உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    دہلی میں 97 فیصد لوگوں میں کووڈ اینٹی باڈیز پائی گئیں، وزیر صحت ستیندر جین نے جاری کئے اعداد و شمار

    دہلی کے ہر ضلع میں سیرو پازیٹیوٹی کی شرح 93 فیصد سے زیادہ پائی گئی ہے۔ جنوبی مغربی دہلی ضلع میں سب سے کم مثبت 93.3% ہے جبکہ مشرقی دہلی ضلع میں 99.8% مثبت اینٹی باڈیز ہیں۔سروے کی ایک خاص بات یہ ہے ہے اس سروے میں سیرو پازیٹو خواتین کی تعداد مردوں سے زیادہ ہے۔

    دہلی کے ہر ضلع میں سیرو پازیٹیوٹی کی شرح 93 فیصد سے زیادہ پائی گئی ہے۔ جنوبی مغربی دہلی ضلع میں سب سے کم مثبت 93.3% ہے جبکہ مشرقی دہلی ضلع میں 99.8% مثبت اینٹی باڈیز ہیں۔سروے کی ایک خاص بات یہ ہے ہے اس سروے میں سیرو پازیٹو خواتین کی تعداد مردوں سے زیادہ ہے۔

    دہلی کے ہر ضلع میں سیرو پازیٹیوٹی کی شرح 93 فیصد سے زیادہ پائی گئی ہے۔ جنوبی مغربی دہلی ضلع میں سب سے کم مثبت 93.3% ہے جبکہ مشرقی دہلی ضلع میں 99.8% مثبت اینٹی باڈیز ہیں۔سروے کی ایک خاص بات یہ ہے ہے اس سروے میں سیرو پازیٹو خواتین کی تعداد مردوں سے زیادہ ہے۔

    • Share this:
    دہلی کے وزیر صحت ستیندر جین نے راجدھانی میں ہوئے چھٹے سیرو سروے کو لے کر جو اعداد و شمار جاری کیے ہیں جس سے ایسا محسوس ہوتا ہے فی الحال کورونا وائرس کی تیسری لہر راجدھانی میں آنے کی ابھی جلد امید نہیں ہے اور اس سے بھی آگے بڑھ کر راجدھانی کافی حد تک ہرڈ امیونٹی کی جانب بڑھ چکی ہے ۔ ستیندر جین کے ذریعے جاری کیے گئے اعداد و شمار کے مطابق دہلی میں 97 فیصد لوگوں میں اینٹی کورونا باڈیز پائی گئیں۔

    دہلی کے ہر ضلع میں سیرو پازیٹیوٹی کی شرح 93 فیصد سے زیادہ پائی گئی ہے۔ جنوبی مغربی دہلی ضلع میں سب سے کم مثبت 93.3% ہے جبکہ مشرقی دہلی ضلع میں 99.8% مثبت اینٹی باڈیز ہیں۔ سروے کی ایک خاص بات یہ ہے ہے اس سروے میں سیرو پازیٹو خواتین کی تعداد مردوں سے زیادہ ہے۔ عمر کے لحاظ سے 18 سال سے کم عمر کے 88% بچوں میں اینٹی باڈیز پائی گئیں۔ 18 سال سے زیادہ عمر کے 97-98 % لوگوں میں اینٹی باڈیز پائی گئیں۔ تاہم ایسے لوگ جنہوں نے ویکسینیشن نہیں کرایا وہ گھر سے نیشن کرنے والے لوگوں سے اینٹی باڈیز میں پیچھے ہیں اینٹی باڈیز 90% لوگوں میں پائی گئیں جن میں ویکسین نہیں لگائی گئی تھی اور 97% سے زیادہ لوگوں میں جنہیں ویکسین نہیں لگائی گئی تھی۔ اینٹی باڈیز ملی ہیں۔

    حال ہیں دہلی کے وزیر صحت نے اس بات سے فی الحال دوری بنا کر رکھی ہے کہ دہلی میں ہرڈ امیونٹی پیدا ہوچکی ہے ہے وزیر صحت نے کہا سائنسدان بتا سکیں گے کہ یہ ہرڈ امیونٹی ہے یا نہیں - ستیندر جین نے کہا دہلی میں کورونا کی چوتھی اور سب سے خطرناک لہر کے بعد یہ پہلا سیرو سروے تھا۔جنوری میں کیے گئے پانچویں سیرو سروے میں 56.13 فیصد لوگوں میں اینٹی باڈیز پائی گئیں۔ چھٹا سیرو سروے 24 ستمبر سے شروع ہوا، ایک ہفتے تک پوری دہلی کے 280 وارڈوں سے تقریباً 28 ہزار نمونے جمع کیے گئے۔
    Published by:Sana Naeem
    First published: