ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

اب ہندوستان میں بھی امریکی جانسن اینڈ جانسن کورونا ویکسین ہوسکتی ہے دستیاب ، تلنگانہ میں قائم ’’بیولوجیکل ای‘‘ سے ملایا ہاتھ

جانسن اینڈ جانسن کے ایک بیان کے مطابق ’’جانسن اینڈ جانسن بایولوجیکل ای لمیٹڈ کے ساتھ جانسن COVID-19 ویکسین کی تیاری پر کام کر رہے ہیں۔ ہمیں یقین ہے کہ بایولوجیکل ای ہمارے عالمی COVID-19 ویکسین سپلائی نیٹ ورک کا ایک اہم حصہ ہوگا‘‘۔

  • Share this:
اب ہندوستان میں بھی امریکی جانسن اینڈ جانسن کورونا ویکسین ہوسکتی ہے دستیاب ، تلنگانہ میں قائم ’’بیولوجیکل ای‘‘ سے ملایا ہاتھ
اب ہندوستان میں بھی امریکی جانسن اینڈ جانسن کورونا ویکسین ہوسکتی ہے دستیاب ، تلنگانہ میں قائم ’’بیولوجیکل ای‘‘ سے ملایا ہاتھ ۔ (Image: AP/File)

امریکی دوا ساز کمپنی جانسن اینڈ جانسن (Johnson and Johnson) نے عالمی وبا کورونا وائرس کے خلاف ویکسین کی تیاری کے لئے تلنگانہ میں قائم بائیوولوجیکل ای لمیٹڈ (Biological E Limited) کے ساتھ ہاتھ ملایا ہے۔ جانسن اینڈ جانسن نامی کووڈ۔19 ویکسین فی الحال امریکہ، یورپ اور تھائی لینڈ اور جنوبی افریقہ سمیت دیگر ممالک میں طبی طور پر منظور شدہ ہے۔


جانسن اینڈ جانسن کے ایک بیان کے مطابق ’’جانسن اینڈ جانسن بایولوجیکل ای لمیٹڈ کے ساتھ جانسن COVID-19 ویکسین کی تیاری پر کام کر رہے ہیں۔ ہمیں یقین ہے کہ بایولوجیکل ای ہمارے عالمی COVID-19 ویکسین سپلائی نیٹ ورک کا ایک اہم حصہ ہوگا ، جہاں ویکسین تقسیم کرنے سے پہلے متعدد مینوفیکچرنگ سائٹس مختلف سہولیات کے ساتھ ہماری ویکسین کی تیاری میں شامل ہے‘‘۔


جانسن اینڈ جانسن کی جانب سے جاری بیان میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ کمپنی دنیا بھر میں ہماری COVID-19 ویکسین کی فراہمی کے لئے ہماری مینوفیکچرنگ صلاحیتوں کو بڑھانے اور وسیع پیمانے پر متحرک کرنے کے لئے چوبیس گھنٹے کام کر رہی ہے۔ جانسن اینڈ جانسن کے بیان کے مطابق ’’ہم اس وبائی مرض کے خاتمے میں مدد کے لئے حکومتوں، صحت کے حکام اور دیگر کمپنیوں کے ساتھ جاری اور وسیع تر تعاون اور شراکت کی تعریف کرتے ہیں‘‘۔


مذکورہ کمپنی نے کہا کہ حکومت ہند سے بات چیت کررہی ہے کہ وہ ہندوستان میں جانسن کووڈ۔19 ویکسین امیدوار کا کلینیکل مطالعہ شروع کرے ، جو ریگولیٹری منظوری کے تحت ہے۔

واضح رہے کہ بدھ کی صبح 8 بجے وزارت صحت و خاندانی بہبود کی جانب سے جاری کردہ اعدادوشمار کے مطابق فعال کیس مزید کم ہوکر 32,26,719 رہ گئے ہیں جو مجموعی انفیکشن میں 12.66 فیصد ہیں جبکہ قومی COVID-19 کی وصولی کی شرح بہتر ہوکر 86.23 فیصد ہوگئی ہے۔ حکومت کے ایک حالیہ اعداد و شمار نے انکشاف کیا ہے کہ کوویڈ 19 کے ذریعہ پوری ہندوستانی آبادی کا صرف 2 فیصد حملہ ہوا ہے اور باقی 98 فیصد ابھی بھی کمزور ہیں۔

وزارت صحت نے  اس بات پر زور دیا کہ دوسرے ممالک کے برعکس جہاں کووڈ متاثرہ آبادی کا حصہ بہت زیادہ ہے ، ہندوستان اپنے قابو پانے کے اقدامات پر عمل پیرا ہوکر اسے کم رکھنے میں اب بھی کوشش کررہا ہے۔
Published by: Mohammad Rahman Pasha
First published: May 19, 2021 08:16 PM IST