உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    گزشتہ ہفتہ کے مقابلے راجدھانی میں کورونا کی صورت حال اور زیادہ بہتر ہوئی: کیجریوال

    وزیراعلی اروند کیجریوال

    وزیراعلی اروند کیجریوال

    اروند کیجریوال نے ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعہ میڈیا کو بتایا کہ گزشتہ ہفتہ کے مقابلے میں راجدھانی میں کورونا کی صورت حال اور زیادہ بہتر ہوئی ہے۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:
      نئی دہلی۔ دہلی میں کورونا وائرس کے معاملے تقریبا ایک لاکھ پہنچنے اور اس کے انفیکشن سے تین ہزار سے زیادہ لوگوں کی اموات کے باوجود وزیراعلی اروند کیجریوال نے پیر کو پھر اس بات اعادہ کیا کہ اس سے گھبرانے کی ضرورت نہیں ہے۔ کیجریوال نے کہا کہ انفیکشن کے معاملے ایک طرف بڑھ رہے ہیں تو دوسری طرف ٹھیک ہونے والوں کی تعداد میں بھی تیزی سے اضافہ ہو رہا ہے۔ مجموعی طور سے 99 ہزار 444 مریضوں میں 71339 کورونا کے مریض صحتیاب ہوچکے ہیں۔

      انہوں نے ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعہ میڈیا کو بتایا کہ گزشتہ ہفتہ کے مقابلے میں راجدھانی میں کورونا کی صورت حال اور زیادہ بہتر ہوئی ہے۔ پلازما بینک شروع ہوگیا ہے۔ انہوں نے لوگوں سے زیادہ سے زیادہ تعداد میں آکر پلازمہ عطیہ کرنے کی بھی دوبارہ اپیل کی۔ کیجریوال نے کہا کہ 25,000 سرگرم کورونا کے مریضوں میں سے 15,000 کا علاج گھر پر کیا جارہا ہے۔ اموات کی شرح میں کمی آئی ہے۔ دہلی میں ملک کا پہلا کورونا پلازما بینک کھولا گیا ہے۔ جانچ سے پتہ چلا ہے کہ پلازما تھیراپی کئی مریضوں کو ٹھیک کرنے میں مدد کرسکتی ہے۔


      کیجریوال نے بتایا کہ دہلی میں اب روزانہ 20,000 سے 24,000 کورونا جانچ کی جارہی ہے۔ جون مہینے کا ذکر کرتے ہوئے کیجریوال نے کہا کہ کم جانچ ہونے پر بھی ہر 100 میں سے 35 کورونا پازیٹیو آتی تھی لیکن اب اس کی تعداد 100 میں سے 11 ہی ہے۔ اسپتالوں میں تقریبا 5100 مریض بھرتی ہیں اور تقریبا 10000 بیڈ خالی ہیں۔ اس وقت دہلی میں جانچ اور بیڈ کی کوئی پریشانی نہیں ہے اور ایپ کے ذریعہ پتہ لگایا جاسکتا ہے کہ کہاں کتنے بیڈ خالی ہیں۔

      پلازما عطیہ کرنے والوں کی تعداد کم دیکھتے ہوئے وزیراعلی نے کہا کہ اگر پلازما عطیہ کرنے والوں کی تعداد نہیں بڑھی تو اسٹاک میں جو پلازما رکھا ہے وہ سب ختم ہوجائے گا۔ انہوں نے کہا کہ ’’میری ہاتھ جوڑ کر درخواست ہے کہ زیادہ سے زیادہ لوگ آگے آکر پلازما عطیہ کرنے کے لئے آگے آئیں۔‘‘ پلازما عطیہ کرنے کے وقت کی تکلیفوں کی افواہوں پر وزیراعلی نے کہا کہ ’’گھبرانے کی کوئی ضرورت نہیں ہے، نہ ہی عطیہ دینے والے کو کمزوری آئے گی اور نہ ہی کوئی درد ہوگا۔ کچھ لوگوں کا کہنا ہے کہ اپنے ساتھ کسی کو لے کر جائیں گے تو انفیکشن ہو جائے گا، اس معاملے میں واضح کر دوں کہ آئی ایل بی ایس ایک غیر کورونا اسپتال ہے۔‘‘
      Published by:Nadeem Ahmad
      First published: