ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

کووڈ۔19: آکولہ میں لاک ڈاون کے دوران مسلم ڈاکٹر کی مفت خدمات نے جیتا دل

لاک ڈاون کے سبب ان لوگوں کے روزگار کے ذرائع پوری طرح ختم ہوچکے ہیں۔ ایسے میں ان کیلئے علاج کرپانا بھی مشکل ہوگیا ہے۔ اسی بات کو خیال میں رکھتے ہوئے جی آر اسپتال نے یہ خدمت شروع کی ہے۔

  • Share this:
کووڈ۔19: آکولہ میں لاک ڈاون کے دوران مسلم ڈاکٹر کی مفت خدمات نے جیتا دل
لاک ڈاون کے سبب ان لوگوں کے روزگار کے ذرائع پوری طرح ختم ہوچکے ہیں۔ ایسے میں ان کیلئے علاج کرپانا بھی مشکل ہوگیا ہے۔ اسی بات کو خیال میں رکھتے ہوئے جی آر اسپتال نے یہ خدمت شروع کی ہے۔

کوروناوائرس (Covid-19 pandemi) کے پپھیلاؤ کو روکنے کے مد نظر نافذ کئے گئے لاک ڈاون کی وجہ سے عوام پریشان حال  ہے۔ لوگوں کو روزگار نہ ہونے کی وجہ سےاسپتال اور میڈیکل کا بل بھرنے سے بھی قاصر ہیں۔ ایسے میں آکولہ کے ایک مسلم ڈاکٹر نے  مصیبت کی اس گھڑی میں لوگوں کا مفت میں علاج کرنے کا سلسلہ شروع کیا ہے۔

ڈاکٹر شفیق خان دپیک چو ک پر واقع اپنے جی آر اسپتال میں روزنہ سیکڑوں بچوں کا مفت میں علاج کررہے ہیں۔علاج کے علاوہ ڈاکٹر شفیق نے سیکڑوں غریب اور ضرورت مند افرادمیں راشن کیٹ بھی تقسیم کررہے ہیں۔نیوز ایٹین اردو سےبات کرتے ہوئے ڈاکٹر شفیق نے بتایا کہ ضلع انتظامیہ کی جانب سے ڈاکٹروں کو یہ ہدایت دی گئی کہ وہ لاک ڈاؤن میں کم از کم تین گھنٹے تک اسپتال جاری رکھے۔ تاکہ ایمرجنسی سہولیات دستیاب ہوسکے۔


تاہم اتنے بڑے شہر میں صرف تین گھنٹے تک ہی اسپتال اپنی خدمات محدود نہیں رکھ سکتے ہیں۔ اسی لیے انھوں نے اسپتال کو چوبیس گھنٹے شروع رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔ ڈاکٹر شفیق کے مطابق ان کا اسپتال ایک ایسے علاقے میں واقع ہیں، جہاں سب سے زیادہ مسلم آبادی ہیں۔ اس میں بھی زیادہ تر لوگ روزمرہ روزگار پر منحصر ہے۔

لاک ڈاون کے سبب ان لوگوں  کے روزگار کے ذرائع پوری طرح ختم ہوچکے ہیں۔ ایسے میں ان کیلئے علاج کرپانا بھی مشکل ہوگیا ہے۔ اسی بات کو خیال میں رکھتے ہوئے جی آر اسپتال نے یہ خدمت شروع کی ہے۔ ڈاکٹر شفیق کی خدمت یہی تک محدود نہیں ہے۔


انھوں نے غریب اور مسلم علاقے میں مستحق افراد تک راشن کیٹ مہیا کرانے کا بھی کام کیا ہے۔ بغیر کسی فوٹو یا  تشہیر کے انھوں نے اپنے دیگر بھائیوں کے ساتھ ان لوگوں کے گھروں میں چولہا جلارکھنے کی کوشش  کی ہے۔ مصیبت کی اس گھڑی میں ڈاکٹر شفیق اور ان کے اسپتال کی جانب سے اٹھائے جارے ان اقدامات کی جتنی ستائش کی جائے کم ہے۔ ان کے اس قدم کو دیکھتے ہوئے سماج کے ہر فرد نے اپنے پروفیشن کے طور پر کچھ نہ کچھ خدمات کرنے کی کوشش کرنی چاہیے۔
First published: Apr 14, 2020 08:15 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading