ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

اب کورونا نے لی پہلے عوامی نمائندہ کی جان، ڈی ایم کے رکن اسمبلی کا ہوا انتقال

دریوڑ منیتر کزگم کے رکن اسمبلی جے انبازگن کی کورونا انفیکشن سے موت ہو گئی ہے۔ انبازگن ایک ہفتے پہلے کورونا مثبت پائے گئے تھے۔

  • Share this:
اب کورونا نے لی پہلے عوامی نمائندہ کی جان، ڈی ایم کے رکن اسمبلی کا ہوا انتقال
اب کورونا نے لی پہلے عوامی نمائندہ کی جان، ڈی ایم کے رکن اسمبلی کا ہوا انتقال

چنئی۔ ملک بھر میں کورونا وائرس کا قہر جاری ہے۔ اس وائرس کی وجہ سے تمل ناڈو میں رکن اسمبلی کی موت کا پہلا معاملہ سامنے آیا ہے۔ دریوڑ منیتر کزگم کے رکن اسمبلی جے انبازگن کی کورونا انفیکشن سے موت ہو گئی ہے۔ انبازگن ایک ہفتے پہلے کورونا مثبت پائے گئے تھے۔ چنئی کے ایک نجی اسپتال میں ان کا علاج چل رہا تھا۔ بدھ کی صبح تقریبا سات بجے ان کا انتقال ہو گیا۔انبازگن چنئی مغربی ضلع میں ڈی ایم کے سکریٹری بھی تھے۔ کورونا وائرس کی وجہ سے کسی عوامی نمائندہ کی موت کا یہ ملک میں پہلا معاملہ ہے۔



رکن اسمبلی کو گزشتہ دو جون کو کرومپیٹ واقع ڈاکٹر ریلا انسٹی ٹیوٹ اینڈ میڈیکل سینٹر میں بھرتی کرایا گیا تھا۔ انسٹی ٹیوٹ کے ایک سینئر ڈاکٹر نے بتایا’’ کہ انسٹی ٹیوٹ میں قیام کی پوری مدت کے دوران ان کی حالت بگڑتی چلی گئی۔ انہیں وینٹی لیٹر پر رکھا گیا تھا۔ ایک بار انہیں کم آکسیجن کی ضرورت تھی۔ لیکن وہ کئی اور عوارض کے شکار تھے جس سے وہ جانبر نہ ہو سکے‘‘۔

گزشتہ منگل کو سانس لینے میں دقت اور زکام اور بخار کی شکایت کے بعد انبازگن کا کورونا ٹیسٹ کرایا گیا تھا جس کی رپورٹ مثبت آئی تھی۔ اس کے بعد سے ہی وہ چنئی کے ڈاکٹر ریلا انسٹی ٹیوٹ اینڈ میڈیکل سینٹر میں بھرتی تھے۔ 61 سالہ انبازگن کو کڈنی سے جڑی بیماری بھی تھی۔ ان کا شوگر لیول بھی ہائی تھا۔ اسپتال کے سی ای او ڈاکٹر ایلن کمار کے مطابق، رکن اسمبلی کی حالت پیر کی شام سے بگڑ گئی تھی۔ انہیں انتہائی نگہداشت والے یونٹ ( آئی سی یو) میں شفٹ کیا گیا تھا۔
First published: Jun 10, 2020 09:01 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading