ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

DRDO anti-Covid drug:وزیردفاع راج ناتھ سنگھ DRDOکےاینٹی کوویڈڈرگ کوکیامتعارف،جلدہی بازارمیں دستیابی کے لیے اقدامات

ڈرگس کنٹرولر جنرل آف انڈیا (Drugs Controller General of India ) نے 8 مئی کو کووڈ۔19 کے اعتدال سے لے کر شدید کیسوں میں ہنگامی استعمال کے لیے 2-deoxy-D-glucose (2-DG) drug ڈرگ کی منظوری دی تھی۔

  • Share this:
DRDO anti-Covid drug:وزیردفاع راج ناتھ سنگھ DRDOکےاینٹی کوویڈڈرگ کوکیامتعارف،جلدہی بازارمیں دستیابی کے لیے اقدامات
وزیر دفاع راج ناتھ سنگھ (Defence Minister Rajnath Singh) نے اسے متعارف کروایاہے۔ ان کے ہمراہ وزیر صحت ہرش وردھن (Health Minister Harsh Vardhan) اس تقریب میں موجود رہیں

ڈیفنس ریسرچ اینڈ ڈویلپمنٹ آرگنائزیشن (Defence Research and Development Organisation) نے کووڈ۔19 کے علاج کے لئے تیار کردہ 2 ۔ ڈوکیسی ۔ ڈی گلوکوز (2 - ڈی جی) (deoxy-D-glucose 2- (2-DG)) ڈرگ کا پہلا کھیپ پیر کو وزیر دفاع راج ناتھ سنگھ (Defence Minister Rajnath Singh) نے اسے متعارف کروایاہے۔ ان کے ہمراہ وزیر صحت ہرش وردھن (Health Minister Harsh Vardhan) اس تقریب میں موجود رہیں ۔بتایا گیا ہے کہ ہسپتالوں کو پیر کے بعد سے ہی ڈاگ ملنا شروع ہوجائے گی۔ اس کو شروع کرنے کے لئے دہلی کے مختلف ہسپتالوں میں 10000 کے قریب خوراکیں فراہم کی جائیں گی۔


ڈرگس کنٹرولر جنرل آف انڈیا (Drugs Controller General of India ) نے 8 مئی کو کووڈ۔19 کے اعتدال سے لے کر شدید کیسوں میں ہنگامی استعمال کے لیے 2-deoxy-D-glucose (2-DG) drug ڈرگ کی منظوری دی تھی۔



کیا ہے 2۔ ڈی جی (2-DG)؟

اینٹی کووڈ۔19 علاج معالجہ 2-ڈوکیسی ڈی گلوکوز (2-ڈی جی) کا استعمال انسٹی ٹیوٹ آف نیوکلیئر میڈیسن اینڈ الائیڈ سائنسز (Institute of Nuclear Medicine and Allied Sciences ) اور ڈاکٹر ریڈی لیبارٹریز (Dr Reddy’s Laboratories) حیدرآباد کے اشتراک سے ڈی آر ڈی او کی ایک لیب کے ذریعہ تیار کیا گیا ہے۔

کلینیکل آزمائشی نتائج (Clinical trial results) سے پتہ چلتا ہے کہ یہ ڈرگ ہسپتال میں داخل کووڈ۔19 مریضوں کی تیزی سے صحت یابی کے قابل بناتی ہے اور ان کی اضافی آکسیجن انحصار کو کم کرتی ہے۔ جن کوویڈ مریضوں کو 2-DG کے ساتھ علاج کیا گیا ان کا RT-PCR نتیجہ منفی آیا ہے۔

۔2-ڈی جی کے ساتھ علاج کیے جانے والے مریضوں نے بھی علامات سے تیزی سے بحالی کا مظاہرہ کیا۔ درمیانی عرصے میں 2.5 دن کا فرق دیکھا گیا۔


یہ ڈرگ ایک پاؤڈر کی شکل میں ہے۔ اسے پانی میں گھول کر زبانی طور پر پلایا جاتا ہے۔ یہ دوا وائرس سے متاثرہ خلیوں میں جمع ہوتی ہے اور وائرل ترکیب اور توانائی کی پیداوار کو روک کر وائرس کی افزائش کو روکتی ہے۔ وائرل متاثرہ خلیوں میں اس کا انتخابی جمع اسے ایک انوکھی دوا بنا دیتا ہے۔
Published by: Mohammad Rahman Pasha
First published: May 17, 2021 11:01 AM IST