ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

دہلی میں جولائی تک 5 لاکھ ہو سکتے ہیں کورونا کے کیس، 80 ہزار بیڈ کی ضرورت ہو گی: منیش سسودیا

قومی دارالحکومت دہلی میں کورونا انفیکشن کے معاملے مسلسل بڑھتے جا رہے ہیں۔ ایسے میں اس بات پر بحث شروع ہو گئی ہے کہ کیا دہلی میں کمیونٹی اسپریڈ کی سطح پر لوگ انفیکشن سے دوچار ہو رہے ہیں؟

  • Share this:
دہلی میں جولائی تک 5 لاکھ ہو سکتے ہیں کورونا کے کیس، 80 ہزار بیڈ کی ضرورت ہو گی: منیش سسودیا
دہلی میں جولائی تک 5 لاکھ ہو سکتے ہیں کورونا کے کیس، 80 ہزار بیڈ کی ضرورت ہو گی: منیش سسودیا

نئی دہلی۔ قومی دارالحکومت دہلی میں کورونا انفیکشن کے معاملے مسلسل بڑھتے جا رہے ہیں۔ ایسے میں اس بات پر بحث شروع ہو گئی ہے کہ کیا دہلی میں کمیونٹی اسپریڈ (community transmission) کی سطح پر لوگ انفیکشن سے دوچار ہو رہے ہیں؟ اس مسئلہ پر لیفٹننٹ گورنر انل بیجل (LG Anil Baijal) اور نائب وزیر اعلیٰ منیش سسودیا (Manish Sisodia) کے درمیان منگل کو اہم میٹنگ ہوئی۔ تبادلہ خیال کرنے کے بعد نائب وزیر اعلیٰ نے کہا کہ مرکز کے مطابق، فی الحال دہلی میں کمیونٹی اسپریڈ جیسے حالات نہیں بنے ہیں۔


دلی کے لیفٹننٹ گورنر انل بیجل کے ساتھ ڈیزاسٹر اتھارٹی کی میٹنگ میں شامل ہونے کے بعد نائب وزیر اعلیٰ نے بتایا کہ راجدھانی میں کورونا وائرس سے پیدا ہوئے بحران کے بارے میں تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا۔ اس میٹنگ میں بتایا گیا کہ دلی حکومت کا اندازہ ہے کہ بارہ سے تیرہ دن میں کورونا کے کیس دوگنا تک بڑھ رہے ہیں۔ پندرہ جون تک قومی دارالحکومت میں 44000 معاملے ہونے کا اندیشہ ہے۔ ایسے میں دلی کے اسپتالوں میں مریضوں کے علاج کے لئے 6000 بیڈ کی ضرورت ہو گی۔ وہیں، تیس جون تک دہلی میں ایک لاکھ کورونا کیس ہو جائیں گے، تب پندرہ ہزار بیڈ کی ضرورت پڑے گی۔ سسودیا نے بتایا کہ پندرہ جولائی تک دو لاکھ سے زیادہ کیس کے لئے 33 ہزار بیڈ کی ضرورت دہلی میں پڑے گی۔ وہیں، اکتیس جولائی تک ساڑھے پانچ لاکھ کیس ہوں گے جس کے لئے 80  ہزار بیڈ کی ضرورت پڑے گی۔



دہلی حکومت اور دارالحکومت کے نجی اسپتالوں میں صرف دارالحکومت کے لوگوں کے علاج کے فیصلہ کو لیفٹیننٹ گورنرکے الٹنے پر سسودیا نے کہا کہ بیجل نے فیصلہ تبدیل کرنے سے پہلے کچھ جائزہ وغیرہ لیا تھا ، لیکن ان کے پاس (بیجل) کوئی جواب نہیں تھا۔ انہوں نے کہا کہ لیفٹیننٹ گورنر کے فیصلے کو تبدیل کرنے کے بعد دہلی کی بگڑتی ہوئی صورتحال کی ذمہ داری کون قبول کرے گا۔ لیفٹیننٹ گورنر کے پاس اس کا بھی جواب نہیں تھا۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نے دہلی کے عوام کی بہتری کے لئے بیرونی ریاستوں کے مریضوں کا علاج نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

دہلی کے وزیر صحت ستیندر جین نے کہا کہ دہلی میں کورونا تیزی سے پھیل رہا ہے۔ دہلی میں 50 فیصد مریض بیرونی ریاستوں کے ہیں۔ ایک بڑے اسپتال میں ، 70 فیصد آؤٹ پیشنٹ ہیں۔ وزیر صحت نے کہا کہ جھرمٹ اور چھوٹی کالونیوں میں کورونا کے معاملات تیزی سے بڑھ رہے ہیں ، لیکن معاشرتی انفیکشن کی حالت ابھی تک نہیں ہوسکی ہے۔ اہم بات یہ ہے کہ انفیکشن کے معاملے میں دہلی تیسرے نمبر پر ہے۔ دارالحکومت میں کورونا وائرس کے کل 29 ہزار 943 کیس رپورٹ ہوئے ہیں۔ فی الحال 17712 فعال معاملے اور 874 اموات ہیں۔

یو این آئی، اردو کے ان پٹ کے ساتھ
First published: Jun 09, 2020 03:45 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading