔ نیٹو نے بتایا کہ حالانکہ اس بات کا خیال رکھا جا رہا ہے کہ اجتماعی قبر میں پوری عزت کے ساتھ لوگوں کی تدفین کی جائے جس سے بعد میں لوگ ان قبروں پر آکر دعا کر سکیں۔ سی این این برازیل سے بات چیت میں نیٹو نے کہا کہ شہر کے اسپتال کورونا مریضوں سے بھرے ہوئے ہیں اور اب ہمارے پاس نہ تو علاج کرنے کے لئے جگہ ہے اور نہ ہی طبی عملہ مسلسل کام کرتے رہنے کی حالت میں ہے۔

برازیل دنیا میں کورونا انفیکشن کے نئے ہاٹ اسپاٹ کے طور پر سامنے آیا ہے۔ یہاں ابھی تک انفیکشن کے قریب 43،079 کیس سامنے آ چکے ہیں جبکہ تقریبا 2700 لوگ اس انفیکشن کا شکار ہو کر اپنی جانیں گنوا چکے ہیں۔
Published by: Nadeem Ahmad
First published: Apr 22, 2020 02:42 PM IST