ہوم » نیوز » وسطی ہندوستان

بنگال میں کووڈ19 کے بحران کے باوجود اسپتال میں اہم سہولیات کا فقدان اسپتال میں ایڈمٹ نہ ہونے کی وجہ سے ایک کورونا مریض نے توڑا دم

بنگال میں کورونا کے مریضوں کی تعداد میں اضافے کے بعد اب سپتالوں میں ان کے داخلے کو لیکر ہورہی ہے پریشانی ریاست کے بیشتر سرکاری اسپتالوں میں بیڈ نہ ہونے کی وجہ سے کورونا کے مریضوں کو ہورہی ہے۔

  • Share this:
بنگال میں کووڈ19 کے بحران کے باوجود اسپتال میں اہم سہولیات کا فقدان اسپتال میں ایڈمٹ نہ ہونے کی وجہ سے ایک کورونا مریض نے توڑا دم
فائل فوٹو

Tبنگال میں کورونا کے مریضوں کی تعداد میں اضافے کے بعد اب سپتالوں میں ان کے داخلے کو لیکر ہورہی ہے پریشانی ریاست کے بیشتر سرکاری اسپتالوں میں بیڈ نہ ہونے کی وجہ سے کورونا کے مریضوں کو ہورہی ہے۔ پریشانی ایسے ہی حالات سے دوچار والدین نے علاج نہ ملنے کے باعث اپنے لخت جگر کو پل پل موت کے قریب جاتے ہوٸے دیکھا بنگال کے چوبیس پرگنہ کے ایک18 سالہ نوجوان سوبھراجیت چٹرجی جس نے امسال 12 ویں جماعت کا بورڈ امتحان دیا تھا پیشاب میں تکلیف کی شکایت پر گھر والوں نے اسے کمرہٹی کے ایک اسپتال میں داخل کروایا جہاں اس کی کورونا رپورٹ پازیٹیو آنے کے بعد اسپتال نے گھر والوں کو دوسرے بڑے اسپتال میں بیٹے کو داخل کرانے کا مشورہ دیا۔


گھر والوں نے اس کے بعد کئی نرسنگ ہوم و سرکاری اسپتال کاچکر لگایا لیکن کہیں بھی ان کے بیٹے کو علاج کے لٸے داخل نہیں کیا گیا سرکاری اسپتال مں بھی بیڈ نہ ہونے وجہ بتاتے ہوٸے داخل نہیں کیا گیا، بعد میں گھر والوں نے کولکاتہ پولیس ہیڈ کوارٹر سے مدد کی اپیل کی جس کے بعد کولکاتا میڈیکل کالج اینڈ اسپتال میں مریض کو داخل تو کیا گیا لیکن تب تک کافی دیر ہوچکی تھی اور سبھراجیت کورونا سے اپنی لڑاٸی میں زندگی کی جنگ ہار گیا۔


والدین بیٹے کی موت سے گہرے صدمے میں ہیں انکے مطابق انکے بیٹے کو علاج نہ ملنے کی وجہ سے موت ہوٸی ہے والدین نے انصاف کی اپیل کی ہے حکومت سے ان اسپتالوں کے خلاف کاررواٸی کا مطابہ کیا ہے ساتھ ہی کٸی سوال بھی اٹھاٸے ہیں والدین کے مطابق حکومت کورونا سے تحفظ کے لئے لوگوں میں بیداری لانے و علاج کی سہولیات فراہم کرنے کا دعوی کررہی ہے لیکن علاج کے لٸے انتظامات کے دعوے کھوکلے ہیں۔


قابل غور ہے کہ اسپتالوں میں مریضوں میں اضافے کے بعد سہولیات میں کوٸی اضافہ نہیں کیا گیا انتظامیہ کی جانب سے انکواٸری کا یقین دلایا گیا ہے۔
Published by: Sana Naeem
First published: Jul 14, 2020 06:40 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading