உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ٹیکہ کاری مہا ابھیان کے دوسرے دن سینٹر کم ہونے سے بھٹکتے رہے لوگ

    Youtube Video

    راجدھانی بھوپال میں سات سو چارسینٹر پر ویکسین لگانے کا کام کیاگیاتھا مگر مہا ابھیان کے دوسرے دن ویکسین کی کمی کے سبب نصف سے زیادہ ویکسین سینٹر بند ہونے سے ویکسین لگوانے والوں کو مایوس ہونا پڑا۔

    • Share this:
    مدھیہ پردیش میں کورونا کی وبائی بیماری کے خاتمہ کے لئے حکومت کی جانب سے کورونا ویکسی نیشن کا دو روزہ مہا ابھیان چلایا گیا۔ دو روزہ کورونا ویکسی نیشن مہا ابھیان کے پہلے دن جہاں چوبیس لاکھ سے زیادہ لوگوں کے ذریعہ ٹیکہ لگواکر ریکارڈ بنایا گیا۔ وہیں دوسرے دن ویکسین کی کمی کے سبب  راجدھانی بھوپال سمیت دوسرے اضلاع میں بڑی تعداد میں ویکسین کے سینٹر بند ہونے سے ویکسین لگوانے والوں کو نہ صرف در در بھٹکنا پڑا بلکہ انہوں نے حکومت کے تئیں اپنی سخت ناراضگی کا اظہار بھی کیا۔
    دو روزہ کورونا ویکسی نیشن مہاابھیان کے پہلے دن راجدھانی بھوپال میں سات سو چارسینٹر پر ویکسین لگانے کا کام کیاگیاتھا مگر مہا ابھیان کے دوسرے دن ویکسین کی کمی کے سبب نصف سے زیادہ ویکسین سینٹر بند ہونے سے ویکسین لگوانے والوں کو مایوس ہونا پڑا۔ کھانوں گاؤں کے محمد شبیر کہتے ہیں کہ بات مہا ابھیان کی حکومت کے ذریعہ کی جا رہی ہے ۔ کل کھانوں گاؤں میں دو سینٹر بنائے گئے تھے مگر آج ایک بھی نہیں ہے۔دونوں سینٹر کو بند کردیا گیا ہے۔ پیر گیٹ ویکسین لگوانے کےلئے بیوی کے ساتھ لیکن وہاں بھی سینٹر بند تھا ۔ اب لوگوں سے پوچھتے ہوئے نعمت پورا میں اسٹار شادی ہال کے سینٹر میں آیاہوں اور دھوپ میں قطار میں کھڑا ہوں۔حکومت سینٹر بند کر رہی ہے تو اسے عوام کو اطلاع دینا چاہیے۔
    وہیں مدھیہ پردیش کانگریس کمیٹی کے سکریٹری عبدالنفیس کہتے ہیں کہ اس حکومت کے قول و فعل میں ہر قدم پر تضاد ہے ۔ حکومت چار کروڑ سے زیادہ لوگوں کو ویکسین لگانے کی بات کہہ رہی ہے لیکن سچ یہ ہے کہ ابتک صرف اکہتر لاکھ لوگوں کو ویکسین کے دونوں ڈوز لگائے گئے ہیں ۔باقی عوام ویکسین کے لئے قطار میں کھڑی ہے۔ آپ نے خود دیکھا کہ کل بھوپال میں سات سو چار سینٹر بنائے گئے تھے اور آج تین سو بھی نہیں ہے ۔ ویکسین ہے نہیں اور مہا ابھیان کااعلان کردیا گیا۔ آپ خود دیکھے لوگ ویکسین کے لئے در در بھٹک رہے ہیں اور جہاں کہیں ویکسین لگائی بھی جا رہی ہے وہاں پر سوشل ڈسٹنس پر عمل نہیں ہو پا رہا ہے ۔ حکومت کو اپنی پیٹھ تھپ تھپانے کے بجائے عوام کی صحت کو محفوظ کرنے کے لئے کام کرنا چاہیہے ۔

    وہیں بی جے پی نے کانگریس کے اعتراض پر جوابی حملہ کیا ہے ۔ مدھیہ پردیش بی جے پی ترجمان نیہا بگا کہتی ہیں کہ آفتاب میں کیڑے میں نکالنا کانگریس کی عادت ہے ۔ کمل ناتھ حکومت میں کورونا کے لئے کوئی کام تو کیا نہیں کیاگیا اب بی جے پی حکومت کی کوشش سے ریکارڈ پر ریکارڈ بن رہے ہیں ۔عوام گھروں سے نکل کر ویکسین لگوارہے ہیں تو کانگریس کے پیٹ میں درد ہو رہا ہے ۔شیوراج سنگھ حکومت عوام کو امرت دے رہی ہے اور کانگریس عوام کے ذہنوں میں زہر گھولنے کا کام کر رہی ہے اور کانگریس کو اس زہر گھولنے کی سزا عوام ضرور دینگے ۔
    Published by:Sana Naeem
    First published: