ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

میرٹھ : موت کےبعد ہوئی مریض میں کورونا وائرس کی تصدیق، رابطے میں آنے والوں میں بڑھا انفیکشن کا خطرہ

مریض کی موت کے بعد آئی رپورٹ میں کورونا انفیکشن کی تصدیق ہوئی ہے۔ قیصر گنج کے غلّہ کاروباری کی موت نے محکمہ صحت پر کئی سوال کھڑے کر دیے ہیں۔

  • Share this:
میرٹھ : موت کےبعد ہوئی مریض میں کورونا وائرس کی تصدیق، رابطے میں آنے والوں میں بڑھا انفیکشن کا خطرہ
شرد پوار نے آج کہا کہ جلد ہی کورونا بیماری کا مکمل خاتمہ ممکن نہیں ہوگا اور اب یہ ضروری ہوگیا ہے۔

میرٹھ میں کورونا وائرس سے موت کے اب تک کے پانچ معاملوں میں یہ پہلا معاملہ سامنے آیا ہے جس میں مریض کی موت کے بعد آئی رپورٹ میں کورونا انفیکشن کی تصدیق ہوئی ہے۔ قیصر گنج کے غلّہ کاروباری کی موت نے محکمہ صحت پر کئی سوال کھڑے کر دیے ہیں۔ مرنے والے شخص کے اہل خانہ نے الزام لگایا ہے کہ مریض میں پانچ روز قبل ہی کورونا انفیکشن کی علامات ظاہر ہو رہی تھی مریض بخار کے ساتھ فلو جیسی علامت ظاہر ہونے کے بعد گھر والوں نے میڈیکل میں ڈاکٹر کو بھی دکھایا لیکن مریض کو بھرتیکرکے ٹیسٹ کرنے کے بجائے میڈیکل اسٹاف نے بخار کی دوا دیکر واپس بھیج دیا لیکن گزشتہ روز مریض کی طبیعت زیادہ خراب ہونے کے بعد میڈیکل میں داخل کرایا گیا تھا اور 24 گھنٹے میں ہی مریض کی موت ہو گئی۔


اب جب ٹیسٹ رپورٹ آئی ہے تو اس میں کورونا انفیکشن کی تصدیق ہوئی ہے۔ فوت ہونے والے شخص کے فرزند کا کہنا ہے کہ طبیعت خراب ہونے کے بعد اگر ڈاکٹر نے مریض کو بھرتیکرکے علاج کیا ہوتا تو شاید آج ان کے والد زندہ ہوتے۔ مرنے والے شخص کے اہل خانہ کا یہ بھی کہنا ہے کہ  میڈیکل کالج کی لاپرواہی کی وجہ سے گھر کے دوسرے لوگوں میں بھی انفیکشن کا خطرہ پیدا ہوگیا ہے۔


پری میڈیکل کالج کے پرنسپل آر سی گپتا کا کہنا ہے کہ میڈیکل میں ایسے بھی مریضوں کو دیکھا جا رہا ہے جو او پی ڈی کے لیے آتے ہیں وہیں جہاں تک سوال کورونا انفیکشن سے ٹیسٹ کا ہے تو محدود وسائل میں بھی ٹیسٹ کئے جا رہے ہیں۔ اس میں کئی بار رپورٹ آنے میں تھوڑا وقت لگتا ہے اس کی وجہ سے انفیکشن کی تصدیق دیر سے ہوتی ہے لیکن میڈیکل اسٹاف کے کسی طرح کی لاپرواہی سے میڈیکل کالج کے پرنسپل نے انکار کیا ہے۔

First published: Apr 28, 2020 08:22 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading