ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

مدھیہ پردیش میں فرضی پلازمہ کا کاروبار عروج پر، 2 درجن سے زائد کورنٹائن مریضوں کی موت

مدھیہ پردیش کانگریس کمیٹی کے ترجمان بھوپیندر گپتا کا کہنا ہے کہ اس بات کی تصدیق ہوچکی ہے کہ ایک سو سولہ لوگوں کونقلی پلازمہ چڑھایاگیا ہے جس میں سے پچیس لوگوں کی اپنی جان سے ہاتھ دھونا پڑا ہے۔

  • Share this:

مدھیہ پردیش میں کورونا وائر س کی وبا (Covid-19 pandemic) کا خاتمہ کرنے کے لئے حکومت جہاں نت نئی تدبیریں کر رہی ہے وہیں حکومت کی ناک کے نیچے نقلی پلازمہ فروخت کرنے کا کاروبار بھی جاری ہے۔ مدھیہ پردیش میں کورونا وائرس کے ایکٹو مریضوں کی تعداد میں کمی آرہی ہے اور شفایابی کی شرح میں تیزی سے اضافہ جاری ہے۔ گزشتہ چوبیس گھنٹے میں کورونا کے ایک ہزار پانچ نئے معاملے جہاں سامنے آئے ہیں۔ وہیں کورونا کی وبائی بیماری سے ریاست میں بارہ مریضوں کی موت بھی ہوئی ہے۔ پچھلے چوبیس گھنٹے میں ریاست میں کورونا وائرس کے ایک ہزار ترپن مریضوں مریض ڈسچارج ہوئے ہیں ۔


ایم پی میں کورونا مریضوں کی تعداد بڑھ کر دو لاکھ تینتس ہزار تین سو چوبیس ہوگئی ہے۔ ابتک دو لاکھ اٹھارہ ہزار آٹھ سو اٹھائیس مریض صحت یاب ہوچکے ہیں ۔ ریاست میں کورونا کے تین ہزار پانچ سو دو مریضوں کی ابتک جہاں موت ہوچکی ہے وہیں ریاست میں کورونا کے دس ہزار نوسو چورانوے مریضوں کا علاج جاری ہے۔ دوسری جانب نقلی پلازمہ کی فروخت کو لیکرکانگریس نے حکومت کو سخت تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔


مدھیہ پردیش کانگریس کمیٹی کے ترجمان بھوپیندر گپتا کا کہنا ہے کہ اس بات کی تصدیق ہوچکی ہے کہ ایک سو سولہ لوگوں کونقلی پلازمہ چڑھایاگیا ہے جس میں سے پچیس لوگوں کی اپنی جان سے ہاتھ دھونا پڑا ہے۔ کانگریس پورے معاملے کو لیکر جوڈیشیل انکوائری کی مانگ کررہی ہے وہیں مدھیہ پردیش کے وزیر داخلہ ڈاکٹر نروتم مشرا نے نقلی پلازمہ کے ساتھ نقلی کورونا ویکسین کے بھی بازار میں آنے کا امکان ظاہر کیا ہے۔ ڈاکٹر نروتم مشرا کا کہنا ہے کہ حکومت عوام کی صحت کو لیکر بیدار ہے اور عوام کی صحت کے ساتھ کسی قسم کا کھلواڑ نہیں ہونے دیگی۔اس لئے سرکار نے نقلی دواؤں کا کاروبا ر کرنے والوں کے خلاف تین سال کی سزا کو ختم کرتے ہوئے عمر قید کی سزا دینے کا فیصلہ کیا ہے۔

Published by: sana Naeem
First published: Dec 23, 2020 12:45 PM IST