ہوم » نیوز » وسطی ہندوستان

کورونا کی چین توڑنے کے لئےمدھیہ پردیش میں کورونا مہم کا آغاز

کورونا کی چین کو توڑنے کے لئے مدھیہ پردیش حکومت کی سطح پر جہاں لاک ڈاؤن میں ایک بار اور توسیع کی گئی ہے۔ وہیں شیوراج سنگھ حکومت نے ریاست سے کورونا کی وبائی بیماری کا خاتمہ کرنے کے لئے ریاست گیر سطح پر کل کوروناکے نام سے مہم شروع کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

  • Share this:
کورونا کی چین توڑنے کے لئےمدھیہ پردیش میں کورونا مہم کا آغاز
کورونا کی چین کو توڑنے کے لئے مدھیہ پردیش حکومت کی سطح پر جہاں لاک ڈاؤن میں ایک بار اور توسیع کی گئی ہے۔ وہیں شیوراج سنگھ حکومت نے ریاست سے کورونا کی وبائی بیماری کا خاتمہ کرنے کے لئے ریاست گیر سطح پر کل کوروناکے نام سے مہم شروع کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

مدھیہ پردیش میں کورونا کی چین کو توڑنے کے لئے حکومت کی سطح پر جہاں لاک ڈاؤن میں ایک بار اور توسیع کی گئی ہے۔ وہیں شیوراج سنگھ حکومت نے ریاست سے کورونا کی وبائی بیماری کا خاتمہ کرنے کے لئے ریاست گیر سطح پر کل کوروناکے نام سے مہم شروع کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ حکومت نے راجدھانی بھوپال سے آج سے پچیس مئی تک کورونا کے خاتمہ کے لئے جہاں گھر گھر میں سروے کردیا ہے وہیں اپوزیشن نے اس مہم کو نا کافی بتاتے ہوئے حکومت سے ٹیسٹنگ کو بڑھنے اور اسپتالوں میں طبی سہولیات کو مہیا کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ مدھیہ پردیش میں پندرہ روز قبل کورونا کے ایکٹو مریضوں کی تعداد جہاں چورانوے ہزار کو تجاوز کرگئی تھیں وہیں اب حکومت کی کوششوں سے کورونا کے ایکٹو مریضوں کی تعداد گھٹ کر پچاسی ہزار ہوگئی ہے۔ وزیر اعلی شیوراج سنگھ نے منترالیہ میں منعقدہ کورونا جائزہ میٹنگ میں ریاست کے باشندوں سے کورونا کے خاتمہ کے لئے جہاں کورونا کرفیو پر سختی سے عمل کرنے کی اپیل کی وہیں انہوں نے ریاست میں کل کورونا کے نام سے مہم کے آغاز کرنے کا بھی اعلان کیا۔


وزیر اعلی شیوراج سنگھ نے پندرہ مئی تک مدھیہ پردیش میں کورونا کرفیو میں توسیع کا بھی اعلان کیا ہے۔ وزیر اعلی شیوراج سنگھ کہتے ہیں کہ حکومت اسپتالوں میں طبی سہولیات کو فراہم کرنے کے لئے مسلسل کام کر رہی ہے ۔ کورونا کی ویکسین سبھی کو مفت لگائی جائے گی ۔ جب تک آپ کے پاس پورٹل سے میسج نہ آئے آپ کورونا ٹیکہ کاری سینٹر پر جاکر بھیڑ نہ لگائیں ۔

وہیں کانگریس میڈیاسیل کے نائب صدر بھوپیندر گپتا کہتے ہیں کہ حکومت لاک ڈاؤن کی مدت میں توسیع پر توسیع کر رہی ہے لیکن اسے عوام کی فکر نہیں ہے ۔


کورونا قہر میں غریب مزدور طبقے پر کیا گزر رہی ہے اسے اس کا ہوش نہیں ہے ۔ راشن کا اعلان کیا گیا ہے لیکن وہ مل نہیں رہا ہے ۔لوگ دکانوں کے چکر لگارہے ہیں اور پولیس کے ڈنڈے کھا رہے ہیں ۔ اسپتالوں میں علاج کے نام پر کالا بازاری جاری ہے ۔ اسپتالوں میں آکسیجن کی قلت اور ریمڈیسور انجیکشن کی سپلائی کو یقینی نہیں بنایا جا سکا ہے۔ اور وزیر اعلی جو کورونا ٹیکہ کاری کی بات کر رہے ہیں وہ اٹھارہ سال سے اوپر کے لوگوں کو ایک دن میں پانچ ہزار دو سو لوگوں کو ہی لگائی جارہی ہے۔ ایسے میں سوال یہ اٹھتا ہے کہ مدھیہ پردیش کے ساڑھتے تین کروڑ لوگوں کوکتنے سال انتظار کرنا پڑے گا۔

حکومت اخبارات پر اشتہارات میں جتنے پیسے خرچ کر رہی ہے اس سے کم پیسے میں مدھیہ پردیش میں لاکھوں لوگوں کے لئے کورونا ویکسین خریدی جا سکتی تھی مگر یہ سرکار عوام کو دھوکہ دینے کا مستقل کام کررہی ہے جسے عوام کبھی معاف نہیں کرینگے۔
Published by: Sana Naeem
First published: May 07, 2021 01:37 PM IST