ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

کوروناسے جنگ:کورنٹائن سینٹروں میں بنیادی سہولت کافقدان،مریضوں کو پریشانی، انتظامیہ کی خاموشی

انتظامیہ کی جانب سے ضلع بھر میں اسپتال سمیت کئی ہوٹلوں کو کورنٹائن میں تبدیل کیا گیا ہے لیکن کورنٹاین سینٹروں میں سہولت کا نہ ملنا ایک سوالیہ نشان ہے ۔

  • Share this:
کوروناسے جنگ:کورنٹائن سینٹروں میں بنیادی سہولت کافقدان،مریضوں کو پریشانی، انتظامیہ کی خاموشی
کورنٹاین سینٹروں میں سہولت کا نہ ملنا ایک سوالیہ نشان

جموں وکشمیر کے ضلع رامبن میں کورونا وائرس کی وبا ءسے نمٹنے کیلئے انتظامیہ کے اقدامات کی حقیقت یہ بھی کہ کورنٹائن کئے گئے افراد کو معقول غذا فراہم نہیں کی جارہی اور نہ ہی اسکی صحت و صفائی کیلئے کورنٹائن سینٹروں میں کوئی انتظام ہے ۔پینے کے پانی کی قلت کے ساتھ ساتھ طبی سہولت کی عدم فراہمی بھی حکومت و انتظامیہ کے تمام تر دعویٰ کو کھوکھلا ثابت کر رہی ہیں ۔واضح رہے گزشتہ دنوں ضلع رامبن کے ڈھلواس میں کورنٹائن کیلئے منتقل کئے گئے افراد کی شکایات موصول ہوئی کہ نہ تو انکا کوئی میڈیکل ٹیسٹ ہو اور نہ ہی پینے کے پانی کے سمیت انہیں معقول غذا فراہم کی جارہی ہے ۔وہیں کاغذی طور پر انتظامیہ دعویٰ کر رہی ہے۔علامتی تصویر


باتھ روم میں ہاتھ دھونے کیلئے صابن سمیت کسی بھی طرح کے سینیٹائزر بھی مہیا نہیں کروائے جارہے کورونا وباء سے نمٹنے کیلئے حکومت و انتظامیہ کی جانب سے کورنٹائن کئے لوگوں کو پہنچائی جانی والی سہولتوں کا زمینی سطح پر نہیں پہنچ پانا ایکبڑا سوال ہے۔ وہیں ضلع رامبن میں مختلف مقامات پر 106 لوگوں کورنٹائن رکھا گیا ہے وہیں 70 لوگ کورنٹائن مکمل کر کے اپنے گھروں کو واپس بھیجے جا چکے ہیں۔ انتظامیہ کی جانب سے ضلع بھر میں اسپتال سمیت کئی ہوٹلوں کو کورنٹائن میں تبدیل کیا گیا ہے لیکن کورنٹاین سینٹروں میں سہولت کا نہ ملنا ایک سوالیہ نشان ہے ۔جس پر گورنر انتظامیہ کو مداخلت کرنی چاہیے۔

Published by: Mirzaghani Baig
First published: Apr 19, 2020 08:02 PM IST