ہوم » نیوز » وطن نامہ

کورونا وائرس کا قہر : بیڈ کی کمی پوری کرنے کیلئے عارضی طور پر دہلی میں کووڈ اسپتال میں تبدیل ہوں گے یہ اسٹیڈیم

ایل جی انل بیجل نے میٹنگ میں مشورہ دیا کہ ممبئی ، چنئی اور بنگلور وغیرہ سے سبق لے کر دہلی میں کورونا وائرس سے نمٹنے کے لئے بہتر انتظامات کئے جانے کی ضرورت ہے ۔

  • UNI
  • Last Updated: Jun 09, 2020 11:29 PM IST
  • Share this:
کورونا وائرس کا قہر : بیڈ کی کمی پوری کرنے کیلئے عارضی طور پر دہلی میں کووڈ اسپتال میں تبدیل ہوں گے یہ اسٹیڈیم
کورونا وائرس کا قہر : بیڈ کی کمی پوری کرنے کیلئے عارضی طور پر دہلی میں کووڈ اسپتال میں تبدیل ہوں گے یہ اسٹیڈیم

دہلی میں کورونا وائرس کے لگاتار بڑھ رہے معاملات کے پیش نظر ضرورت پڑنے پر پرگتی میدان ، تال کٹورا اسٹیڈیم ، تیاگ راج ، اندراگاندھی انڈوراسٹیڈیم ، جواہرلال نہرو اسٹیڈیم اور دھیان چند نیشنل اسٹیڈیم وغیرہ کو میک شفٹ اسپتال کی شکل میں استعمال کیا جائے گا ۔ لفٹیننٹ گورنر انل بیجل کی صدارت میں منگل کو اسٹیٹ ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی کی میٹنگ میں دہلی میں کورونا انفکشن کے تعلق سے اعلیٰ سطحی میٹنگ ہوئی ۔


مسٹر بیجل نے میٹنگ میں مشورہ دیا کہ ممبئی ، چنئی اور بنگلور وغیرہ سے سبق لے کر کورونا انتظام کے لئے دہلی میں وائرس سے نمٹنے کے لئے بہتر انتظام کئے جانے کی ضرورت ہے ۔ ڈویژنل کمشنر کی قیادت میں ایک کمیٹی تشکیل دی گئی ، جو بوقت ضرورت اضافی بیڈس کے امکانات کا پتہ لگائے گی ۔




میٹنگ کے بعد نائب وزیر اعلیٰ منیش سسودیا نے کہا کہ دہلی میں 31 جولائی تک 5.5 لاکھ کورونا کیسز ہوسکتے ہیں ، جس کے لئے 80 ہزار بیڈ کی ضرورت پڑے گی ۔ دہلی کورونا کے معاملے میں ملک میں تیسرے مقام پر ہے ۔ یہاں فی الحال ایک ہزار یا اس سے زیادہ معاملات روزانہ سامنے آرہے ہیں ۔

مسلسل بڑھتے ہوئے معاملات کے پیش نظر ریاستی حکومت نے فیصلہ کیا تھا کہ سرکاری اسپتالوں میں صرف دہلی والوں کا علاج ہوگا ، لیکن ان کا یہ فیصلہ ایل جی انل بیجل نے مسترد کردیا۔ نائب وزیر اعلی سسودیا نے کہا کہ مرکزی حکومت مانتی ہے کہ فی الحال دہلی میں وائرس کا کمیونٹی پھیلاو نہیں ہورہا ہے ، جبکہ دہلی حکومت کا خیال ہے کہ یہ شروع ہوچکا ہے ۔
First published: Jun 09, 2020 11:29 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading