ہوم » نیوز » وطن نامہ

آئی سی ایم آر کا انتباہ! حمل سے بچے کو ہوسکتاہے کوروناوائرس

  • Share this:
آئی سی ایم آر کا انتباہ! حمل سے بچے کو ہوسکتاہے کوروناوائرس
پولے کے مطابق وادی میں مناسب پروٹوکول کے حساب سے کافی کمی دیکھنے کو مل رہی ہے اور یہی وجہ ہے کہ مسائل اُبھر کر سامنے آ رہے ہیں ۔ انہوں نے ریڈ زون علاقوں میں حاملہ خواتین کو بہتر طبی سہولیات فراہم کرنے کی بات کی اور طبی عملہ کے ساتھ ساتھ آشا ورکروں کی خدمات حاصل کرنے کی بھی بات کی ۔

کوروناوائرس کے انفیکشن کا پرہ لگانے کیلئے سائنٹسٹ جتنی تحقیق کررہے ہیں۔ اس سے وائرس کی طاقت اور اس سے ہونے والے خطرے کا پتہ چل رہا ہے۔ انڈین کاؤنسل آف میڈیکل ریسرچ (ICMR) نے اب وارننگ دی ہے کہ ایک حاملہ ماں سے بچے تک کورونا وائرس (COVID-19) کے انفیکشن کا امکان ہوسکتا ہے حالانکہ انہوں نے یہ بھی صاف کیا ہے کہ حمل کے دوران بچے میں اس کا کتنا خطرہ ہے اور بچے پر اس کا کتنا اثر ہوسکتا ہے اس کے بارے میں مطالعہجاری ہے۔


انڈین کاؤنسل آف میڈیکل ریسرچ نے کہا کہ کوروناوائرس کی جانچ میں سائنٹصٹ کو جو ثبوت ملے ہیں اس سے معلو م ہوا کہ وائرسل کا اثر جنم سے پہلے بھی بچے میں ہوسکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بچے کو یہ یہ اثر ماں کے حمل میں رہتے ہوئے بھی ہوسکتا ہے اور متاثر ماں سے ڈلیوری کے دوران بھی۔ سائنسداں نے صاف کیا ہے کہ فی الحال کورونا وائرس کے دودھ پلانے کی جانچ کے بارے میں کوئی معاملے سامنے نہیں آئے ہیں۔


حاملہ خواتین کیلئے گائڈ لائن جاری کرتے ہوئے آئی سی ایم آر نے کہا کہ حمل کے دوران کئی خواتین میں نمونیا کی شکایت ملی ہے لیکن یہ سنگین مسئلہ نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایسی خواتین کا علاج کرتے وقت دیکھا گیا ہے کہ وہ جلد ہی ٹھیک ہوجاتی ہیں۔ انہوں نے کہاکہ اس دوران دل کی بیماری والی حاملہ خواتین کو سب سے زیادہ خطرہ ہوتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ابھی اہم ایسے اعدادوشمار نہں جٹاپائے ہیں جس سے یہ پتہ لگایا جاسکے کہ اسقاط حمل یا ابتدائی حمل میں اس کا کتنا نقصان اور خطرہ ہوتا ہے۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ابھی وائرس ٹیراٹو جینک ہونے کے کوئی ثبوت نہیں ملے ہیں۔

First published: Apr 14, 2020 09:03 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading