ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

ممبئی میں کورونا کے ریکارڈ 1922 نئے معاملات ، بی ایم سی کی ورک فرام ہوم کی ہدایت

BMC on Mumbai Coronacases: بی ایم سی نے 34 علاقوں کو کنٹینمنٹ زون کے طور پر نشان زد کیا ہے ۔ 14 مارچ کو ممبئی میں کورونا وائرس کے 1963 کیسیز سامنے آئے تھے اور یہ ایک سال کے اندر ایک دن میں سب سے بڑی تعداد ہے ۔

  • Share this:
ممبئی میں کورونا کے ریکارڈ 1922 نئے معاملات ، بی ایم سی کی ورک فرام ہوم کی ہدایت
ممبئی میں کورونا کے ریکارڈ 1922 نئے معاملات ، بی ایم سی کی ورک فرام ہوم کی ہدایت

ممبئی میں کورونا وائرس کے بڑھتے قہر کے پیش نظر بی ایم سی نے سبھی ٹیچروں اور اسکول اسٹاف کو گھر سے کام کرنے کی ہدایت جاری کی ہے ۔ بتادیں کہ ممبئی کورونا وائرس کی دوسری لہر کی گرفت میں ہے ۔ بی ایم سی کی ہدایت کے مطابق 17 مارچ سے 12 ویں کلاس تک سبھی بورڈ کے ملازمین کو ورک فرام ہوم کرنے کیلئے کہا گیا ہے ۔ پہلے تعلیمی ملازمین کو اسکول آنے کی اجازت تھی ۔ ٹیچروں کو اسکول کے احاطہ سے آن لائن کلاسیز لینے کی اجازت تھی ۔ سرکلر میں کہا گیا ہے کہ اب ای لرننگ کے ذریعہ گھر سے پڑھائی ہوگی ۔


ممبئی میں کورونا کے ریکارڈ معاملات


غور طلب ہے کہ ممبئی میں ہر روز آنے والے کورونا وائرس کے معاملات کی تعداد دو ہزار کے قریب پہنچ گئی ہے ۔ منگل کو ممبئی میں کورونا وائرس کے 1922 معاملات سامنے آئے جبکہ ایک دن پہلے شہر میں کورونا کے 1712 معاملات سامنے آئے تھے ۔ ممبئی میں کورونا کے ایک دن میں 1922 معاملات ایک سال کے اندر 24 گھنٹوں میں دوسری سب سے بڑی تعداد ہے ۔


بی ایم سی کی جانب سے جاری بلیٹن کے مطابق شہر میں ایسی 246 عمارتوں کو سیل کردیا گیا ہے ، جہاں پانچ سے زیادہ معاملات سامنے آئے ہیں ۔ نیز بی ایم سی نے 34 علاقوں کو کنٹینمنٹ زون کے طور پر نشان زد کیا ہے ۔ 14 مارچ کو ممبئی میں کورونا وائرس کے 1963 معاملات سامنے آئے تھے اور یہ ایک سال کے اندر ایک دن کی سب سے بڑی تعداد تھی ۔

شادی اور آخر رسوم میں صرف 50 لوگوں کو اجازت

بی ایم سی نے اپنی گائیڈ لائن میں کہا ہے کہ سنگل اسکرین اور ملٹی پلیکس کے ساتھ ہوٹل اپنی پچاس فیصدی صلاحیت کے ساتھ کام کریں گے ۔ ریاست میں کوئی بھی سماجی ، سیاسی اور مذہبی سرگرمی نہیں ہوگی ۔ ضوابط کے مطابق شادی اور آخری رسوم میں صرف 50 لوگ ہی شامل ہوسکتے ہیں ۔ صحت اور ضروری خدمات کے علاوہ سبھی دفاتر 50 فیصد صلاحیت کے ساتھ ہی کام کریں گے ، لیکن مشورہ ہے کہ ورک فرام ہوم کریں ۔

خیال رہے کہ مہاراشٹر میں اچانک سے کورونا وائرس کے معاملات بڑھنے کی جانچ کرنے پہنچی مرکزی ٹیم نے اپنی رپورٹ میں کہا ہے کہ ریاست میں ٹریکنگ اور ٹریسنگ میں کافی لاپروائی برتی گئی ہے ۔ رپورٹ کی بنیاد پر مرکزی وزارت صحت کے سکریٹری راجیش بھوشن نے ریاستی حکومت کو خط لکھا ہے ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Mar 16, 2021 11:59 PM IST