ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

دہلی میں کچھ جگہوں پر پھر لگ سکتا ہے لاک ڈاون، وزیر اعلیٰ کیجریوال نے مرکز کو بھیجی تجویز

کیجریوال نے میڈیا کو بتایا کہ ریاستی حکومت نے مرکزی حکومت کو ایک تجویز بھیجی ہے جس میں محدود سطح پر پھر سے لاک ڈاؤن کرنے کی اجازت طلب کی گئی ہے۔ اگر اس تجویز کو منظوری مل جاتی ہے تو زيادہ انفیکشن والے علاقوں میں پھر سے تالا بندی کی جاسکتی ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: Nov 17, 2020 07:29 PM IST
  • Share this:
دہلی میں کچھ جگہوں پر پھر لگ سکتا ہے لاک ڈاون، وزیر اعلیٰ کیجریوال نے مرکز کو بھیجی تجویز
دہلی میں کچھ جگہوں پر پھر لگ سکتا ہے لاک ڈاون

نئی دہلی۔ قومی دارالحکومت دہلی میں کورونا وائرس کے بڑھتے ہوئے قہر سے نمٹنے کے لیے کیجریوال حکومت سخت اقدامات کرنے کی تیاری کر رہی ہے جس میں کچھ علاقوں میں دوبارہ لاک ڈاؤن اور شادی بیاہ کی تقریبات میں شرکاء کی تعداد 50 تک محدود رکھنے پر غور کیا جارہا ہے۔ وزیر اعلی اروند کیجریوال نے منگل کے روز اس کا اشارہدیا۔ کیجریوال نے میڈیا کو بتایا کہ ریاستی حکومت نے مرکزی حکومت کو ایک تجویز بھیجی ہے جس میں محدود سطح پر پھر سے لاک ڈاؤن کرنے کی اجازت طلب کی گئی ہے۔ اگر اس تجویز کو منظوری مل جاتی ہے تو زيادہ انفیکشن والے علاقوں میں پھر سے تالا بندی کی جاسکتی ہے۔


وزیر اعلی نے کہا کہ کچھ بازاروں میں دیوالی کے تہوار کے دوران بہت لاپرواہی سامنے آئی۔ بازار آنے والے لوگوں نے نہ تو ماسک پہن رکھے تھے، نہ ہی سماجی دوری کی پابندی کی تھی۔ انہوں نے کہا کہ اگر بازاروں میں ماسک پہننے اور معاشرتی فاصلے کے اصولوں پر عمل نہیں کیا جاتا ہے اور وہ جگہ ایک کورونا وائرس کی ہاٹ اسپاٹ بن سکتی ہے تو ان بازاروں کو پھر سے محدود وقفے کے لیے بند کرنے کی اجازت دی جائے۔ اس طرح کی تجویز مرکز کو بھیجی جارہی ہے۔ شادی کی تقریبات میں مہمانوں کی تعداد 200 تک رکھنے کی اجازت تھی لیکن کورونا وائرس کے بڑھتے ہوئے معاملوں کے پیش نظر ان کی تعداد 50 تک محدود کرنے کی تجویز لیفٹیننٹ گورنر کو ارسال کردی گئی ہے۔ قابل ذکر ہے کہ دہلی کے وزیر صحت ستیندر جین نے کل ہی کہا تھا کہ پھر سے لاک ڈاؤن کرنے کا کوئی ارادہ نہیں ہے۔



اروند کیجریوال نے کہا کہ کورونا وائرس کی صورتحال معمول پر آنے پر ازدواجی تقاریب میں مہمانوں کی تعداد 50 سے بڑھا کر 200 کردی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ سرکاری اور پرائیویٹ اسپتالوں میں بستروں کی تعداد کافی ہے، لیکن آئی سی یو والے بستروں کی کمی ہے جس کے لئے مرکزی حکومت نے مدد کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ "تمام حکومتیں مل کر کورونا وائرس کی روک تھام کے لئے کام کر رہی ہیں، لیکن سب سے بڑی ضرورت یہ ہے کہ لوگوں کو خیال رکھنا چاہئے۔ لوگوں کی ایک بڑی تعداد بغیر ماسک کے گھوم رہی ہے۔ میری اپیل ہے کہ براہ کرم ماسک پہنیں اور سماجی دوری کی پابندی کریں"۔

اتوار کے روز مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ کے ساتھ ایک اعلی سطحی میٹنگ میں دہلی حکومت کو 750 آئی سی یو بیڈ فراہم کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔ دہلی کے اندر کورونا وائرس نومبر کے مہینے میں زیادہ خوفناک صورت اختیار کرتا جارہا ہے۔ نئے متاثرین کے ساتھ ہی کورونا وائرس سے مرنے والے افراد کی تعداد میں بھی تیزی سے اضافہ ہوا ہے۔ دہلی میں گزشتہ 24 گھنٹے کے دوران 99 افراد کی موت ہوچکی ہے، جو ملک کی سب سے زیادہ متاثرہ ریاست مہاراشٹر کی یومیہ تعداد سے زیادہ ہے۔ نومبر میں اب تک کورونا وائرس سے دہلی میں 1100 سے زیادہ افراد فوت ہوچکے ہیں۔
Published by: Nadeem Ahmad
First published: Nov 17, 2020 07:29 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading