ہوم » نیوز » وسطی ہندوستان

بھوپال میں تیار ہوگی ڈیجیٹل بلڈ ڈائریکٹری، ایم ایل اے عارف مسعود نے مریضوں کو خون مہیا کرانے کے لئے شروع کی مہم

بھوپال ایم ایل اے عارف مسعود نے کورونا قہر میں شہر کے اسپتالوں میں مریضوں کے علاج کے لئے خون کی کمی کو دور کرنے کے لئے عملی تحریک شروع کی تھی۔ عارف مسعود کے ذریعہ کئی بار ذاتی طور پر خون کا عطیہ کیا گیا اور کیمپ کا انعقاد کر کے بھی بھوپال کے اسپتالوں کو خون کی فراہمی کا فریضہ انجام دیاگیا۔

  • Share this:
بھوپال میں تیار ہوگی ڈیجیٹل بلڈ ڈائریکٹری، ایم ایل اے عارف مسعود نے مریضوں کو خون مہیا کرانے کے لئے شروع کی مہم
بھوپال میں تیار ہوگی ڈیجیٹل بلڈ ڈائریکٹری، عارف مسعود کی مریضوں کو خون مہیا کرانے کی مہم

بھوپال۔ خون انسانوں کے لئے قدرت کا بیش قیمتی تحفہ ہے۔ خون کی کمی یا وقت پر خون نہ ملنے کے سبب بہت سے لوگوں کی موت ہو جاتی ہے اور جب کسی مریض کو وقت پر خون مل جاتا ہے تو اسے ایک نئی زندگی مل جاتی ہے۔ کورونا قہر میں جہاں بہت سی مشکلات سے عوام  دوچار ہیں وہیں بھوپال کے اسپتالوں میں بلڈ کی کمی بھی مریضوں کے لئے ایک بڑا چیلنج بنی ہوئی ہے۔


بھوپال ایم ایل اے عارف مسعود نے کورونا قہر میں شہر کے اسپتالوں میں مریضوں کے علاج کے لئے خون کی کمی کو دور کرنے کے لئے عملی تحریک شروع کی تھی۔ عارف مسعود کے ذریعہ کئی بار ذاتی طور پر خون کا عطیہ کیا گیا اور کیمپ کا انعقاد کر کے بھی بھوپال کے اسپتالوں کو خون کی فراہمی کا فریضہ انجام دیاگیا۔ ماہ اکتوبر میں عارف مسعود نے بلڈ ڈونیشن کیمپ کا انعقاد کر کے بھوپال کے حمیدیہ اور دوسرے اسپتالوں کو پانچ سو ستر یونٹ  بلڈ فراہم کیا گیا تھا۔ یہ مہم آگے جاری رہتی اور اس سے مریضوں کو اور فائدہ پہنچتا ہے کہ اس سے قبل ہی عارف مسعود سیاست کا شکار ہوگئے۔


توہین رسالت مآب صلی اللہ علیہ وسلم کے معاملے کو لیکر عارف مسعود نے بھوپال اقبال میدان میں فرانس کے خلاف احتجاج کیا تو ان کے خلاف پہلے دفعہ ایک سو اٹھاسی کے تحت معاملہ درج کیاگیا ۔ عارف مسعود اس معاملے میں ضمانت لیکر بہار الیکشن میں گئے ہی تھے کہ ان کے خلاف دوسرا معاملہ مذہبی جذبات کو بھڑکانے کو لیکر آئی پی سی کی دفعہ ایک سو ترپن اے کے تحت درج کیاگیا۔ ایک سو ترپن اے میں عارف مسعود کو جبلپور ہائی کورٹ سے پیشگی ضمانت مل گئی ہے وہیں عارف مسعود کے ذریعہ  سیکشن 482 کے تحت درج معاملے کولیکر جبلپور ہائی کورٹ نے شکایت کنندہ اور ایم پی حکومت کے خلاف نوٹس جاری کر کے چار ہفتے میں جواب مانگا ہے۔


بھوپال ایم ایل اے عارف مسعود کہتے ہیں کہ میرے خلاف سیاسی انتقام کے تحت کاروائی کی گئی تھی ۔ مگر سازش کرنے والے یہ بھول گئے کہ سازش کرنے والے سے بڑی اللہ کی ذات ہے۔ جو میں نے نیکیاں کی تھیں وہ کام آئیں اور ہائی کورٹ سے مجھے ضمانت ملی ہے۔ اب میں پھر فلاحی کام پر فوکس کر رہا ہوں۔ شہر میں بہت سے لوگوں کے ذریعہ بلڈ ڈونیشن کیمپ لگایا جاتا ہے مگر یہ آخری حل نہیں ہے۔ مریض اور ان کے رشتہ داروں کو بلڈ کے لئے در در بھٹکنا پڑتا ہے ۔ اس لئے ہم نے خود پہلے بلڈ ڈونیٹ کرتے ہوئے بھوپال کے لئے بلڈ ڈائریکٹری تیار کرنے کا سلسلہ شروع کیا ہے ۔ یہ بلڈ ڈائریکٹری پوری طرح ڈیجیٹل ہوگی ۔ اس میں بلڈ دینے والے اور لینے والے دونوں ہی کی تفصیل ہوگی۔ ساتھ ہی اس بات کا بھی ذکر ہوگا کہ کس بلڈ گروپ کے کتنے لوگ ہیں اور ان کے نام پتے اور فون نمبر کیا ہیں۔ ساتھ ہی اس بات کا بھی ذکر ہوگا کہ کس نے کتنی بار بلڈ ڈونیٹ کیا ہے اور کب کب کیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہماری کوشش ہے کہ خون کی کمی سے کسی مریض کی موت نہ ہو بلکہ شہرکے اسپتالوں میں ہم اتنا بلڈ مہیا کردیں کہ اسے ریزور میں رکھا جا سکے۔ مجھے امید ہے کہ نئے سال میں یہ بلڈ ڈائریکٹری منظر عام پر آجائے گی۔

 
Published by: Nadeem Ahmad
First published: Dec 08, 2020 09:33 AM IST