ہوم » نیوز » وسطی ہندوستان

بھوپال اور اندور میں کرفیو نافذ، تو 8 شہروں میں رات 10بجے سے دکانیں رہیں گی بند

وزیر اعلی شیوراج سنگھ کہتے ہیں مدھیہ پردیش میں کورونا کی صورتحال پیچیدہ ہوتی جا رہی ہے۔ اس لئے اندور اور بھوپال میں آج سے نائٹ کرفیو رہے گا۔

  • Share this:
بھوپال اور اندور میں کرفیو نافذ، تو 8 شہروں میں رات 10بجے سے دکانیں رہیں گی بند
وزیر اعلی شیوراج سنگھ کہتے ہیں مدھیہ پردیش میں کورونا کی صورتحال پیچیدہ ہوتی جا رہی ہے۔ اس لئے اندور اور بھوپال میں آج سے نائٹ کرفیو رہے گا۔

مدھیہ پردیش میں کورونا کی وبائی بیماری (Covid-19 pandemic) نے ایک بار پھر سے واپسی کی ہے۔ یکم فروری کو ریاست میں کورونا کے نئےمریضوں کی تعداد جہاں ایک سو اکیاون درج کی گئی تھی۔ وہیں اب یومیہ طور پر کورونا مریضوں کی تعداد آٹھ سے اوپر پہنچ گئی ہے۔پچھلے چوبیس گھنٹے میں ریاست میں کورونا کے آٹھ سو سترہ نئے معاملے درج کئے گئے ہیں ۔کورونا کے سب سے زیادہ معاملے اندور اور بھوپال میں ہیں ۔ حکومت نے کورونا کے بڑھتے معاملے کو دیکھتے ہوئے جہاں آج رات دس بجے سے صبح چھ بجے تک کرفیو کا نفاذ کیا ہے۔ وہیں جبلپور، گوالیار، اجین، رتلام، چھندواڑہ، برہانپور ،بیتول اور کھرگون میں کورونا کے بڑھتے معاملات کو دیکھتے ہوئے رات دس بجے سے دکانوں کو بند کرنے کا احکام جاری کردیا ہے۔یہی نہیں مہاراشٹر سے مدھیہ پردیش میں آنے والوں کے لئے کورونا جانچ کی نگیٹو رپورٹ لانے اور تھرمل اسکریننگ کو لازمی قرار دیا گیا ہے۔

وزیر اعلی شیوراج سنگھ کہتے ہیں مدھیہ پردیش میں کورونا کی صورتحال پیچیدہ ہوتی جا رہی ہے۔ کوروناکی وبائی بیماری پچھلے دنوں تیزی سے بڑھی ہے۔ کورونا مریضوں کی پازیٹو رپورٹ بڑھ کر چار اعشاریہ تین فیصد ہوگئی ہے اور ریاست میں کورونا کے جوکل ایکٹو معاملے میں ان میں سے چوون فیصد معاملے اندور اور بھوپال سے آئے ہیں ۔جبلپور میں بھی کورونا مریضوں کی تعداد میں اضافہ ہوا ہے اور اس لئے اندور اور بھوپال میں آج سے نائٹ کرفیو رہے گا۔ دس بجے سے لیکر صبح چھ بجے تک کرفیو جاری رہے گا۔ ضروری اشیا،دودھ،دوا،اسپتال کھلیں رہیں گےڈمسافروں کے آنے جانے اور خاص حالات میں لوگوں کواجازت رہے گی۔ باقی عوام سے اپیل ہے کہ کورونا کے بڑھتے قہر کو روکنے کے لئے حکومت کی جو گائیڈ لائن جاری کی گئی ہے اس پر عمل کریں ۔



وہیں کانگریس نے کورونا کے بڑھتے قہر کو روکنے کے لئے حکومت کے ذریعہ نافذ کئے گئے رات کے کرفیو کو غیر ضروری بتایا ہے ۔ مدھیہ پردیش کانگریس ترجمان بھوپیندر گپتا کہتے ہیں کہ رات میں کرفیو لگانے کا حکومت کا احکام سمجھ سے پرے ہے ۔ ویسے بھی لوگ رات دس بجے تک اپنے گھر چلے جاتے ہیں اور چھ بجے سے پہلے اکادکا لوگ ہی گھروں سے باہر نکلتے ہیں ۔اگر کورونا واقعی خطرنا ک شکل اختیار کر رہا ہے تو حکومت کو رات کی جگہ دن میں کرفیو کا نفاذ کرنے کا خاکہ تیار کرنا چاہیئے ۔ اس کے ساتھ جو غریب اور مژدور ہیں ان کی بھی ضرورت کا خیال رکھا جانا چاہیئے ۔


مدھیہ پردیش میں کورونا کے بڑھتے قہر کے بیچ حکومت کی جانب سے جاری کئے گئے احکام پر کانگریس کے اعتراضات پر کابینہ وزیربرائے میڈیکل ایجوکیشن وشواس سارنگ نے جوابی حملہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ تنقید کرنا اور بے وجہ تنقید کرنا کانگریس کی عادت کا حصہ ہے ۔کمل ناتھ کے زمانے میں کورونا کو لیکر کوئی کام نہیں کیا گیا ۔



شیوراج سنگھ حکومت میں جو کام کیاگیا ہے اس کی دنیا میں نظیر نہیں ہےاب جبکہ کورونا واپسی کررہا ہے تو حکومت کے ذریعہ شہریوں کی جان کی حفاظت کے لئے احتیاطی قدم اٹھایا گیا ہے۔ حکومت کے ذریعہ ویکسینیشن اور کورونا ٹیسٹ میں اضافہ کیاگیا ہے اور بھی ضروری قدم ہونگے حکومت شہریوں کی بقاکے لئے اٹھائے گی۔
Published by: Sana Naeem
First published: Mar 18, 2021 12:58 AM IST