உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    کووڈ-19: IIT دہلی نے بنایا Corona Test کا سب سے سستا جانچ کٹ، ICMR نے دی منظوری

    کوروناوائرس کی جانچ کیلئے انڈین انسٹی ٹیوٹ آف ٹکنالوجی (IIT) دہلی نے ایک ٹیسٹ کٹ ڈیزائن کی ہے۔ دعویٰ کیا گیا ہے کہ اس کٹ سے جانچ سب سے سستی ہوگی۔ اب (ICMR ) کی لیب نے اس بات کی تصدیق کی ہے اور اسے منظوری بھی مل گئی ہے۔

    کوروناوائرس کی جانچ کیلئے انڈین انسٹی ٹیوٹ آف ٹکنالوجی (IIT) دہلی نے ایک ٹیسٹ کٹ ڈیزائن کی ہے۔ دعویٰ کیا گیا ہے کہ اس کٹ سے جانچ سب سے سستی ہوگی۔ اب (ICMR ) کی لیب نے اس بات کی تصدیق کی ہے اور اسے منظوری بھی مل گئی ہے۔

    کوروناوائرس کی جانچ کیلئے انڈین انسٹی ٹیوٹ آف ٹکنالوجی (IIT) دہلی نے ایک ٹیسٹ کٹ ڈیزائن کی ہے۔ دعویٰ کیا گیا ہے کہ اس کٹ سے جانچ سب سے سستی ہوگی۔ اب (ICMR ) کی لیب نے اس بات کی تصدیق کی ہے اور اسے منظوری بھی مل گئی ہے۔

    • Share this:
      کوروناوائرس کی جانچ کیلئے انڈین انسٹی ٹیوٹ آف ٹکنالوجی (IIT) دہلی نے ایک ٹیسٹ کٹ ڈیزائن کی ہے۔ دعویٰ کیا گیا ہے کہ اس کٹ سے جانچ سب سے سستی ہوگی۔ اب (ICMR ) کی لیب نے اس بات کی تصدیق کی ہے اور اسے منظوری بھی مل گئی ہے۔ جانکاری کے مطابق اس سے کورونا جانچ نہ صرف سستی ہی ہوگی بلکہ ایک دم صحیح نتیجے آئیں گے۔ آئی آئی ٹی (IIT) دہلی کے ڈائریکٹر پروفیسر رام گوپال راؤ نے بتایا کہ اس ٹیسٹ کٹ کی قیمت صرف 300  روپئے ہوگی۔ وہیں یہ کسی بھی دیگر کٹ سے کہیں تیز کام کرے گی۔ حالانکہ ٹیسٹ کی (time limit) کیا ہوگی اس کے بارے میں ابھی نہیں بتایا گیا ہے۔ انہوں نے کورونا سے جڑے ڈیپارٹمنٹ میں اور بھی تحقیق جاری ہے جو کہ ہم جلد ہی بتائیں گے۔ وہیں آئی آئی ٹی کے پروفیسر وی پیرو مال نے کہا کہ ہم اس کٹ کو جوری س ےبنا رہے تھے اور تین مہینے میں اسے بنانے میں کامیابی ملی ہے۔ یہ جانچ کرنے کا ایک سستا  طریقہ ہوگا جس کی وجہ سے بڑی تعداد میں کورونا ٹیسٹ کی سہولت ہوگی۔

      آئی آئی ٹی دہلی میں واقع کسوما اسکول آف بایو لاجیکل سائنسز کے کے محقین نے اس کٹ کی تعمیر کی ہے۔ کٹ پر آئی ایم سی آر کی منظوری لینے والا آئی آئی ٹی دہلی ایسا پہلا ادارہ ہے۔ غور طلب ہے کہ چین سے بھی ہندستان نے جانچ کٹ کا امپورٹ (Import) کیا تھا لیکن اس کی کوالٹی اور نتیجے (Quality and results) کو لیکر کئی طرح کی پریشانیاں سامنے آئی تھیں۔ تحقیق سے جڑے پروفیسر بسوجیت کنڈو نے کہا کہ فی الحال ک کی صحیح قیمت نہیں بتا سکے ہیں کیونکہ جو کمپنی اسے بنائے گی وہی اس کی قیمت بھی منحصر کرے گی۔ حالانکہ انہوں نے کہا کہ اگر اس کی تعمیر بڑے پہمانے پر ہوتی ہے تو اس کی قیمت کافی کم ہوگی۔
      ہندستان کی ایک رپورٹ کے مطابق اس ٹیسٹ کٹ کو آئی آئی ٹی نے پیٹینٹ کروا لیا ہے۔ اسے آئی آئی ٹی دہلی کے فاؤنڈیشن فار انوویشن اینڈ ٹکنالوجی ٹرانسفر نے پیٹینٹ کیا ہے۔


      آئی آئی ٹی دہلی کی سبھی تحقیق اسی کے نام پر پیٹینٹ کی جاتی ہیں۔ کنڈو نے  بتایا کہ اس کٹ کو 9  اپریل کو آئی سی ایم آر کو دیا گیا تھا۔ اس کے بعد انہوں نے کچھ جانچ کی اور کٹ کو منظوری دے دی گئی۔ اس سےپہلے بھی کٹ کو جانچ کیلئے دیا گیا تھا لیکن منظوری نہیں ملی۔
      Published by:sana Naeem
      First published: