ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

کرناٹک کایہ شہربن رہا ہے کورونا کی کپٹل سٹی: نئے معاملوں میں اضافے کے بعد انتظامیہ چوکس

ملک میں کورونا کا قہر بڑھتا ہی جا رہا ہے۔ ہر ریاست میں پوزیٹیو کیسز اور اموات کی شرح میں اضافہ دیکھا جا رہا ہے۔ ایسے میں کرناٹک میں یہی کچھ صورتحال ہے

  • Share this:
کرناٹک کایہ شہربن رہا ہے کورونا کی کپٹل سٹی: نئے معاملوں میں اضافے کے بعد  انتظامیہ چوکس
ڈیمو فوٹو

گلبرگہ:ملک میں کورونا کا قہر بڑھتا ہی جا رہا ہے۔ ہر ریاست میں پوزیٹیو کیسز اور اموات کی شرح میں اضافہ دیکھا جا رہا ہے۔ ایسے میں کرناٹک میں یہی کچھ صورتحال ہے، تاہم دیگر ریاستوں کے مقابلے میں کرناٹک میں کیسزکے اضافے اور اموات کی شرح میں گزشتہ ہفتے کمی ریکارڈ کی گئی تھی لیکن رواں ہفتے میں اس تعداد میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے۔ جمعرات کو ایک ہی دن میں کرناٹک میں 36 پوزیٹیو معاملوں کے اچانک منظر عام پرآنے سے ایک بار پھر ریاست میں ہلچل دیکھی جا رہی ہے۔ شمالی کرناٹک میں یہ وبا تیزی سے اپنے پر پسار رہی ہے۔ بیجاپور، بیلگام اور گلبرگہ اس میں سر فہرست ہے۔


گلبرگہ جو پہلے کرناٹک کے متاثرہ شہروں میں 10ویں یا11 ویں مقام پر تھا۔ آج چوتھے نمبر پر پہنچ گیا ہے۔ کورونا سے اب تک اس شہر میں 3 اموات ہوئی ہیں۔ اس طرح اب یہ شہر کرناٹک کا کورونا کیپٹل بننے کی سمت جا رہا ہے۔ ملک میں کورونا سے پہلی موت بھی اسی شہر میں ریکارڈ کی گئی تھی۔ 76سالہ شخص کا 10 مارچ کو انتقال ہوا تھا۔گلبرگہ میں کورونا کا قہروقت کے ساتھ ساتھ بڑھتا ہی جا رہا ہے۔منگل کو3 ، بد ھ کو 1 اور جمعرات کو 3 مریضوںرپورٹیں پوزیٹیو آئی ہے۔ اسطرح گلبرگہ میں اب تک20پوزیٹیو کیس درج کئے جا چکے ہیں۔ جس میں ایکٹیو معاملوں کی تعداد 14ہے۔ 3 اموات اور3 پوزیٹیو کیس صحتیاب ہو کر ڈسچارج ہو چکے ہیں۔


فکر کرنے والی بات یہ بھی ہے کہ یوزیٹیو کیس میں  چار   کمسن  بھی شامل ہیں۔  جن میں 1 سالہ ، 2سالہ ،5 سالہ لڑکےاور10سالہ لڑکی  کی رپورٹیں پوزیٹیو آئی ہیں۔یہ معاملہ یہیں پر تھمے ایسا نہیں لگ رہا ہے۔  شہر کے ای ایس آئی ہاسپٹل میں ابھی بھی167 افراد کوشک کی بنیاد پر آئسولیٹڈ رکھا گیا ہے۔ 870 افراد گھروں میں ہوم کورنٹین ہیں۔ کووڈ پوزیٹیو افراد سے پرائمری کونٹیکٹ میں آنے والوں کی تعداد ،308 سے تجاوز کر گئی ہے، جبکہ سکنڈری کونٹیکٹ افراد کی تعداد1255سے تجاوز کر گئی ہے۔ اب تک یہاں600 کووڈ  ٹیسٹ کئے جا چکے ہیں۔380 کی رپورٹ آ چکی ہے۔جبکہ  مزید 201افراد کے طبی جانچ کی رپورٹ کا انتظار ہے۔ایسے میں اس تعداد میں اضافہ ہوتا ہے تو کوئی تعجب کی بات نہیں ہوگی۔



ضلع انتظامیہ کے اقداماتکورونا پر قابو پانے کیلئے ضلع انتظامیہ کی جانب تمام تر اقدامات کئے جا رہے ہیں۔ شہر کے گلبرگہ انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسس (جمس)میں ہی ٹیسٹ کئے جا رہے ہیں۔ مریضوں کی بڑھتی تعداد کے پیش نظر ای ایس آئی ہاسپٹل اور جمس میں مشتبہ مریضوں کی نگرانی کیلئے 700 بیڈس تیار کئے گئے ہیں۔ ضلع میں ابھی صرف 40 وینٹی لیٹر موجود ہیں۔ مزید 44وینٹی لیٹرس فراہم کرنے کی حکومت کو درخواست روانہ کی گئی ہے۔ اسکے علاوہ جمس مزید 20 وینٹی لیٹرس خرید رہا ہے۔ شہر کے چاروں میڈیکل کالجس سے ماہر ڈاکٹرس کی ٹیمیں تشکیل دی گئی ہیں۔جو کورونا پر قابو پانے کے اقدامات کے تعلق سے انتظامیہ کو مشورے بھی دیں گے۔

گلبرگہ ایم پی جو اتفاق سے ایم ڈی ڈاکٹر بھی ہیں، ڈاکٹر امیش جادھو بھی مسلسل ای ایس آئی ہاسپٹل اور جمس کا دورہ کر رہے ہیں۔ خدمات پر مامور ڈاکٹرس کو پی پی ای بھی فراہم کیا جا رہا ہے۔دفعہ 144کانفاذگلبرگہ میں 16 مارچ سے ہی نافذ ہے۔ وقفے وقفے میں اس میں توسیع کی جاتی رہی ہے۔ وزیر اعظم کی جانب سے لاک ڈاؤن میں اعلان سے قبل ہی گلبرگہ ڈی سی نے پیر شام کوایک حکمنامہ جا ری کرتے ہوئے 30 اپریل تک دفعہ144 کے نفاذ میں توسیع کردی۔ ایک دو دنوں میں مزید دو ایک ٹیموں کی آمد متوقع ہے۔ سڑکوں پر بے سبب گھومنے والوں کی 4000 گاڑیوں کو ٹریفک پولیس نے ضبط کیا ہے۔ 10 سے زیادہ افراد کو بلا عذر باہر گھومنے اور دفعہ 144کی خلاف ورزی کرنے پر گرفتار بھی کیا ہے۔
First published: Apr 16, 2020 09:25 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading